"ارتریا" کے نسخوں کے درمیان فرق

حجم میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ،  2 سال پہلے
م
درستی املا
م (درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر)
م (درستی املا)
شمالی [[صومالیہ]]، جبوتی اور بحیرہ احمر کے سوڈان والے کنارے کے ساتھ ارتریا پرانے دور کی پُنت سرزمین کا حصہ تھا۔ اس سرزمین کا تذکرہ ہمیں 25صدی ق م میں ملتا ہے۔ قدیم پُنت قوم کے مصر کے [[فرعون|فرعونوں]] کے ساتھ گہرے تعلقات تھے۔
 
دمت نامی سلطنت ارتریا اور شمالی ایتھوپیا میں 8ویں اور 7ویں صدی ق م میں آباد تھی۔ اس کا دارلحکومت یِحا تھا۔ اس سلطنت نے [[آبپاشی]] کے لئےلیے منصوبے بنائے، [[ہل]] کا استعمال، [[باجرہ|باجرے]] کی کاشتکاری اور لوہے کے [[اوزار]] اور [[اسلحہ|ہتھیار]] بنانے شروع کیے۔ 5ویں صدی میں دمت قوم کے زوال کے بعد اس علاقے میں کئی چھوٹی اقوام آباد رہیں۔
 
ارتریا کی تاریخ اس کی بحیرہ احمر کی ہمسائیگی سے جڑی ہوئی ہے۔ اس کے [[ساحل]] کی لمبائی 1,000 کلومیٹر سے زیادہ ہے۔کئی سائنس دانوں کے خیال میں اسی علاقے سے ہی موجودہ انسان افریقہ کے براعظم سے نکل کر دنیا کے دیگر حصوں کو پھیلے تھے۔ [[سمندر]] پار سے آنے والے قابضوں اور نو آبادیاتی اقوام جیسا کہ [[یمن]] کے علاقے سے، [[سلطنت عثمانیہ|عثمانی ترک]]، [[گوا]] سے [[پرتگیزی زبان|پرتگالی]]، [[مصر|مصری]]، [[انگریز]] اور 19ویں صدی میں [[اطالوی]] وغیرہ یہاں آتے رہے۔ صدیوں تک یہ حملہ آور ہمسائیہ ممالک سے بھی آتے رہے تھے جو مشرقی افریقہ میں ہیں۔ تاہم موجودہ ارتریا 19ویں صدی کے اطالوی حملہ آوروں سے ثقافتی طور پر زیادہ متائثر ہے۔
1869 میں نہر سوئیز کے کلھنے کے بعد جب یورپی اقوام نے افریقی سرزمین پر قبضے کر کے وہاں اڈے بنانے شروع کیے تو ارتریا پر [[اطالیہ|اٹلی]] نے حملہ کر کے قبضہ کیا۔ یکم جنوری 1890 کو ارتریا باقاعدہ طور پر اٹلی کی نوآبادی بن گیا۔ 1941 میں یہاں کی کل آبادی 7,60,000 تھی جن میں اطالوی باشندے 70,000 تھے۔ [[اتحادی افواج]] نے 1941 میں اطالویوں کو نکال باہر کر دیا اور خود یہاں قبضہ جما لیا۔ اقوامِ متحدہ کے منشور کے تحت 1951 تک [[برطانیہ]] یہاں کا نظم و نسق سنبھالتا رہا۔ اس کے بعد ارتریا ایتھوپا سے مل گیا۔
 
بحیرہ احمر کے ساحل اور [[معدن|معدنیات]] کی وجہ سے ارتریا بہت اہم ہے۔ اسی وجہ سے اسے ایتھوپیا سے ملا دیا گیا تھا۔ 1952 میں ارتریا کو ایتھوپیا کا 14واں صوبہ بنا دیا گیا۔ ایتھوپیا نے اپنا قبضہ جمائے رکھنے کے لئےلیے اپنی زبان کو زبردستی ارتریا کے سکولوں میں لاگو کر دیا۔ اس وجہ سے ارتریا میں 1960 کی دہائی میں آزادی کی تحریک چلی۔ اس تحریک کی وجہ سے 30 سال تک ارتریا اور ایتھوپیا کی حکومتوں کے درمیان مسلح لڑائی جاری رہی۔ یہ [[جنگ]] 1991 میں ختم ہوئی۔ [[اقوام متحدہ|اقوامِ متحدہ]] کی زیرِ نگرانی ہونے والے ریفرنڈم میں ارتریا کے لوگوں نے واضح اکثریت سے آزادی کا فیصلہ کیا اور ارتریا نے آزادی کا اعلان کر دیا۔ 1993 میں اسے بین الاقوامی طور پر تسلیم کر لیا گیا۔
 
[[تگرینا]] اور [[عربی زبان|عربی]] کو بڑی زبانیں مانا جاتا ہے۔ حکومت کی طرف سے بین الاقوامی معاملات میں انگریزی زبان استعمال ہوتی ہے اور 5ویں سے آگے ہر جماعت میں اسے تدریسی زبان کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔
آبادی میں سب سے جدید اضافہ بنی رشید قبائل ہیں جو سعودی عرب سے آئے ہیں۔
=== زبانیں ===
ارتریا میں بہت ساری زبانیں بولی جاتی ہیں۔ سرکاری زبان کا درجہ کسی کو حاصل نہیں بلکہ آئین کے مطابق ارتریا کی تمام زبانوں کو برابر کا درجہ دیا گیا ہے۔ تاہم عربی اور تگرینا زبان کو سرکاری کاموں کے لئےلیے استعمال کیا جاتا ہے۔ انگریزی اور اطالوی بھی عام سمجھی جاتی ہے۔
 
=== تعلیم ===
103,911

ترامیم