"ایوبی سلطنت" کے نسخوں کے درمیان فرق

م
درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر
م (روبالہ: اضافہ سانچہ ناوبکس {{تاریخ اسلام}})
م (درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر)
'''ایوبی سلطنت''' یا '''سلطنت آل ایوب''' (Ayyubid Sultanate) [[کرد]] نسل کے مسلم خاندان کی حکومت تھی جس نے 12 ویں اور 13 ویں صدی میں [[مصر]]، [[شام]]، [[یمن]]، [[دیار بکر|دیار باکر]]، [[مکہ]]، [[حجاز]] اور شمالی [[عراق]] پر حکومت کی۔
 
ایوبی سلطنت کے بانی [[صلاح الدین ایوبی]] تھے جن کے چچا [[شیر کوہ]] نے زنگی سلطان [[نور الدین زنگی]] کے سپہ سالار کی حیثیت سے [[1169ء]] میں [[مصر]] فتح کیا تھا۔ اس سلطنت کا نام شیر کوہ کے بھائی اور [[صلاح الدین ایوبی|صلاح الدین]] کے والد [[نجم الدین ایوب]] کے نام پر ایوبی سلطنت پڑا۔ [[صلاح الدین ایوبی|صلاح الدین]] نے [[مصر]] میں [[سلطنت فاطمیہ|فاطمی سلطنت]] کا خاتمہ کیا اور [[1174ء]] میں [[نورالدین زنگی|نور الدین]] کے انتقال کے بعد [[دمشق]] پر قبضہ کرکے [[شام]] کو بھی اپنی قلمرو میں شامل کرلیا۔کر لیا۔
 
[[صلاح الدین ایوبی|صلاح الدین]] [[صلیبی جنگیں|صلیبی جنگوں]] کے دوران [[1187ء]] میں [[جنگ حطین]] میں صلیبیوں کو عظیم شکست، [[فتح بیت المقدس]] اور اس کے نتیجے میں ہونے والی [[تیسری صلیبی جنگ]] میں فتح کے باعث دنیا بھر میں مشہور ہوئے۔ [[صلاح الدین ایوبی|صلاح الدین]] [[1193ء]] میں انتقال کرگئے جس کے بعد سلطنت ان کے بیٹوں کے درمیان بٹ گئی اور بالآخر 1200ء میں صلاح الدین کے بھائی [[العادل]] پوری سلطنت کا قبضہ حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے۔ [[1218ء]] میں العادل اور 1238ء میں [[الکامل]] کے انتقال پر پھر یہی صورتحال سامنے آئی۔ [[1250ء]] میں آخری ایوبی سلطان [[توران شاہ]] قتل ہوگیا اور اس کے مملوک غلام جرنیل [[ایبک]] نے بحری [[مملوک|مملوک سلطنت]] کی بنیاد رکھی۔ [[مصر]] ہاتھوں سے نکل جانے کے بعد ایوبیوں نے اگلے 80 سال تک شام میں مزاحمت جاری رکھی اور بالآخر [[1334ء]] میں شام بھی مکمل طور پر مملوکوں میں شامل ہوگیا۔