"متحدہ ترقی پسند اتحاد" کے نسخوں کے درمیان فرق

درستی
م (خودکار: ویکائی > چندرا شیکھر، وی پی سنگھ)
(درستی)
|founder = [[انڈین نیشنل کانگریس]]
|colorcode = {{Indian National Congress/meta/color}}
|chairman = [[سونیا گاندھی]]<ref>{{cite web|url=https://timesofindia.indiatimes.com/india/no-decision-yet-on-sonia-gandhi-continuing-as-upa-chairperson-moily/articleshow/62251809.cms|title=No decision yet on Sonia Gandhi continuing as UPA chairperson: Veerappa Moily|work=[[دی ٹائمز آف انڈیا]]|accessdate=26 Decemberدسمبر 2017|date=26 Decemberدسمبر 2017}}</ref>
|incumbent =
|formerpm = [[منموہن سنگھ]] (2004-20142004–2014)
|loksabha_leader = [[ملکا ارجن کھگرے]]
|rajyasabha_leader = [[غلام نبی آزاد]]
|no_states = {{Composition bar|6|31|hex=#00BFFF}}
}}
'''متحدہ ترقی پسند اتحاد''' (یو پی اے) 2004 کے عام انتخابات کے بعد بھارت میں وسط بائیں بازو سیاسی جماعتوں کا ایک اتحاد ہے۔<ref>{{cite web|url=http://electionaffairs.com/parties/UPA.html |title=United Progressive Alliance, UPA, UPA Performance General Election 2009, UPA Tally, UPA in Lok Sabha Elections 2009, India Elections 2009, General Elections, Election Manifesto, India Election News, India Elections Results, Indian Election Schedule, 15th Lok Sabha Elections, General Elections 2009, State Assembly Elections, State Assembly Elections Schedule, State Assembly Election Results|work=electionaffairs.com|deadurl=yes|archiveurl=https://web.archive.org/web/20120205005205/http://electionaffairs.com/parties/UPA.html|archivedate=5 Februaryفروری 2012}}</ref> یوپی اے کی سب سے بڑی رکن پارٹی[[انڈین بھارتینیشنل کانگریس]] نیشنل کانگریس ہے، جس کی سابق قومی صدر[[سونیا گاندھی]] سونیا گاندھی یو پی اے کی چیئرپرسن ہیں۔ اس نے 2004 میں دوسرے بائیں اتحادی جماعتوں کی حمایت کے ساتھ حکومت قائم کی۔
== تاریخ ==
 
20042004ء کے عام انتخابات کے بعد یو پی اے کو جلد ہی تشکیل دیا گیا تھا جب یہ واضح ہو گیا تھا کہ کوئیکسی پارٹیبھی جماعت نے واضح اکثریت نہیں حاصل نہیں کی ہے۔ بھارتی [[بھارتیہ جنتا پارٹی]]]] کے سربراہی والے نیشنل ڈیموکریٹک الائنس (این ڈی اے) حکمران جماعت نے 543 رکنی 14ویں [[لوک سبھا]] میں 181 سیٹیں جیتیں جبکہ یو پی اے کی 218 نشستوں کی تعداد کی مخالفت تھی۔
 
لیفٹ فرنٹ 59 ارکان پارلیمنٹ (لوک سبھا کے اسپیکر کے علاوہ)، 39 ممبران کے ساتھ سماجوادی پارٹی اور بہوجن سماج پارٹی کے 19 ممبران پارلیمانی پارٹی کے دیگر اہم بلاکس ہیں جو مختلف مراحل پر یو پی اے کی حکومت کی حمایت کرتے ہیں ۔ یو پی اے نے پارلیمان میں اپنی اکثریت پر ایک سادہ اکثریت سے لطف اندوز نہیں ہوا بلکہ اس نے بیرونی حمایت پر زور دیا ہے کہ اس بات کا یقین کرنے کے لئے کہ اس سے پہلے متحدہ فرنٹ کے سابق اقلیتی حکومتوں کی طرف سے اپنا فارمولہ جیسے ہندوستانی پارلیمنٹ کا اعتماد حاصل ہے۔ این ڈی اے، کانگریسی حکومت کے پی وی نرسنہا راؤ اور [[وی پی سنگھ]] اور [[چندرا شیکھر]] کی پہلے حکومتیں۔
 
== حوالہ جات ==
{{حوالہ جات}}
[[زمرہ:خودکار ویکائی]]