جبران الدین

صحافی اور مصنف

جبران الدین ایک صحافی اور مصنف ہے۔جبران الدین ٹو سرکلز نیٹ ویبسائٹ کیلئے لکھتے ہیں۔ وہ نئے زمانے کے کامیاب اور مشہور صحافی میں سے ایک ہے۔ وہ اپنے رپورٹ "مسکینوں کیلئے پڑھایی نہیں ہوتی ہے سر! گھر کی ذمےداری ميں چھوٹ رہی پڑھایی" اور "علیگڑھ مسلم یونیورسٹی کا طالبِ علم گمشدہ، نہیں مل رہا کوئی سراغ" کے بعد خوب چرچا میں آئیں تھے۔[1] اُنہوں نے پہلے کئی چھوٹی فلمیں بھی بنایی ہیں۔ نام اُن کی ایک مشہور چھوٹی فلم ہے، جسکے لیے انکی خوب تعریف ہوئی تھی۔[2]

جبران الدین

معلومات شخصیت
اصل نام محمد جبران الدین
مقام پیدائش دربھنگا، بہار
مذہب اسلام
پیشہ صحافی

کیریئرترميم

اُنہوں نے بہار سے اپنی اسکولی تعلیم پوری کی۔ اُنہوں نے ۲۰۲۰ ميں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے اردو ادب ميں گریجویشن کیا۔ اُنہونے ۲۰۲۰ میں ہی ٹو سرکلز نیٹ کے ساتھ صحافت میں اپنا کیریئر شروع کیا۔

جبران نے نام (۲۰۱۹ فلم) چھوٹی فلم کو خود سے لکھکر اُس کا ڈائریکشن کیا تھا۔

وہ علیگڑھ مسلم یونیورسٹی ڈراما کلب کے بھی ممبر رہ چکے ہیں۔ جہاں انہیں ۲۰۱۹ میں بیسٹ اداکار ۲۰۱۹ کا انعام سے نوازا گیا تھا۔

خاندانترميم

اُن کے والد کا نام محمد ضیاء الدین ہے جو بہار کے بسفی علاقہ کے گذشتہ ایم ایل اے متوقع رہ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ اور کوئی علم اُن کے خاندان کے بارے ميں دستیاب نہیں ہے۔

  1. .Net. "Twocircles". twocircles.net. 27 فروری 2021 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  2. "Naam". IMDB. 15 July 2019. اخذ شدہ بتاریخ 11 مارچ 2020.