ابو نصر منصور بن علی بن عراق، خوارزم کے ریاضی اور فلکیات دان ہیں، ابی الریحان البیرونی کے استاد تھے، ان کی زندگی کے بارے میں ہمیں صرف اتنا معلوم ہے کہ 408 ہجری کو جب البیرونی غزنہ گئے تو یہ ان کے ساتھ تھے، اس کے علاوہ کوئی چند خطوط کے بارے میں معلوم ہے جو انہوں نے البیرونی کو لکھے تھے، ان کی وفات اندازہً 425 ہجری کو ہوئی، ان کے آثار میں “رسالہ فی اصلاح شکر من کتاب منلاوس فی الکریات” ہے جسے “کراوس” نے برلن میں 1936 کو شائع کرایا، ان کی دیگر تصانیف میں “المجسطی الشاہی” اور “الدوائر التی تحد الساعات الزمانیہ” ہیں .

ابن عراق
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 960  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
صوبہ جیلان[1]،  خوارزم[2]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات سنہ 1036 (75–76 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
غزنی  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت سلطنت غزنویہ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
استاد ابو الوفا البوزجانی  ویکی ڈیٹا پر (P1066) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
نمایاں شاگرد ابو ریحان البیرونی  ویکی ڈیٹا پر (P802) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ریاضی دان[3]،  ماہر فلکیات[3]  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان عربی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل فلکیات،  ریاضی  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

حوالہ جاتترميم

  1. ایرانیکا آئی ڈی: https://www.iranicaonline.org/articles/abu-nasr-mansur-b-1 — عنوان : Encyclopædia Iranica — ناشر: جامعہ کولمبیا
  2. MacTutor biography ID: https://mathshistory.st-andrews.ac.uk/Biographies/Mansur/
  3. Encyclopaedia of Islam (second edition) ID: https://referenceworks.brillonline.com/entries/encyclopaedia-of-islam-2/*-SIM_3218