"جودی پہاڑ" کے نسخوں کے درمیان فرق

1 بائٹ کا ازالہ ،  4 سال پہلے
م
خودکار درستی+ترتیب+صفائی (9.7)
م (صفائی بذریعہ خوب, replaced: عیسائی ← مسیحی)
م (خودکار درستی+ترتیب+صفائی (9.7))
}}
 
[[تصویرفائل:Ararat Ms. 11639 521a.jpg|تصغیر|300px| پہاڑ کی چوٹی پر نوح کی کشتی کا اتراؤ کی عکاسی (تیرہویں صدی)]]
 
'''جودی پہاڑ''' ({{lang-ar|الجوديّ}} {{transl|ar|al-Ǧūdiyy}}،
 
== اسلامی روایات ==
'''جودی''' اسم علم ہے ایک '''پہاڑ''' کا نام ہے جس پر [[کشتی نوح]] آکر ٹھہر گئی تھی ، اس کا نام [[سورہ ھود|سورۂ ہود]] کی آیت 44 میں آیا ہے۔<br />
جودی پہاڑ کہاں ہے جس پر کشتی ٹھہری تھی‘ اس کے بارے میں [[معجم البلدان]] میں لکھا ہے کہ یہ ایک پہاڑ ہے جو دجلہ سے مشرقی جانب ہے [[جزیرہ ابن عمر]] پر محیط ہے اور یہ شہر موصل کے مضافات میں ہے (جو عراق کے شہروں میں سے ہے) یہ جزیرہ ابن عمر برقعبدی کی طرف منسوب ہے۔ محقق ابن جزری امام التجوید والقرأۃ کی نسبت بھی اسی کی طرف ہے۔<ref>تفسیر انوارالبیان مولانا عاشق الہٰی ,سورہ ہود آیت 49</ref>
نوح (علیہ السلام) کا ظہور اس سرزمین میں ہوا تھا جو دجلہ و فرات کی وادیوں میں واقع ہے اور دجلہ و فرات آرمینیا کے پہاڑوں سے نکلتے ہیں اور بہت دور تک الگ الگ بہہ کر عراق زیریں میں باہم مل جاتے ہیں اور پھر [[خلیج فارس]] میں سمندر سے ہم کنار ہوجاتے ہیں۔ اسی طرح آرمینیا کے یہ پہاڑ ” اراراط “ کے علاقہ میں واقع ہیں لیکن قرآن کریم نے اس جگہ کا نام لیا جہاں کشتی ٹھہری تھی اور ” جودی “ تھا۔
”اس وقت کہا گیا: دور ہو ظالم قوم “۔<ref>[[قرآن|القرآن]]، [[سورہ ھود]]:44</ref>
 
== حوالہ جات ==
{{حوالہ جات}}
 
[[زمرہ:کشتی نوح]]
[[زمرہ:مقدس پہاڑ]]
[[زمرہ:ترکی کے پہاڑ]]
[[زمرہ:ترکی کے سلاسل کوہ]]
[[زمرہ:جغرافیہ شرناق صوبہ]]
[[زمرہ:کشتی نوح]]
[[زمرہ:مقدس پہاڑ]]