"بھارت میں بچوں کی قربانی" کے نسخوں کے درمیان فرق

م
حوالہ جات/روابط کی درستی
کوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
م (حوالہ جات/روابط کی درستی)
* اولاد کی قربانی: [[اوڈیشا]] کے [[پھول بنی ضلع]] میں ایک سات سالہ لڑکے کو خود اسی کے باپ نے گاؤں کی ایک دیوی کے رو بہ رو خوشی سے قربان کر دیا۔ اطلاعات کے مطابق اس شخص نے پہلے ایک بکرے کی قربانی دی اور اس سے جاری خون کو دیکھا۔ پھر یکایک اس کی نظر اپنے ہی سات سالہ لڑکے پر پڑی جسے بعد میں اس نے دیوی کو مزید خوش کرنے کے لیے قربان کر دیا۔ یہ واقعہ [[2006ء]] کا ہے۔ <ref>7-yr-old boy sacrificed in Orissa, Deccan Herald - 11. 7. 2006</ref>
 
* اچھی فصل کے لیے بلی: [[چھتیس گڑھ]] کے کچھ قبائل میں یہ اعتقاد ہے کہ 12 سال سے کم عمر کے بچوں کی بلی کی وجہ سے اچھی فصل رو نما ہوتی ہے۔ [[2011ء]] کی ایک اطلاع کے مطابق ایک سات سالہ بھارتی لڑکی کو دو کسانوں نے ٹکڑے ٹکڑے کر ڈالا۔ پھر منتشرہ جسم سے کلیجا نکالا اور اسے چڑھاوے کے طور پیش کیا تاکہ ان کے کھیتوں میں اچھی فصل ہو۔<ref>[https://m.dailyhunt.in/news/india/english/stressbuster-epaper-strbusen/bali+this+human+sacrifice+still+happening+in+india+read+the+real+story-newsid-74059849 "Bali" This Human Sacrifice still Happening in India? Read the Real Story! - Stressbuster | DailyHunt<!-- خودکار تخلیق شدہ عنوان -->]</ref>
 
==مزید دیکھیے==