"ضیاء الحق قاسمی" کے نسخوں کے درمیان فرق

م
خودکار درستی+ترتیب+صفائی (9.7)
م (درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر + ویکائی)
م (خودکار درستی+ترتیب+صفائی (9.7))
 
[[تصویرفائل:Zeyaqasmi.203.jpg|framepx|thumbتصغیر|leftبائیں|ضیا الحق قاسمی]]پیدائش: 1935ء
 
انتقال:26 اکتوبر 2006ء
 
ملک کا پہلا مزاحیہ رسالہ ظرافت ان کی ادارت میں اکیس برس تک شائع ہوتا رہا۔ ضیاالحق کی ایک اور وجہ شہرت ملکی اور عالمی مزاحیہ مشاعرے منعقد کرانا بھی رہی۔ انہوں نے پاکستان کے بڑے شہروں میں مزاحیہ مشاعرے منعقد کرائے۔ قاسمی بعض ٹی وی پروگراموں میں بطور میزبان شریک ہوتے رہے۔ کراچی میں حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے ان کا انتقال ہوا۔ انتقال کے وقت ان کی عمر اکہتر سال تھی۔
 
 
== نمونۂ کلام ==
 
<center>میں شکار ہوں کسی اور کا مجھے مارتا کوئی اور ہے<br />
مجھے جس نے بکری بنادیا ہے وہ بھیڑیا کوئی اور ہے<br />
کئی سردیاں بھی گزرگئیں میں تو اس کے کام نہ آسکا<br />
میں لحاف ہوں کسی اور کا مجھے اوڑھتا کوئی اور ہے</center>
 
 
 
انہوں نے اپنی شاعری میں سیاسی نظام کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا:
 
<center>خود خدا نے مجھے بھیجا ہے حکومت کے لیے<br />
میں سمجھتا ہوں کہ زمانے کی ضرورت کیا ہے؟<br />
مشورہ کوئی نہیں آپ سے مانگا میں نے<br />
آپ کو ٹانگ اڑانے کی ضرورت کیا ہے؟ </center>
 
 
ان کی مزاحیہ شاعری میں معاشی اور معاشرتی حالت کی بھی عکاسی ہوتی ہے:
 
<center>کوئی گاہک لوٹ جائے یہ ممکن ہی نہیں<br />
میں نے حاصل کر لیا ہے سیلزمینی میں کمال<br />
ایک گاہک کو ضرورت ٹائلٹ پیپر کی تھی<br />
میں نے اس کو دے دیا ہے اس کے بدلے ریگ مال </center>
 
[[زمرہ:اردو شعرا]]
[[زمرہ:مزاحیہ شاعر]]
[[زمرہ:پاکستانی شعرا]]
[[زمرہ:پاکستانی مزاحیہ شاعر]]
[[زمرہ:مزاحیہ شاعر]]