"ٹڈی (جراد)" کے نسخوں کے درمیان فرق

1,012 بائٹ کا اضافہ ،  8 مہینے پہلے
کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
(«بی بی سی کی 7 جنوری 2020 کی رپورٹ کے مطابق صحرائی ٹڈیوں کے جھنڈ کے جھنڈ جنوبی ای...» مواد پر مشتمل نیا صفحہ بنایا)
 
== اسلام میں ==
حضرت [[عبداللہ بن ابی اوفی]] سے روایت ہے‘۔ ”ہم نے رسول اللہ کے ساتھ سات غزوات میں شرکت کی‘ اور ٹڈی کھائی“<ref>صحیح بخاری</ref><ref>صحیح مسلم</ref>
بی بی سی کی 7 جنوری 2020 کی رپورٹ کے مطابق صحرائی ٹڈیوں کے جھنڈ کے جھنڈ [[جنوبی ایشیا]] اور [[قرنِ افریقہ]] میں حملہ آور ہو رہے ہیں جس سے انسانی خوراک اور اس سے جُڑی اشیا کے لیے خطرات بڑھ رہے ہیں۔ یہ اس ربع صدی کا بدترین حملہ ہے۔
اس طرح کی صحرائی ٹڈّی جو کہ ایک ٹڈے کی قِسم ہے، عموماً تنہائی پسند ہوتی ہے۔ یہ ایک انڈے سے نکل کر ایک نوجوان ٹڈی کی شکل اختیار کرتی ہے اور پھر یہ بالغ ٹڈیوں کے ہمراہ اڑنا شروع کرتی ہے۔
ڈاکٹروں کا کہناہے کہ ٹڈیاں کھانے سے مختلف موسمی بیماریاں ختم ہوتی ہیں۔ٹڈیاں کیونکہ مختلف پتوں سے غذا حاصل کرتی ہیں اس لئے ان کے کھانے سے جسم کو غذائیت ملتی ہے جس سے انسان توانائی اور فرحت محسوس کرتا ہے۔
جڑی بوٹیوں سے علاج معالجہ کرنے والے سعودیوں کا کہناہے کہ ٹڈیاں کھانے سے جوڑوں کا درد ختم ہوتا ہے۔ یہ کمر کے درد کا فعال علاج ہے۔ جن بچوں میں افزائش سست ہوتی ہے انہیں ٹڈیاں کھلانی چاہیں۔
اطبا کا کہنا ہے کہ ٹڈی گرم خشک ہے‘ اس میں غذائیت کم ہوتی ہے‘ہمیشہ اس کو کھانے سے لاغری پیدا ہوتی ہے۔اگر اس کی دھونی دی جائے تو سلس البول اور پیشاب کی پریشانی کو ختم کرتی ہے۔بالخصوص عورتوں کے لئے بہت زیادہ مفید ہے۔بواسیر میں بھی اس کی دھونی دی جاتی ہے اور بچھو کے ڈنک مارنے پر فربہ ٹڈیوں کو بھون کر کھایا جاتا ہے۔مغربی دنیا میں ٹڈی کو فصلوں کے لئے ایک کارآمد کیڑا خیال کیا جاتا ہے۔<ref>https://dailypakistan.com.pk/13-Jul-2017/608279</ref>
== سعودی وزرات زراعت کی طرف سے انتباہ==
دوسری طرف سعودی وزارت زراعت و ماحولیات و پانی نے شہریوں سمیت غیر ملکیوں کومتنبع کیا ہے کہ ٹڈیاں کھانے سے مختلف قسم کی بیماریاں پیدا ہوسکتی ہیں۔
903

ترامیم