"اسلام آباد" کے نسخوں کے درمیان فرق

17 بائٹ کا اضافہ ،  2 سال پہلے
م
درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر + ویکائی
م (درستی)
م (درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر + ویکائی)
== تاریخ ==
 
[[1958ء]] تک پاکستان کا دارالحکومتدار الحکومت کراچی رہا۔ کراچی کی بہت تیزی سے بڑھتی آبادی اور معاشیات کی وجہ سے دارالحکومتدار الحکومت کو کسی دوسرے شہر منتقل کرنے کا سوچا گیا۔ 1958ء میں اس وقت کے صدر [[ایوب خان]] نے [[راولپنڈی]] کے قریب اس جگہ کا انتخاب کیا اور یہاں شہر تعمیر کرنے کا حکم دیا۔اسدیا۔ اس نئے دارالحکومتدار الحکومت کے لیے زمین کا انتظام کیا گیا جس میں صوبہ [[پختونخوا]] اور پنجاب سے زمین لی گئی۔ عارضی طور پر دارالحکومتدار الحکومت کو [[راولپنڈی]] منتقل کر دیا گیا اور [[1960ء]] میں اسلام آباد پر ترقیاتی کاموں کا آغاز ہوا۔ شہر کی طرز تعمیر کا زیادہ تر کام یونانی شہری منصوبہ دان Constantinos A. Doxiadis نے کیا۔ [[1968ء]] میں دارالحکومتدار الحکومت کو اسلام آباد منتقل کر دیا گیا۔
 
دارالحکومتدار الحکومت بننے کے بعد اسلام آباد نے پاکستان بھر سے لوگوں کو اپنی طرف متوجہ کیا اور ساتھ ساتھ دارالحکومتدار الحکومت کے طور پر اس شہر نے کی اہم اجلاسوں کی ایک بڑی تعداد کی میزبانی بھی کی۔ اکتوبر 2005 کے کشمیر کے زلزلے میں شہر کو کچھ نقصان کا سامنا بھی کرنا پڑا اور پھر جولائی 2007 میں لال مسجد کے محاصرے سمیت ،سمیت، جون 2008 میں دہشت گردی کے واقعات کی ایک سلسلے کا سامنا بھی کرنا پڑا۔ ڈنمارک کے سفارت خانے پر بم حملہ اور ستمبر 2008 میریٹ ھوٹل بم دھماکے بھی اسی شہر میں ہوئے ۔ہوئے۔ 2010 28 جولائی کو ائیربلو کی پرواز 202 اور بھوجا ایئر کی پرواز کےالمناککے المناک فضائی حادثات بھی اسلام آباد میں ہوئے۔
 
== جغرافیہ و آب وہوا ==
[[فائل:Faisal Masjid %26 Margalla Hills.jpg|تصغیر|دائیں|300px|[[مارگلہ]] پہاڑی ــ]]
 
