"ضلع کرم" کے نسخوں کے درمیان فرق

5 بائٹ کا اضافہ ،  2 سال پہلے
کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
(ٹیگ: بصری خانہ ترمیم ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
(ٹیگ: بصری خانہ ترمیم ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
پراچین زمانے سے گندھارا تہذیب اور تمدن جب اپنے عروج پر تھا تو یہ علاقہ گھنے جنگلات کا ایک حصہ تھا اور ایک دریا کرم کی وجہ سے شہرت رکھتا تھا جس کا ذکر سنسکرت کی کتاب جو کہ ہندوؤں کی مقدس کتاب ہے (رگ وید )میں بھی آیا ہے۔
 
550 قبل مسیح چندر گپت موریا خاندان نے جب ٹیکسلا کو اپنا دارالحکومت بنایا اور اپنے تہذیب اور تمدن کو ترقی دیں تو ان کی توجہ کا خاص مرکز پاکستان کے یہ علاقے آبادکاری کی جانب متوجہ ہوئے اپنے سحرانگیز آب و ہوا کی وجہ سے اس علاقے کے پہاڑوں میں مختلف قبائل آ کر آباد ہونا شروع ہوئے جس کا سہرا تاریخ کے لازوال ہیرو مہاراجہ اشوک کے سر جاتا ہے ۔جس کی آباد کردہ ڈالروںدرجنووں چھوٹی بڑی آبادیاں اور دیہات جو آج صرف کھنڈرات کی شکل میں موجود ہے جن میں قابل ذکر بین الاقوامی ورثاء یونیسکو اور نیشنل ہیرٹیچ سائیٹ جن میں قابل ذکر تخت بھائی کے کھنڈرات سوا ت کے کھنڈرات مینادم کے کھنڈرات اور دیگر پتھروں پہ کندھا کی گئی بدھ مذہب کی تصاویر اس بات کی دلیل ہے کہ عیسی علیہ السلام سے قبل بھی پاکستان کا یہ خوبصورت علاقہ انسانی دسترس کا حصہ تھا