بھارت کی ریاستوں اور یونین علاقہ جات کی فہرست بلحاظ رقبہ

حجم کے لحاظ سے بھارت کی ریاستیں اور علاقہ جات

بھارت کی ریاستوں اور یونین علاقہ جات کی فہرست بلحاظ رقبہ یہ 2011ء کی مردم شماری کے مطابق ہے اور سب سے بڑے رقبہ سے چھوٹے رقبہ کی طرف ترتیب سے درج ہے۔ بھارت 28 ریاستوں اور بشمول قومی دارالحکومت علاقۂ دہلی 8 یونین علاقہ جات پر مشتمل ہے۔[1][2][3]

Circle frame.svg
  راجستھان (10.41%)
  مہاراشٹر (9.36%)
  اتر پردیش (7.33%)
  گجرات (5.96%)
  کرناٹک (5.83%)
  اوڈیشا (4.74%)
  چھتیس گڑھ (4.11%)
  تمل ناڈو (3.96%)
  Other (38.01%)

فہرستترميم

درجہ ریاست (ر) / یونین علاقہ (ی ع) علاقہ (مربع کیلومیٹر) خطہ قومی حصہ داری (%) موازنہ سائز کے سیاسی ممالک (زمینی رقبہ) حوالہ
1 (ر1) راجستھان 342,239 شمالی ہند 10.41   جمہوریہ کانگو
2 (ر2) مدھیہ پردیش 308,252 وسطی بھارت 9.38   سلطنت عمان [note 1]
3 (ر3) مہاراشٹر 307,713 مغربی بھارت 9.36   سلطنت عمان
4 (ر4) اتر پردیش 240,928 شمالی ہند 7.33   یوگنڈا
5 (ر5) گجرات 196,024 مغربی بھارت 5.96   سینیگال
6 (ر6) کرناٹک 191,791 جنوبی 5.83   سینیگال
7 (ر7) آندھرا پردیش 160,205 جنوبی 4.87   تونس [4][note 2]
8 (ر8) اوڈیشا 155,707 مشرقی 4.74   بنگلادیش
9 (ر9) چھتیس گڑھ 135,191 مرکزی 4.11   یونان [note 3]
10 (ر10) تمل ناڈو 130,058 جنوبی 3.96   انگلستان
11 (ر11) تلنگانہ 112,077 جنوبی 3.41   ہونڈوراس
12 (ر12) بہار 94,163 مشرقی 2.86   مجارستان
13 (ر13) مغربی بنگال 88,752 مشرقی 2.70   سربیا
14 (ر14) اروناچل پردیش 83,743 جنوب مشرقی 2.55   آسٹریا
15 (ر15) جھارکھنڈ 79,714 مشرقی 2.42   چیک جمہوریہ
16 (ر16) آسام 78,438 شمال مشرقی 2.39   چیک جمہوریہ
17 (ی ع1) لداخ 59,146 جنوبی 1.80   ٹوگو [note 4]
18 (ر17) ہماچل پردیش 55,673 جنوبی 1.70   کرویئشا
19 (ر18) اتراکھنڈ 53,483 جنوبی 1.63   بوسنیا و ہرزیگووینا
20 (ر19) پنجاب 50,362 جنوبی 1.53   سلوواکیہ
21 (ر20) ہریانہ 44,212 جنوبی 1.34   استونیا
22 (ی ع2) جموں و کشمیر 42,241 جنوبی 1.28   نیدرلینڈز [note 5]
23 (ر21) کیرلا 38,863 جنوبی 1.18   بھوٹان
24 (ر22) میگھالیہ 22,429 شمال مشرقی 0.682   بیلیز
25 (ر23) منی پور 22,327 شمال مشرقی 0.679   بیلیز
26 (ر24) میزورم 21,081 شمال مشرقی 0.641   ایل سیلواڈور
27 (ر25) ناگالینڈ 16,579 شمال مشرقی 0.504   سوازی لینڈ
28 (ر26) تریپورہ 10,486 شمال مشرقی 0.319   لبنان
29 (ی ع3) جزائر انڈمان و نکوبار 8,249 خلیج بنگال 0.251   قبرص
30 (ر27) سکم 7,096 شمال مشرقی 0.216   برونائی دارالسلام
31 (ر28) گوا 3,702 مغربی 0.113   کیپ ورڈی
32 (ی ع4) دہلی 1,483 شمالی 0.045   اتحاد القمری
33 (ی ع5) دادرا و نگر حویلی و دمن و دیو 603 مغربی 0.018   سینٹ لوسیا [5]
34 (ی ع6) پڈوچیری 479 جنوبی 0.015   انڈورا [note 6]
35 (ی ع7) چنڈی گڑھ 114 شمالی 0.003   لیختینستائن
36 (ی ع8) لکشادیپ 32 بحیرہ عرب 0.001   تووالو
Total بھارت 3,287,263[ا] 100

