"شہربانو" کے نسخوں کے درمیان فرق

401 بائٹ کا اضافہ ،  8 مہینے پہلے
درستی
(اضافہ مواد)
(درستی)
روایتاً مشہور ہے کہ ان کو [[فارس کی مسلم فتوحات]] کے دوران میں قیدی بنایا تھا۔ وہاں شہزادی ہونے کے ناتے اس کو اشراف میں سے کسی بھی مرد سے شادی کے لیے چناؤ کا اختیار دیا گیا تو حسین ابن علی سے شادی کی۔<ref name=Iranica /> شیعہ مآخذ کی اکثریت یہ بتاتی ہے کہ اس کے بعد شہربانو اپنے بیٹے علی ابن حسین کو جنم دینے کے چند ہی ماہ بعد انتقال کر گئی۔<ref>(1) Al-Mas'udi, Ithabat al-Wasiya, p. 143. Imam Zayn 'al-Abidin, p. 18</ref><ref>Baqir Sharif al-Qarashi. ''The life of Imam Zayn al-Abideen a.s.'' p20-21</ref> اور پیغمبر اسلام کے خاندان کے دیگر افراد کے ساتھ ہی [[جنت البقیع]] میں دفن ہوئیں۔ تاہم، کچھ روایات سے پتہ چلتا ہے کہ [[رے (شہر)|رے]] میں [[بی بی شہر بانو کا مزار|مزار]] ہے۔<ref name=Iranica />
 
شہریانو کو شیعہ اور سنی دونوں فرقوں میں ایک محترم شخصیت کے طور پر دیکھا جاتا ہے اور خاص طور پر ایران میں ان بہت تعظیم کی جاتی ہے، اس کی اہمیت جزوی طور پر اس تعلق سے جڑی ہوئی ہے جس سے وہ اسلام سے قبل پارسیوں اور جدید شیعہ کے درمیان میں فراہم کرتی ہیں۔ تاہم، اس کی تاریخ سازی غیر یقینی ہے۔ اسلامی مصنفین، [[ابو العباس المبرد]]، [[یعقوبی]] اور [[محمد بن یعقوب الکلینی]] وغیرہ نے ان کا ذکر نویں صدی میں جا کر شہربانو اور اس کے شاہی فارسی پس منظر کی نشاندہی کرنا شروع کی۔ تاہم، ابتدائی ماخذ نے علی ابن حسین کی والدہ کا کوئی ذکر نہیں کیا، اور نہ ہی وہ ان کی والدہ کا کوئی شاہی نسب منسوب کرتے ہیں۔ اس کی بجائے نویں صدی میں پہلی بار ان کا ذکر سندھ سے لائی گئی قیدی کی حیثیت سے [[ابن سعد بغدادی]] اور [[ابن قتیبہ دینوری]] نے کیا ہے۔ [[دائرۃ المعارف ایرانیکا]] میں اس پر زور دیا گیا کہ شہربانو بلا شبہ افسانوی شخصیت ہے۔<ref name=Iranica />
 
== حوالہ جات ==