اسلام آباد سطح مرتفع پوٹوھار میں مارگلہ پہاڑی کے دامن میں واقع ہے۔ اسکیاس کی بلندی{{convert|540|m}}۔<ref name="D. Brunn">{{cite book|title=Cities of the World: World Regional Urban Development|year=2003|publisher=Rowman & Littlefield Publishers|isbn=978-0-8476-9898-1|pages=368–369|url=http://books.google.com.pk/books?id=wPZq1ZTaVQoC&pg=PA368#v=onepage&q&f=false|author=Stanley D. Brunn|edition=3rd|coauthors=Jack F. Williams, Donald J. Zeigler|accessdate=3 جولائی 2012|chapter=Cities of South Asia|month=May}}</ref><ref>{{cite web|title=Islamabad Airport|publisher=Climate Charts|url=http://www.climate-charts.com/Locations/p/PK41571.php#data}}</ref> ہے۔یہہے۔ یہ شہر اور قدیم شہر [[راولپنڈی]] ساتھ ہی واقع ہیں اور جڑواں شہر کہلاتے ہیں۔،ہیں۔ ،<ref name="Yasmeen Niaz">{{cite book|title=پاکستان: A Global Studies Handbook|publisher=ABC-CLIO|isbn=978-1-85109-801-9|url=http://books.google.com.pk/books?id=OTMy0B9OZjAC&pg=PA299#v=onepage&q&f=false|author=Yasmeen Niaz Mohiuddin|edition=1st|accessdate=1 جولائی 2012|page=299|date=27 نومبر 2006}}</ref> اور دونوں کا کوئی سرحدی تعین نہین ہے۔ <ref name=Saxon>{{cite news|title=New Capital City With an Industrial Twin|url=http://www.nytimes.com/1988/04/11/world/new-capital-city-with-an-industrial-twin.html|accessdate=1 جولائی 2012|newspaper=نیو یارک ٹائمز|date=11 اپریل 1988|author=Wolfgang Saxon}}</ref> اسکےاس کے شمال مشرق میں پہاڑی علاقہ مری وقع ہے ، اور جنوب مغرب میں ٹیکسلا کاہوٹہ، جنوب مشرق میں اٹک شمال مشرق میں یہ شہر {{convert|906|km2}}۔<ref>Butt, M. J.، Waqas, A.، Iqbal, M, F.، Muhammad.، G.، and Lodhi, M. A. K.، 2011, "Assessment of Urban Sprawl of Islamabad Metropolitan Area Using Multi-Sensor and Multi-Temporal Satellite Data." ''Arabian Journal For Science And Engineering''۔ Digital Object Identifier (DOI): 10.1007/s13369-011-0148-3.پہ پھیلا ہوا ہےشہر کے کچھ حصوں کو دریا کورنگ سیراب کرتا ہے جس کا پانی راول بند میں بھی گرتا ہے۔ ۔</ref><ref>url=http://www.britannica.com/EBchecked/topic/295631/Islamabad#ref749695/اسلام آباد</ref>
 
اسلام آباد کی آب و ہوا پانچ موسموں پر مشتمل ہے : موسم سرما ( نومبر فروری) ، موسم بہار ( مارچ اور اپریل ) ، موسم گرما ( مئی اور جون ) ، مانسون یعنی برسات ( جولائی اور اگست ) اور موسم خزاں ( ستمبر اور اکتوبر)۔ سب سے گرم مہینہ جون کا ہوتا ہے، سب سے ٹھنڈا مہینہ جنوری کا جبکہ جولائی کے مہینہ میں سب سے زیادہ بارشیں ہوتی ہیں۔ 2001 23 جولائی کو اسلام آباد میں صرف دس گھنٹوں کو دوران میں 620 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی جس نے گزشتہ 100 سال کے سب سے زیادہ بارش کے تمام ریکارڈز توڑ دیے۔
 
{{خانہ موسم اسلام آباد}}
 
== معیشت ==
اسلام آباد اسٹاک ایکسچینج کی بنیاد 1989 ء میں رکھی گئی۔اسلامگئی۔ اسلام آباد اسٹاک ایکسچینج، کراچی اسٹاک ایکسچینج اور لاہور اسٹاک ایکسچینج کے بعد پاکستان کی تیسری سب سے بڑی اسٹاک ایکسچینج ہے جس کا اوسط یومیہ کاروبار 1 ملین حصص سے زیادہ ہے۔ اسلام آباد میں دو سافٹ ویئر ٹیکنالوجی پارکس کے ساتھ معلومات اور مواصلات ٹیکنالوجی کی قومی اور غیر ملکی کمپنیاں بھی بڑی مقدار میں کام کر رہی ہیں۔ پی آئی اے، پی ٹی وی، پی ٹی سی ایل، او جی ڈی سی ایل،ایل اور زرعی ترقیاتی بینک لمیٹڈ کی طرح پاکستان کی کئی سرکاری کمپنیاں بھی اسلام آباد میں مقیم ہیں۔ اس طرح پی ٹی سی ایل، موبی لنک، ٹیلی نار، یوفون،یوفون اور چائنا موبائل اور دیگر تمام اہم ٹیلی کمیونیکیشن آپریٹرز کے ہیڈ کوارٹرز اسلام آباد میں واقع ہیں۔
 
