"سید ذوالفقار نروری" کے نسخوں کے درمیان فرق

م
کوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
مکوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
(ٹیگ: بصری خانہ ترمیم ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
مکوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
(ٹیگ: بصری خانہ ترمیم ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
== علوم اسلامیہ میں مقام ==
آپ کے علم میں وسعت تھی، فقہ، حدیث، تفسیر، علم کلام اور ادب حتی کہ تاریخ سے بھی گہری وابستگی تھی، اس کا اندازہ تو ان کتابوں سے ہوتا ہے جو آپ نے تقریباً اپنے پینتالیس سالہ دور تدریس میں پڑھائی ہیں، اگرچہ اخیر زمانہ تدریس کی ساری مشغولیت حدیث شریف کی خدمت کے لئے وقف تھی، اور آپ سے صرف صحیحین ہی متعلق رہیں، تاہم آپ کو مہارت دوسرے فنون سے بھی گہری تھی، اور اس امر کی وضاحت کرتے ہوۓ آپ کے خلف رشید حضرت مفتی جنید صاحب مد ظلہ فرماتے ہیں: دوران تعلیم ایم پی کے اکابر علماء میں ان کا زیادہ تعلق شہر بھوپال کے سابق قاضی حضرت مولانا <nowiki>[[سید عابد علی وجدی الحسینی]]</nowiki> سے رہا، کئی سفر اور کئی کئی روز کا قیام ان سے صرف ملاقات و صحبت کے لئے ہوا، انہوں نے فقہ میں مہارت کی طرف توجہ دلائی، فراغت کے بعد افتاء کا بھی مشورہ دیا تھا، لیکن والد صاحب کا رجحان ہر فن سے مناسبت رکھنے کا تھا، جسے بعد میں مستفیدین نے ضرور محسوس کیا ہوگا (در یسیر: 22) نیز آپ نے فلاح دارین کے فارم میں جو استاد کے تعارف کے لئے خاص ہے اس میں اس سوال کے جواب میں کہ "آپ کو کس فن سے خصوصی دلچسپی ہے؟" لکھا ہے کہ "فن تفسیر" سے.
 
== اخلاق و عادات ==
تقوی و خشیت الہی، تواضع، زہد و استغناء، توکل علی اللہ، تقشف، مجاہدہ و قربانی، اخفاء حال، اکابر و مشائخ سے گہرا تعلق و محبت، بے پناہ غم خواری و غم گساری، قیام لیل کا غایت اہتمام، غایت درجہ حزم و احتیاط، اور ان جیسی انمول خوبیوں کے آپ مالک تھے۔
 
== وفات و تدفین ==
16 ربیع الآخر 2 اپریل 2010 شب جمعہ میں حضرت کی طبیعت علیل ہوگئی، پہلے شفاء ہسپتال ترکیسر پھر کامریج اور اس کے بعد بڑودہ کے ایک ہسپتال میں بھرتی کیا گیا، طبیعت میں نشیب و فراز آتے گئے، چنانچہ 19 ربیع الآخر (5 اپریل) بروز پیر تقریباً دوپہر 12 بجے اچانک ایک اور قلب کا حملہ جو جان لیوا ثابت ہوا، انتقال کے بعد صاحبزادۂ محترم حضرت مولانا جنید احمد صاحب مد ظلہ اور گھر کے دیگر افراد کے مشورہ پر بڑودہ سے آبائی وطن (نرور، ضلع شیو پوری، ایم پی) منتقلی کا فیصلہ کیا گیا، اور 20 ربیع الآخر صبح 6 بجے وطن پہنچ کر تقریباً 9:30 کو حضرت کے آبائی قبرستان میں والد مرحوم کے جوار میں تدفین عمل میں آئی۔
 
== تصنیفات ==
316

ترامیم