Manzoor khan 1

صارف از 30 جون 2016ء
تصحی اور املا درست کی
(ترمیم کی گئی)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
(تصحی اور املا درست کی)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
'''دین اور نظریہ'''
دین کو نظریات سے علیحدہ کرنآاہل نظر کی ذمہ داری ہے !
الہامی کتابوں کی صورت میں رہنمائی کی موجوگی میں انسانی نظریات کو دین کے ساتھ گڈ مڈ کرنے کی کیا ضرورت ہے ؟
اس کے کیا نتائج سامنے آ رہے ہیں ؟
انسان کواللہ نے بطور نائب دنیا میں بھیجا، سارے معاملات میں خود مختیاری دینے کے ساتھ راہنمائ کآ بھی اہتمام کیا .
جنکے معاشرتی ،معاشی و سماجی و اخلاقی کردارکوپسندکیا انہیں لوگوں کو پیغام پہنچانے کے لئےاپنی نشانیونکے ساتھ منتخب و مقرر کیا ۔ اور بنی نوع انسان کو ان کے نقش قدم پر چلنے کی تاکید کی۔
اور بتایا کہ جو ان کی تقلیدکرے گا کامیاب ہو گا .جونہیں کرے گا وہ الجھتا رہے گا ۔۔
ان ہی پیغمبروں نے غلط کام سے باز رہنے کو ،فلاح کاراستہ بتایا۔ جس پر عمل پیرا ہو کر اس زمین کو جنت بنایا جانا تھا .
اپنی کمائی کی راہیں پیدہ کرنےبنانے کیلیے مزھبی پیشواہ سامنے آ تے ر ہے ۔
جو بغیر کسی سندکے اپنے نظریات کے مطابق ،حکمرانوں کی خواہشات پر جنون پیدا کرنے کیلئے ایک ہی دین میں فرقے بناتے رہے۔ دین کو تقسیم در تقسیم کرکے سارے بنی نوع انسان کا چین وسکون بربادکیا۔
انسان اپنی بنیاد کی طرف رجوع کر کے سکھ و چین کی فزا قائم کر سکتا ہے .
صحیفہ مستند خبر مراسلت و پیغام کا مجموعہ ہوتا ہے جو مفاد عامه کے مطابق ہو اور مقبول عام بھی ہو . کسی کی بھی طرف سے تر دید ممکن ہو نہ تنقید . مخالفت کرنے کی جسارت کرنے والے از خود مفقود ہو جائیں .
جسکی مثال پارسی بہائ و یہودی ہیں .
مسلمان جو نظریہ کو بنیاد بناکر شیعہ سنی وہابی بریلوی احمدی شافی مالکی دیوبندی اہل حدیث اور نہ معلوم کتنے فرقے بنے . فطرت کے مطابق ان کی راہ گم ہوتی جا رہی ہے .
سلام پیش خدمات ہے وکیپیڈیا کے منتظمین کو.
اس تنظیم نے بہروں کو کان ،اندھوں کو روشنی اور گونگوں کو زبان دے کر ضعیف و طاقتور کو یکساں سانس لینے کی آزادی فراہم کی .
مالک نے اپنے نایبنآئب پر فخر، اعتماد اور انحصار کر کے تخلیق کیا .بہت زیادہ قیمتی اثاثوں سے نواز کر ایک ہی کام سونپا کہ زمین کو جنت بنادو . اپنے لئے اور سب کیلئے .
ساتھ ہی ایک منفی رجحان کی بھی نشان دیہی کر دی . اس طرح کہ اس کو سمجھنے کیلئے انسان ہی نہیں سارے جانداروں کو شعور دیا .
البتہ منفی سوچ کے لوگ اپنے نظریات کو مسلط کرنے کیلئے معاشرے میں جبر کی روش کی حوصلہ افزائی کیلئے اپنے نظریات تھونستے ہیں . اب ان نظریات کے سوداگروں سے نجاہت کیلئے انسان بنیادی دین اسلام جو حضرت آدم سے شروع ہوا اور حضرت ابراھیم علیہ سلام پر مکمل ہوا ، کو پہچان لیاجاۓ . کیونکہ ان نظریات نے زمین کو تنگ کر دیا ہے .
دین.تمدن کا اظہار ہے اور نظریات . فریب نظر (،یا سراب ) نظر کی جمع.
نظریات . فریب نظر ،یا نظر کی جمع.
یہ دونو . متضاد ہیں .
تو پھر کیوں نہ اپنی فطرت کے مطابق دنیا کو جنت بنا لیا جائے . نظریات اور دین میں فرق واضع ہونا چاہیے ۔
اورزمین کو ماں کا رتبہ مل جائے یہ اسی وقت ممکن ہے جب .یہاں آباد تمام لوگ راہ راست پر چلیں انسان ہے نہیں بلکہ ساری مخلوقات کا فطری حق تسلیم کر لیا جائے
اس فطری حق کا تعین کرنا وکی دوستوں کا اعزاز ہے .
آج اسلآم کے نام پر جو ہو رہا ہے یہ سب وہی ہے جس کو روکنے کے لیے دین میں زور دیا گیا ہے۔ رنگ برنگی پوشاک اور چبوترے اسلامی تعلیمات اور انسانی عقل کے خلاف ہیں. کلام اللہ کے مطابق فلاح کے لیے عمل صالح کی کو ترجیح دی گئ ہے جبکہ سارے نظریات وضح و قطح کا پرچار کرتے ہیں جس میں رنگ و روپ کو اجاگر کیا جاتا ہہے
119

ترامیم