ماخذ: ایریا آف اسٹیٹس[6]

اگست 2019ء میں بھارتی پارلیمان نے ریاست جموں اور کشمیر کو دو مرکز کے زیر انتظام علاقوں، جموں و کشمیر اور لداخ میں تقسیم کرنے کی قرارداد منظور کی، جو 31 اکتوبر 2019ء کو عمل میں آئی۔[7]

مزید دیکھیےترميم

ملاحظاتترميم

  1. مدھیہ پردیش کے 7 کلومیٹر2 (2.7 مربع میل) رقبہ اور چھتیس گڑھ کے 3 کلومیٹر2 (1.2 مربع میل) رقبہ کی کمی کو ابھی تک سروے آف انڈیا کے ذریعے حل کرنا باقی ہے۔
  2. پڈوچیری اور آندھرا پردیش کے درمیان کا 13 کلومیٹر2 (5.0 مربع میل) متنازع علاقہ دونوں میں شامل نہیں ہے۔
  3. مدھیہ پردیش کے 7 کلومیٹر2 (2.7 مربع میل) رقبہ اور چھتیس گڑھ کے 3 کلومیٹر2 (1.2 مربع میل) رقبہ کی کمی کو ابھی تک سروے آف انڈیا کے ذریعے حل کرنا باقی ہے۔
  4. لداخ؛ بھارت، پاکستان اور چین کے درمیان ایک متنازع علاقہ ہے۔ چین کے زیر انتظام اکسائی چن خطہ سمیت بھارت کے دعوی کردہ علاقوں کو کل رقبے سے خارج کر دیا گیا ہے۔
  5. جموں و کشمیر بھارت اور پاکستان کے درمیان ایک متنازع علاقہ ہے۔ آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان سمیت بھارت کی طرف سے دعوی کردہ علاقوں جو پاکستان کے زیر انتظام ہیں اور چین کے زیر انتظام وادی شکم کے علاقوں کو کل رقبہ سے خارج کر دیا گیا ہے۔
  6. پڈوچیری اور آندھرا پردیش کے درمیان کا 13 کلومیٹر2 (5.0 مربع میل) متنازع علاقہ دونوں میں شامل نہیں ہے۔
  1. "Indian states and territories census" (PDF). Govt. of Bihar. 13 مئی 2015 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 06 جون 2014. 
  2. "Area of Indian states" (PDF). Government of Andhra Pradesh. صفحہ 598. 26 نومبر 2013 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 06 جون 2014. 
  3. "Indian states since 1947". World Statesmen. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2020. 
  4. "AP at a Glance". Official portal of Andhra Pradesh Government. 21 دسمبر 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 مئی 2019. 
  5. "Dadra and Nagar Haveli" (PDF). egazette.nic.in. اخذ شدہ بتاریخ 28 مارچ 2021. 
  6. ^ ا ب پ ت "Official site of the Ministry of Statistics and Programme Implementation, India". 03 دسمبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 جولا‎ئی 2013. 
  7. "Rajya Sabha Passes Resolution to Scrap Article 370". News18. 5 August 2019. اخذ شدہ بتاریخ 05 اگست 2019. 
  8. "Country Profile: India" (PDF)، کتب خانہ کانگریس مطالعہ ممالک (اشاعت 5th۔)، کتب خانہ کانگریس Federal Research Division، December 2004، اخذ شدہ بتاریخ 30 ستمبر 2011