"سیاست پاکستان" کے نسخوں کے درمیان فرق

حجم میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ،  2 سال پہلے
م
خودکار: خودکار درستی املا ← سے، وزیر اعظم، دوسرا، سے، ارکان
(←‏مزید دیکھیے: درستی املا)
م (خودکار: خودکار درستی املا ← سے، وزیر اعظم، دوسرا، سے، ارکان)
[[ملف:Chart political.png|تصغیر|ایک [[سیاسی قطب نما]] جو سیاست کے اقسام کو ظاہر کرتا ہے]]
{{اصل مضمون|حکومت پاکستان}}
ریاستِ پاکستان کا سربراہ صدر مملکت ہوتا ہے، آئین پاکستان کے مطابق ایک صدر کا مسلمان اور پاکستانی ہونا سب سے لازمی ہے۔صدر پانچ سال کے لیے منتخب ہوتا ہے اور اگر پانچ مدت پورا ہونے سے پہلے ہی صدر استعفیٰ دیا چاہے تو دے سکتا ہے،صدر کو ایک اور طریقے سے بھی برطرف کیا جاسکتا ہے اگر پارلیمان کی دو تہائی (1/3) ممبرانارکان صدر کو ہٹانے کے حق میں ووٹ دے۔
 
عام طور پر تو اختیارات وزیراعظموزیر اعظم اور دیگر حکومتی وزراء کے پاس ہوتے ہیں مگر اصل بنیادی اختیارات (جیسے قانون بنانا،وزیراعظمبنانا،وزیر اعظم جیسے اہم عہدیدار منتخب کرنا،وغیرہ) پارلیمان کے پاس ہوتے ہیں۔پاکستان کا پارلیمان [[دو ایوانیت|دو ایوانی]] ہے، ایک ایوان [[قومی اسمبلی پاکستان|قومی اسمبلی]] ہے اور دوسراںدوسرا [[سینٹ پاکستان|سینٹ]] ہے۔قومی اسمبلی کے ارکان کو براہ راست عوام منتخب کرتے ہیں جبکہ سینٹ کے ارکان کو چاروں صوبائی اسمبلیوں کے ارکان منتخب کرتے ہیں۔
 
وزیزاعظم جو حکومت کا سربراہ ہوتا ہے،وزیراعظمہے،وزیر اعظم کے ماتحت ایک کابینہ ہوتا ہے جس میں مختلف وزراء ہوتے ہیں ان وزراء کا تقرر صدر مملکت وزیراعظموزیر اعظم کے مشورے پر کرتا ہے۔اس کابینے میں بہت سے وزارتیں ہوتی ہیں۔1992 کے مطابق پاکستانی حکومتی کابینہ میں تقریبا 33 اہم وفاقی وزارتیں تھی جن میں عظمہ،داخلہ،خارجہ،تجارت،تعلیم،ماحولیات،دفاع،ثقافت، پٹرولیم اور قدرتی وسائل،پارلیمانی امور،قانون، مذہبی امور،وغیرہ شامل ہیں۔
 
==قانون سازی==
102,784

ترامیم