"خانان کریمیا" کے نسخوں کے درمیان فرق

8 بائٹ کا اضافہ ،  8 سال پہلے
م
Bot: tt:Кырым ханлыгы is a good article; cosmetic changes
کوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
م (Bot: tt:Кырым ханлыгы is a good article; cosmetic changes)
[[تصویرملف:Crimean_Khanate_1600.gif|thumb|خانان کریمیا کی ریاست بمطابق 1600ء]]
'''ریاستِ خانان کریمیا''' یا '''[[خانیت کریمیا]] [[1441ء]] سے [[1783ء]] تک [[کریمیائی تاتار]] مسلمانوں کی ایک ریاست تھی، جس کا مقامی نام "قرم یورتی" تھا جبکہ ترک اسے “قرم خانلغی“ کہتے تھے۔ انگریزی میں اسے “Crimean Khanate“ کہا جاتا ہے۔
خانان کریمیا کی یہ ریاست [[آلتن اوردہ]] کے خاتمے پر قائم ہونے والی ترک خانان کی ریاستوں میں سب سے زیادہ طویل عرصہ تک قائم رہنے والی حکومت تھی۔ یہ [[دشت قپچاق]] (موجودہ [[یوکرین]] و جنوبی [[روس]] کے میدانی علاقوں)میں سلطنت آلتن اوردہ کے اُن مختلف قبائل نے مل کر تشکیل دی جو کریمیا کو اپنی سرزمین بنانا چاہتے تھے۔ اس امر کے لیے انہوں نے [[حاجی گیرائے]] کو اپنا حکمران مقرر کیا اور [[1441ء]] میں ایک آزاد ریاست قائم کی۔ یہ سلطنت [[جزیرہ نما کریمیا]] اور دشت قپچاق پر مشتمل تھی۔
[[1502ء]] میں خانان کریمیا نے آلتن اوردہ کا ہمیشہ کے لیے خاتمہ کر دیا اور اس کی جانشیں قرار پائی۔ اس کے نتیجے میں [[ریاست ماسکوی|ماسکوی کی ننھی ریاست]] سے محاذ آرائی بھی شروع ہو گئی اور [[1571ء]] میں [[دولت اول گیرائے]] کی زیر قیادت ایک کامیاب مہم میں روسی دارالحکومت کو نذر آتش کر دیا گیا۔
 
[[تصویرملف:Taniec_tatarski.jpg|thumb|ایک کریمیائی تاتار سپاہی دوران جنگ پولش-لتھووینیائی سپاہی سے مدمقابل]]
[[1532ء]] میں ریاست کا دارالحکومت [[سلاچق]] سے [[باغچہ سرائے]] منتقل کر دیا گیا۔
خانان کریمیا کی سلطنت بلاشبہ 18 ویں صدی تک [[مشرقی یورپ]] کی طاقتور ترین ریاستوں میں سے ایک تھی۔ کریمیائی تاتار مسلمانوں نے سلطنت اسلامیہ کی سرحدوں کے دفاع کے لیے، خاص طور پر ماسکوی اور پولش ریاستوں کے خلاف، ناقابل فراموش کردار ادا کیا ہے۔
[[زمرہ:تاریخ روس]]
[[زمرہ:سابقہ ممالک]]
 
{{Link GA|tt}}
58,444

ترامیم