"ارتریا" کے نسخوں کے درمیان فرق

16 بائٹ کا ازالہ ،  4 سال پہلے
م
clean up, replaced: ← using AWB
م (clean up, replaced: ← using AWB)
 
'''ارتریا''' (Eritrea)
(تلفظ: {{IPAc-en|ˌ|ɛr|ɨ|ˈ|t|r|eɪ|.|ə}} یا {{IPAc-en|ˌ|ɛr|ɨ|ˈ|t|r|iː|ə}};<ref name=":0">{{cite web|url=http://www.merriam-webster.com/dictionary/eritrea |title=Merriam-Webster Online |publisher=Merriam-webster.com |date=25 April 2007 |accessdate=2 May 2010}}</ref> {{lang-ti|ኤርትራ}} ''{{transl|ti|ʾErtrā }}''; {{lang-ar|إرتريا}} ) [[براعظم]] [[افریقہ]] کا ایک [[ملک]] ہے۔ اس کا [[دارالحکومت|دارلحکومت]] [[اسمارا]] ہے۔ اس کے مغرب میں [[سوڈان]]، جنوب میں [[ایتھوپیا]] اور جنوب مشرق میں [[جبوتی]] واقع ہیں۔ شمال مشرقی اور مشرقی طرف [[بحر احمر|بحرِ احمر]] کے ساحل ہیں جس کی دوسری طرف [[سعودی عرب]] اور [[یمن]] ہیں۔ ارتریا کا کل رقبہ 1٫17٫600 مربع کلومیٹر ہے اور کل آبادی کا تخمینہ 50 لاکھ ہے۔
== تعریف اور تاریخ ==
شمالی [[صومالیہ]]، جبوتی اور بحیرہ احمر کے سوڈان والے کنارے کے ساتھ ارتریا پرانے دور کی پُنت سرزمین کا حصہ تھا۔ اس سرزمین کا تذکرہ ہمیں 25صدی ق م میں ملتا ہے۔ قدیم پُنت قوم کے مصر کے [[فرعون|فرعونوں]] کے ساتھ گہرے تعلقات تھے۔
 
دمت نامی سلطنت ارتریا اور شمالی ایتھوپیا میں 8ویں اور 7ویں صدی ق م میں آباد تھی۔ اس کا دارلحکومت یِحا تھا۔ اس سلطنت نے [[آبپاشی]] کے لئے منصوبے بنائے، [[ہل]] کا استعمال، [[باجرہ|باجرے]] کی کاشتکاری اور لوہے کے [[اوزار]] اور [[اسلحہ|ہتھیار]] بنانے شروع کیے۔ 5ویں صدی میں دمت قوم کے زوال کے بعد اس علاقے میں کئی چھوٹی اقوام آباد رہیں۔
ارتریا کی تاریخ اس کی بحیرہ احمر کی ہمسائیگی سے جڑی ہوئی ہے۔ اس کے [[ساحل]] کی لمبائی 1,000 کلومیٹر سے زیادہ ہے۔کئی سائنس دانوں کے خیال میں اسی علاقے سے ہی موجودہ انسان افریقہ کے براعظم سے نکل کر دنیا کے دیگر حصوں کو پھیلے تھے۔ [[سمندر]] پار سے آنے والے قابضوں اور نو آبادیاتی اقوام جیسا کہ [[یمن]] کے علاقے سے، [[سلطنت عثمانیہ|عثمانی ترک]]، [[گوا]] سے [[پرتگیزی زبان|پرتگالی]]، [[مصر|مصری]]، [[انگریز]] اور 19ویں صدی میں [[اطالوی]] وغیرہ یہاں آتے رہے۔ صدیوں تک یہ حملہ آور ہمسائیہ ممالک سے بھی آتے رہے تھے جو مشرقی افریقہ میں ہیں۔ تاہم موجودہ ارتریا 19ویں صدی کے اطالوی حملہ آوروں سے ثقافتی طور پر زیادہ متائثر ہے۔
 
1869 میں نہر سوئیز کے کلھنے کے بعد جب یورپی اقوام نے افریقی سرزمین پر قبضے کر کے وہاں اڈے بنانے شروع کیے تو ارتریا پر [[اطالیہ|اٹلی]] نے حملہ کر کے قبضہ کیا۔ یکم جنوری 1890 کو ارتریا باقاعدہ طور پر اٹلی کی نوآبادی بن گیا۔ 1941 میں یہاں کی کل آبادی 7,60,000 تھی جن میں اطالوی باشندے 70,000 تھے۔ [[اتحادی افواج]] نے 1941 میں اطالویوں کو نکال باہر کر دیا اور خود یہاں قبضہ جما لیا۔ اقوامِ متحدہ کے منشور کے تحت 1951 تک [[برطانیہ]] یہاں کا نظم و نسق سنبھالتا رہا۔ اس کے بعد ارتریا ایتھوپا سے مل گیا۔
 