http://www.jobz.pk/jobs_in_islamabad/
 
== آبادی ==
پاکستان کی آبادی کی مردم شماری تنظیم کے ایک اندازے کے مطابق اسلام آباد کی آبادی 2012 میں تقریباً 2 لاکھ تک پہنچ چکی ہے جبکہ 1998 کی مردم شماری کے مطابق اسلام آباد کی آبادی 805.235 تھی۔ اردو زبان ملک کی قومی و سرکاری زبان ہونے کی وجہ سے شہر کے اندر بولی جاتی ہے جبکہ انگریزی بھی وسیع پیمانے پر استعمال کی جاتی ہے۔ شہر میں دیگر بولی جانے والی زبانوں میں پنجابی، پشتو اور پوٹھوہاری میں شامل ہیں۔ آبادی کی اکثریت کی مادری زبان پنجابی ہے جو 68 فیصد ہے۔ آبادی کا 10 فیصد پشتو بولنے والے ہیں اور 8 فیصد دیگر زبانے بولنے والے ہیں۔ تقریباً 15 فیصد سندھی زبان بولنے والے ہیں۔ 20 فیصد بلوچی زبان بولنے والے ہیں۔ شہر کی آبادی کے لوگوں میں زیادہ پنجاب سے تعلق رکھنے والوں کی ہے۔
 
آبادی کی اکثریت 15-64 سال کی عمر کے گروپ میں ہے۔ آبادی کا صرف 3 فیصد کی عمر 65 سال سے اوپر ہے جبکہ 37،90 فی صد 15 سے کم عمر کے ہے اور بے روزگاری کی شرح 15.70 فی صد ہے۔ اسلام 95،53 فیصد کے ساتھ، شہر میں سب سے بڑا مذہب ہے۔ شہری علاقے میں مسلمانوں کی شرح 93،83 فیصد ہے جبکہ دیہی علاقوں میں یہ تناسب، 98،80 فی صد ہے۔ دوسرا سب سے بڑا مذہب مسیحیت ہے جس کے بعد ہندو ہے۔
 
== بنیادی ڈھانچہ ==
[[فائل:Islamabad Zone Map.png|300px|تصغیر|ضعلہ اسلام آباد کا نقشہ]]
=== نقل و حمل ===
اسلام آباد کا بین الاقوامی ہوائی اڈا نظیر بھٹو بین الاقوامی ہوائی اڈا کے نام سے جانا جاتا بے جس کے ذریعے اسلام آباد دنیا بھر کے اہم مقامات سے منسلک ہے۔ نظیر بھٹو بین الاقوامی ہوائی اڈا پاکستان میں تیسرا سب سے بڑا ہوائی اڈا ہے اور چکلالہ راولپنڈی میں، اسلام آباد شہر کے باہر واقع ہے۔ [[مالی سال]] میں 2004-2005، بے نظیر بھٹو کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر 23.436 ہوائی جہاز کی نقل و حرکت ہوئی اور 2.88 ملین سے زائد مسافروں نے سفر کیا۔
 
مسافروں کی بڑھتی ہوئی تعداد سے نمٹنے کے لیے اسلام آباد سے باہر فتح جنگ کے علاقہ میں گندھارا بین الاقوامی ہوائی اڈا بھی زیر تعمیر ہے جو مکمل تیار ہونے کے بعد پاکستان میں سب سے بڑا ہوائی اڈا بن جائے گا۔ گندھارا بین الاقوامی ہوائی اڈا 400 ملین ڈالر کی لاگت سے تعمیر کیا جارہاجا رہا ہے۔
 
== شراکت دار شہر ==
File:Rawat Fort Main gate.JPG| قلعہ راوت
File:Home in Islamabad.JPG|اسلام آباد کا ایک گھر
| File:National Art Gallery, Islamabad, پاکستان۔jpgقومیپاکستان۔ jpgقومی نگارخانہ برائے فنون لطیفہ
</gallery>
== حوالہ جات ==