"گیمطریا" کے نسخوں کے درمیان فرق

13 بائٹ کا ازالہ ،  4 سال پہلے
املا
(درستگی حوالہ)
(املا)
جماتریا (عبرانی: גימטרי انگریزی: Gematria) یا جیماتریا یہودیت میں حروف اور کلمات کے اعداد مقرر کرنے کے علم یا طریقے کو کہا جاتا ہے۔ اور اس بارے میں یہ عقیدہ ہے کہ ہم عدد حروف، کلمات اور عبارات کا آپس میں ایک خاص ربط ہوتا ہے۔ اور اس کے علاوہ وہ اپنے ربط اعداد کے بارے میں کہتے ہیں کہ ممکنہ طور پر یہ کسی شخص کی عمر ، سال اور عادات و فطرت سے بھی آگاہ کرتے ہیں۔اسی طرز اعداد گری کو یہودی تاویلات و دانش مذہبی سے استدلال کرتے ہیں اور انہی خطوط پر وہ مستقبل شناسی اور پیش گوئیوں کو استدراج کرتے ہوئے واقعات آئندہ کی تعبیرات بھی کرتے ہیں۔ یہ طریقہ کار اکثر احادیث و روایات توراتی (تالمود) کی شرح و بسط میں مستعمل رہا ہے۔ جماتریا عربی کے علم الاعداد و حروف ‘ حساب جُمَل ‘ اور یونانی علم عدد شناسی ایزوپسفی کا ہمسر و مقابل علم ہے۔اگرچہ یہ لفظ عبرانی الاصل ہے یعنی جماتریا لیکن اس بات کے امکانات ہیں کہ اس کا ماخذ یونانی لفظ γεωμετρια (گئومتریا)<ref> geōmetriā</ref> اور یا پھر انگریزی لفظ geometry جو ہندسہ کے معنی دیتے ہیں ہوسکتا ہے کیونکہ نوعیت کے اعتبار سے جماتریا ہندسہ سے بحث کرتا ہے اور اصواتی طور پر مذکورہ بالا یونانی اور انگریزی ناموں سے قریب تر ہے۔جبکہ کچھ دانشوروں کے خیال میں جماتریا یونانی کلمہ گراماتیا<ref>gēmaṭriyā</ref> سے لیا گیا ہے۔ ہر دو صورتوں امکان حالب یہی ہے کہ اس عبرانی لفظ کی صورت گری دونوں الفاظ کی مرہون منت ہے۔ ( بہت سے اس بات کے قائل ہیں کہ گاما جو کہ یونانی ابجد کا تیسرا حرف ہے اور تریا سے تخلیق ہوا ہے: گاما+تریا)۔<ref>gamma + tria</ref>
 
انگریزی زبان میں یہ لفظ سترھویں صدی عیسوی کے مترجم جیووانی پیکو دلا مراندولا کے تراجم سے متعارف ہوا تھا۔ اگرچہ یہ احتمال اپنی جگہ موجود ہے کہ یہ لفظ یعنی جماتریا یونانی الاصل ہے یا کم از کم یونانی زبان سے مشابہت صوتی رکھتا ہے اس کے باوجود جماتریا کثرت سے یہودی مخطوطات و الواح اور قبالہ میں کثرت سے استعمال ہوا ہے۔
 
== ماخذات ==