بحیرہ احمر کے ساحل اور [[معدن|معدنیات]] کی وجہ سے ارتریا بہت اہم ہے۔ اسی وجہ سے اسے ایتھوپیا سے ملا دیا گیا تھا۔ 1952 میں ارتریا کو ایتھوپیا کا 14واں صوبہ بنا دیا گیا۔ ایتھوپیا نے اپنا قبضہ جمائے رکھنے کے لئے اپنی زبان کو زبردستی ارتریا کے سکولوں میں لاگو کر دیا۔ اس وجہ سے ارتریا میں 1960 کی دہائی میں آزادی کی تحریک چلی۔ اس تحریک کی وجہ سے 30 سال تک ارتریا اور ایتھوپیا کی حکومتوں کے درمیان مسلح لڑائی جاری رہی۔ یہ [[جنگ]] 1991 میں ختم ہوئی۔ [[اقوام متحدہ|اقوامِ متحدہ]] کی زیرِ نگرانی ہونے والے ریفرنڈم میں ارتریا کے لوگوں نے واضح اکثریت سے آزادی کا فیصلہ کیا اور ارتریا نے آزادی کا اعلان کر دیا۔ 1993 میں اسے بین الاقوامی طور پر تسلیم کر لیا گیا۔
 
[[تگرینا]] اور [[عربی زبان|عربی]] کو بڑی زبانیں مانا جاتا ہے۔ حکومت کی طرف سے بین الاقوامی معاملات میں انگریزی زبان استعمال ہوتی ہے اور 5ویں سے آگے ہر جماعت میں اسے تدریسی زبان کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔
[[ریاستہائے متحدہ امریکہ]] کے ساتھ ارتریا کے تعلقات کافی پیچیدہ نوعیت کے ہیں۔ اگرچہ دونوں ملکوں میں [[دہشت پر جنگ|دہشت گردی کے خلاف جنگ]] میں تعاون جاری ہے تاہم دیگر معاملات میں خلیج بڑھتی جا رہی ہے۔ [[اکتوبر]] [[2008ء|2008]] سے تعلقات خراب ہونا شروع ہوئے جب [[اسسٹنٹ سیکریٹری آف سٹیٹ]] جندیائی فریزر نے ارتریا کو "دہشت گردی کی حامی قوم" قرار دیا اور کہا کہ عین ممکن ہے کہ امریکہ ایران اور سوڈان کے ساتھ ساتھ ارتریا کو بھی بدمعاش ریاست قرار دے دے۔ اس واقعے کی وجہ ایک صومالی اسلامی انتہا پسند رہنما کا ارتریا میں پناہ لینا ہے۔
 
ارتریا کے تعلقات اٹلی اور یورپی یونین کے ساتھ امریکہ کی نسبت زیادہ بہتر ہیں۔
 
[[2ء|2]] [[اگست]] [[2009ء|2009]] کو امریکی [[وزیر خارجہ|وزیرِ خارجہ [[ہیلری کلنٹن]] نے الزام عائد کیا کہ ارتریا صومالی مسلح گروہ [[الشباب]] کو ہتھیار مہیا کر رہا ہے۔ اگلے ہی دن ارتریا نے اس الزام کی تردید جاری کر دی لیکن اقوام متحدہ اور افریقن یونین نے مل کر ارتریا پر مختلف پابندیاں لگا دیں۔
حالیہ جنگوں اور اختلافات کی وجہ سے ارتریا کے تعلقات ہمسائیہ ممالک سے کشیدہ ہیں۔ 1994 میں سوڈان سے سفارتی تعلقات ختم کرنا، یمن کے ساتھ جنگ اور ایتھوپیا کے ساتھ 1997-2000 تک سرحدی تنازعہ اہم ہیں۔ ارتریا اور ایتھوپیا کے بارڈر کمیشن نے اگرچہ سرحد کا تعین کر دیا ہے تاہم ایتھوپیا اسے ماننے سے انکار کر دیا ہے۔
 
