"عبدالحمید اول" کے نسخوں کے درمیان فرق

کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
| burial_date =
| burial_place =
| religion= [[Sunniاہل Islamسنت|اسلام]]
| signature_type = [[Tughraطغرا]]
| signature = Tughra of Abdülhamid I.JPG
}}
''عبد الحمید اول'' ([[20 مارچ]] [[1725ء]] – [[7 اپریل]] [[1789ء]]) [[سلطنت عثمانیہ]] کے 27 ویں سلطان تھے۔ وہ سلطان [[احمد ثالث]] کے صاحبزادے تھے اور اپنے بھائی [[مصطفی ثالث]] کے بعد [[21 جنوری]] [[1774ء]] کو تخت سلطنت پر بیٹھے۔
 
عبد الحمید نے اپنی زندگی کے ابتدائی 43 سال کا بیشتر عرصہ حرم میں گزارj۔ سلطان بغاوت کے خطرے کے پیش نظر شہزادوں کو "حرم میں قید" کر دیا کرتے تھے۔ انہوں نے اپنی ابتدائی تعلیم والدہ [[رابعہ سیمیشرمی سلطان]] سے حاصل کی جنہوں نے عبد الحمید کو [[تاریخ]] اور [[خطاطی]] کے علوم سکھائے۔
 
حرم کی مقید زندگی گزارنے کے باعث عبد الحمید ریاستی معاملات پر کوئی گہری نظر نہیں رکھتے تھے اور اس طرح مشیروں کے رحم و کرم پر رہ گئے۔ البتہ حرم کی تربیت نے انہیں بہت مذہبی اور امن پسند طبیعت دی۔ ان کی حکومت کے آغاز کے اگلے ہی سال سلطنت عثمانیہ کو [[جنگ کولویا]] میں بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑا جس کے باعث اسے [[1774ء]] میں ذلت آمیز [[معاہدۂ کوچک کناری|معاہدہ کوچک کناری]] پر دستخط کرنا پڑے جو اس کے زوال کے آغاز کی واضح دلیل تھی۔