"ڈہلیا" کے نسخوں کے درمیان فرق

427 بائٹ کا اضافہ ،  2 سال پہلے
م
ڈہلیا
م (خودکار: درستی املا ← لیے، زیادہ؛ تزئینی تبدیلیاں)
م (ڈہلیا)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
 
اس [[پھول]] کا اصل وطن [[میکسیکو]] ہے۔ ہسپانوی مہم جوؤں نے 15 ویں صدی ميں اسے میکسیکو کے پہاڑی علاقوں میں دیکھا۔ [[میکسیکو]] کا یہ قومی پھول ہے۔ 1872 میں ایک پودا میکسیکو سے [[نیدرلینڈز|نیدرلینڈ]] پہنچا اس پودے سے ہی اس کی باقی اقسام بنائی گئیں۔ انگریز اسے برصغیر لے آئے۔ پاکستان میں اس کی کئی اقسام موجود ہیں۔مگر زیادہ تر لوگ انڈین ڈہلیا اور پاکستانی ڈہلیا کو استعمال کرتے ہیں۔انڈین ڈہلیا کا پھول جسامت میں پاکستانی ڈہلیا سے بڑا ہوتا ہے۔پاکستانی ڈہلیا جسامت میں چھوٹا پر چمکدار رنگت کا حامل ہوتا ہے۔اسی لیے یہ انڈیا میں بھی بہت مقبول ہے۔
ڈہلیا کے پھول میں کسی قسم کی خوشبو نہیں ہوتی اس لئے یہ تتلیوں اور دوسرے حشرات کو اپنی جانب راغب کرنے کے لئے اپنے تیز شوخ رنگوں کا سہارا لیتا ہے۔
 
اس پودے کا نام ڈہلیا 18 ویں صدی کے سویڈش ماہر نباتات اینڈرز ڈاہل کے نام پر رکھا گیا۔
 
سردیوں میں اسے کورے سے بچانا چاہیے اور اسے دھوپ میں رہنا چاہیے۔ اگست میں اس کی ٹہنیوں سے نئے پودے بنائے جاتے ہیں۔
استعمالات:
انسولین کی دریافت سے قبل اس پودے کی جڑوں(بلبز) کا رس شوگر کے مریض استعمال کرتے تھے۔
 
== ایوان تصویر ==