ارتریا کے تعلقات سوڈان سے بہتر ہو چکے ہیں۔
 
یمن کے ساتھ کچھ جزائر کے تنازعے پر دونوں ممالک کے درمیان مختصر جنگ ہو چکی ہے تاہم دونوں ملکوں نے [[عالمی ثالثی عدالت]] کی مدد سے اپنے تنازعے کو حل کر لیا ہے۔
ایتھوپیا کی طرف سے سرحدوں کو نہ ماننا اس وقت ارتریا کا سب سے بڑا مسئلہ ہے۔
== جغرافیہ ==
ارتریا افریقہ کے شمال مشرقی حصے میں واقع ہے اور اس کے شمال مشرق اور مشرق کی جانب بحیرہ احمر موجود ہیں۔ جنوب میں ایتھوپیا اور شمال مغرب میں سوڈان ہے۔
 
ارتریا کے عین وسط سے دنیا کے بلند ترین پہاڑی سلسلوں میں سے ایک گذرتا ہے اور ملک کو دو حصوں میں تقسیم کرتا جاتا ہے۔ یہ پہاڑی سلسلہ [[عظیم وادئ شق]] سے پیدا ہوا تھا۔ ساری زرخیز زمینیں مغربی حصے میں اور صحرا مشرقی حصے میں واقع ہیں۔
 
ملک کا بلند ترین مقام ایمبا سوئرا ہے جو سطح سمندر سے 3٫018 میٹر بلند ہے۔
== معاشرہ ==
=== آبادی ===
ارتریا کا معاشرہ نسلی اعتبار سے ملا جلا ہے۔ ابھی تک آزادنہ مردم شماری نہیں ہوئی تاہم مقامی دو قبائل مل کر کل آبادی کا 80 فیصد حصہ بناتے ہیں۔
 
بقیہ آبادی افریقی ایشیائی اور اطالوی النسل ہے۔
 
آبادی میں سب سے جدید اضافہ بنی رشید قبائل ہیں جو سعودی عرب سے آئے ہیں۔
ارتریا میں سکول کے پانچ درجے ہوتے ہیں جو پری پرائمری، پرائمری، مڈل، سیکنڈری اور پوسٹ سیکنڈری ہیں۔ ان سکولوں میں تقریباً 2٫38٫000 طلباء و طالبات داخل ہیں۔ ملک میں کل 824 سکول ہیں۔ ارتریا میں کل دو یونیورسٹیاں اور کئی دیگر چھوٹے کالج اور ٹیکنیکل سکول ہیں۔
 
ارتریا کے نظام تعلیم کا اہم ترین مقصد ملک کی ہر زبان میں بنیادی تعلیم مہیا کرنا ہے۔
 
تاہم تعلیم کے سلسلے میں مقامی رسوم و رواج، سکول کی فیس وغیرہ اہم رکاوٹیں ہیں۔
ارتریا کی حکومت نے لڑکیوں کے ختنے پر پابندی لگا دی ہے اور کہا ہے کہ یہ تکلیف دہ عمل ہے اور اس سے بہت سارے خطرناک مسائل پیدا ہوتے ہیں۔ اولاد پیدا کرنے کی شرح فی خاتون 5 بچے ہے۔ شیر خوار بچے انفیکشن سے سب سے زیادہ ہلاک ہوتے ہیں۔ ملیریا اور تپ دق عام ہیں۔ ایڈز کی شرح 15 سے 49 سال کی عمر کے افراد میں 2 فیصد ہے۔ گذشتہ دہائی سے پیدائش کے وقت زچہ کی شرح اموات بہت گھٹی ہے۔
== ثقافت ==
ارتریا کا علاقہ تاریخی اعتبار سے دنیا میں تجارت کا مرکز ہے۔ اس وجہ سے بے شمار ثقافتیں ملک بھر میں دکھائی دیتی ہیں۔ دارلحکومت اسمارا پر سب سے گہرا اثر اٹلی کا پڑا ہے۔
 
شہروں میں ماضی قریب میں بالی وڈ کی فلموں کی برآمد عام بات تھی۔ سینماؤں میں امریکی اور اطالوی فلمیں عام دکھائی جاتی تھیں۔ 1980 کی دہائی اور پھر آزادی کے بعد امریکی فلمیں ہی باقی رہ گئی ہیں۔
 
فٹ بال اور سائیکل ریس مقبول کھیل ہیں۔ حالیہ برسوں میں ارتریا کے کھلاڑی بین الاقوامی سطح پر زیادہ کامیاب ہونے لگے ہیں۔
 
 
== فہرست متعلقہ مضامین ارتریا ==
* {{Wikiatlas|Eritrea}}
* {{ویکی سفر|Eritrea}}
 
 
{{Navboxes
{{Community of Sahel-Saharan States CEN-SAD}}
}}
 
 
 
{{Commonscat|Eritrea}}
86,585

ترامیم