"موسیٰ بیگی" کے نسخوں کے درمیان فرق

1,348 بائٹ کا اضافہ ،  2 سال پہلے
=== تحصیل علم ===
موسیٰ بیگی نے [[قازان]] ([[تاتارستان]] کے دارالحکومت)، [[بخارا]]، [[سمرقند]]، [[مکہ مکرمہ]]، [[مدینہ منورہ]] اور [[قاہرہ]] میں تعلیم حاصل کی۔ [[قاہرہ]] میں وہ [[دارالافتاء المصریہ]] میں وہ شیخ محمد بخت المطیع سے پڑھتے رہے۔ [[قازان]] میں اُن کی ابتدائی تعلیم نامکمل رہ گئی تھی، وہ تعلیم مکمل کیے بغیر ہی [[روستوف]] واپس آگئے تھے اور وہاں روسی سائنس کالج میں داخلہ لے لیا جہاں اُس نے [[1895ء]] میں گریجویشن کی ڈگری حاصل کی۔ دینی تعلیم کی تکمیل کے لیے موسیٰ بیگی [[بخارا]] چلے گئے اور وہاں چار سال تک دینی تعلیم حاصل کی اور پھر [[روستوف]] واپس آگئے۔ مزید دینی تعلیم کے لئے وہ [[مشرق وسطی]] چلے گئے۔ [[استنبول]] سے ہوتے ہوئے وہ [[قاہرہ]] پہنچ گئے اور [[جامعہ الازہر|جامعۃ الازہر]] میں داخلہ لیا۔ [[جامعہ الازہر|جامعۃ الازہر]] میں [[شیخ محمد عبدہ]] سے استفادہ کیا۔ چار سال تک علم [[فقہ]]، [[علم کلام]] اور [[فلسفہ]] کا وسیع مطالعہ کیا۔[[ہندوستان]] میں بھی آئے اور [[اتر پردیش]] میں قیام کیا، اِس قیام میں اُنہوں نے [[سنسکرت زبان]] سیکھی اور [[مہابھارت]] کا بھی مطالعہ کیا۔
 
=== ازدواج اور [[سینٹ پیٹرز برگ]] میں قیام ===
[[جامعہ الازہر|جامعۃ الازہر]] سے واپسی کے بعد موسیٰ بیگی نے شادی کرلی۔ اِس شادی میں ملازمت کی عملی زندگی بسر کرنے کی بجائے وہ قانون پڑھنے کے لیے [[سینٹ پیٹرز برگ]] چلے گئے تاکہ وہاں اسلامی [[فقہ]] کا مغربی قانون سے تقابلی جائزے کا مطالعہ کرسکیں۔ [[سینٹ پیٹرز برگ]] میں قیام کے دوران اُنہیں روسی معاشرے کو قریب سے دیکھنے کا موقع فراہم ہوا۔ یہ قیام [[1905ء]] سے [[1917ء]] یعنی [[انقلاب اکتوبر]] تک رہا۔ [[سینٹ پیٹرز برگ]] میں قیام کے دوران ہی اُنہیں سیاحت سے شغف پیدا ہوگیا اور [[اسلام]] میں ایک سیاسی قوت پیدا کرنے کی کوششوں کا احساس پیدا ہوا۔ تاہم وہ عملی سیاست میں ملوث نہ ہوئے، سوائے اِس کے کہ اُنہوں نے مسلم کانگریس کے سیکرٹری کے طور پر کام کیا اور [[اتحاد اسلامیت|پین اسلام ازم]] کے علمبردار جریدہ اُلفت میں کئی مضامین لکھے۔
 
== وفات ==