"ادائیگی" کے نسخوں کے درمیان فرق

960 بائٹ کا اضافہ ،  2 سال پہلے
اضافہ
م (خودکار: خودکار درستی املا ← اجرا، یا؛ تزئینی تبدیلیاں)
(اضافہ)
 
عام طور سے وصول کنندے کے پاس اس بات کا اختیار ہے ہوتا ہے کہ وہ یہ طے کرے کہ کون سا ادائیگی کا طریقہ اسے قابل قبول ہوتا ہے؛ حالانکہ مروجہ قوانین یہ لازم بناتی ہیں کہ وصول کنندہ کسی ملک کے [[قانونی ٹنڈر]] کو کسی سفارش کردہ حد تک قبول کرے۔ ادائیگی عمومًا وصول کنندے کے مقامی سکوں میں ادا کی جاتی ہے، تاوقتیکہ فریقین کسی اور بات پر راضی نہ ہوں۔ دیگر ملکی سکوں میں ادائیگی زائد بیرونی زر مبادلہ کی معاملتوں پر مشتمل ہے۔ وصول کنندہ قرض پر [[سمجھوتہ]] کر سکتا ہے، یعنی وہ کسی قرض کے کچھ حصے پر جزوی ادائیگی کو قرض خواہ کی مکمل واجب الادا رقم کے تصفیے کے طور پر قبول کر لے یا پھر کوئی چھوٹ دے، مثلًا، نقد ادائیگی یا بر وقت ادائیگی میں نرمی، وغیرہ۔ دوسری جانب اداکنندہ رقمی جرمانہ بھی عائد کر سکنا ہے، جیسے کہ دیرانہ فیس یا کوئی مخصوص کریڈ کارڈ کے لیے فیس، وغیرہ۔
 
کسی ادائیگی کا وصول کنندے کی جانب سے قبول کیا جانا قرض یا کوئی اور فریضے کو ختم کر دیتا ہے۔ [[قرض دہندہ]] غیر واجبی انداز میں ادائیگی قبول کرنے سے انکار نہیں کر سکتا، مگر ادائیگی کچھ حالات میں قبول نہیں کی جا سکتی ہیں، مثلًا، کوئی اتوار یا بینک کے اوقات کے بعد کی معاملت۔ وصول کنندے پر عمومًا لازم ہے کہ وہ کسی ادائیگی کے لیے ادا کنندے کو [[رسید]] فراہم کر کے تسلیم کرے۔ ایک رسید کسی کھاتہ پر مہر بھی لگا سکتی جیسے کہ "مکمل طور پر ادا"۔ کسی قرض کے لیے گارنٹی فراہم کرنا یا کوئی قرض کے لیے دیگر حفاظتی اقدام اٹھانا کسی قسم کی ادائیگی نہیں ہے۔
 
== حوالہ جات ==
35,131

ترامیم