"شاہنامہ" کے نسخوں کے درمیان فرق

876 بائٹ کا اضافہ ،  3 سال پہلے
کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
م (درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم القاب)
اس ادبی شاہکار، شاہنامہ میں [[ایران|ایرانی]] [[داستان|داستانیں]] اور ایرانی سلطنت کی تاریخ بیان کی گئی ہے۔ یہ واقعات شاعرانہ انداز میں بیان کیے گئے ہیں اور اس میں عظیم فارس سے لے کر اسلامی سلطنت کے قیام تک کے واقعات، تہذیب، تمدن اور ثقافت کا احاطہ کیا گیا ہے۔<br />
ایرانی تہذیب اور ثقافت میں شاہنامہ کو اب بھی مرکزی حیثیت حاصل ہے، جس کو اہل دانش فارسی ادب میں انتہائی لاجواب ادبی خدمات میں شمار کرتے ہیں۔
 
== تفصیل ==
[[فارسی]] کی [[رزمیہ شاعری]] کا شاہکار جس کا آغاز 980ء کو ہوا اور اختتام 1009ء کو ہوا۔
 
اس کے مرکزی کردار بادشاہ ہیں مگر ضمناً عوامی زندگی اور مختلف [[قدر|قدروں]] پر حکیمانہ تبصرہ بھی ہے۔
 
شدید ایران پرستی کے باعث [[فردوسی]] نے [[عربی زبان|عربی]] الفاظ سے پرہیز کیا مگر ان سے مضر مشکل ہے۔ کلام میں بہت زور ہے۔ واقعہ نگاری، منظر کشی اور جذبات نگاری میں شاعر کو غیر معمولی ملکہ حاصل ہے۔ بعض اشعار بےحد بلیغ ہیں۔
 
[[شبلی نعمانی|مولانا شبلی نعمانی]] نے اسے [[ایران]] کا انسائیکلو پیڈیا قرار دیا ہے۔
 
== مزید دیکھیے ==