"ایران میں سنیت سے شیعت کی صفوی تبدیلی" کے نسخوں کے درمیان فرق

م
Fixed grammar
م (Fixed grammar)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل ترمیم از موبائل ایپ آئی فون ایپ ترمیم)
'''ایران''' '''میں''' '''سنیت سے شیعیت کی [[صفوی سلطنت|صفوی]] تبدیلی کا''' عمل تقریبا 16ویں صدی سے 18 ویں صدی میں وقوع پذیر ہوا اور [[ایران]] جو پہلے [[اہل سنت|سنی]] اکثریت والا ملک تھا ، [[اہل تشیع|شیعہ]] اکثریت اور اسکے روحانی گڑھ میں بدل دیا۔دیا انہوں نےگیا۔ شیعیت کے اندر بھی [[اثناعشری]] فرقے کے [[زیدیہ]] اور [[اسماعیلی]] فرقوں پر غلبے کو یقینی بنایا گیا - جنہوں نے قبل ازیں اپنے اپنے ادوار میں شیعیت پر غلبہ رکھا تھا۔ [[صفوی سلطنت|صفویوں]] نے اپنے طرزعمل سے، 1501ء میں ایران کو ایک آزاد ریاست کے طور پر متحد کیا اور [[اہل تشیع#اثنا عشری|اثناعشری]] شیعیت کو اپنی سلطنت کے باضابطہ مذہب کے طور پر قائم کیا، جو [[تاریخ اسلام|اسلامی تاریخ کا]] کا ایک اہم ترین موڑ ثابت ہوا۔
 
اس عمل کے براہ راست نتیجہ کے طور پرمیں ، موجودہ ایران اور ہمسایہ ملک [[آذربائیجان]] کی آبادی کو تاریخ میں بیک وقت سنی سے شیعہ اسلامآبادی میں تبدیل کر دیا گیا۔ <ref name="books.google.com.au">{{حوالہ کتاب|url=https://books.google.com/books?id=N8IKR0oqdRkC&pg=PA158&dq=safavid+persia+conversion&lr=&as_brr=3&cd=201#v=onepage&q=&f=false|title=The Caspian: Politics, Energy and Security|last=Akiner|first=Shirin|date=2004-07-05|publisher=Taylor & Francis|isbn=9780203641675|language=en}}</ref> دونوں ممالک میں اب شیعہ کی بڑی تعداد اب بھی موجود ہے اور آذربائیجان میں شیعہ آبادی ایران کے بعد دوسرے نمبر پر ہے۔ <ref name="Juan Eduardo Campo p.625">Juan Eduardo Campo,''Encyclopedia of Islam'', p.625</ref>
 
== قبل از صفوی ایران ==