"خواجہ محمد اکرام الدین" کے نسخوں کے درمیان فرق

کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
ڈاکٹر خواجہ محمد اکرام الدین [[بھارت]] کے دارالحکومت [[نئی دہلی]] میں واقع [[جواہر لعل نہرو یونیورسٹی]] کے سینٹر آف انڈین لینگویجز، اسکول آف لینگویج، لٹریچر اینڈ کلچر اسٹڈیز میں [[اردو]] کے پروفیسر ہیں۔ اردو زبان و ادب کے خدما ت کے حوالے سے وہ بین الاقوامی شہرت کے حامل ہیں۔ وہ 23 کتابوں کے مصنف ہیں۔ ان کی چند کتابوں کے کئی ایڈیشن شائع ہوچکے ہیں۔ان کی اکثر کتابیں ہندستان اور بیرون ممالک یونیورسٹیوں میں میں شامل نصاب ہیں۔ پروفیسر خواجہ محمد اکرام الدین کوان کی علمی و ادبی کارکردگی کے عوض کئی ملکی اور بین الاقوامی اعزازات و انعامات مل چکے ہیں۔جن میں [[جاپان]]، [[ڈنمارک]]، [[جرمنی]] اور [[ترکی]] کے علاوہ [[بھارت]] کے مختلف علمی وادبی اداروں کے نام شامل ہیں۔
 
== ولادت اور تعلیم ==
ان کی ولادت 25 دسمبر 1964ء کو [[بھارت]] ریاست [[جھارکھنڈ]] کے مقاموں میں ہوئی۔ انہوں نے مختلف کالج اور جامعات سے اردو میں بی اے، ایم اے، ایم فل کی ڈگری حاصل کی۔ ماس میڈیا میں ایڈوانڈ ڈپلوما کے ساتھ انہوں نے اردو زبان و ادب میں [[پی ایچ ڈی]] کی ڈگری بھی حاصل کی۔ انہیں اردو کے علاوہ [[انگریزی]]، [[ہندی]]، [[عربی]] اور [[فارسی]] زبان میں دسترس ہے۔ انہیں اردو تنقید، اردو ٹکنالوجی اور جدید ٹکنالوجی میں خاصی دلچسپی ہے۔ انہوں نے اردو کو جدید ٹکنالوجی سے جوڑنے کے لئے نمایاں اقدامات کیے ہیں۔
 
پروفیسر خواجہ محمد اکرام الدین تین سال تک [[قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان]]، وزرات برائے فروغ انسانی وسائل، حکومت ہند میں ڈائریکٹر کے عہدے پر فائز رہے۔ اپنے ڈائریکٹر شپ کے دوران میں انھوں نے قومی کونسل کی کارکردگیوں میں نئی اسکیموں کے نفاذ سے قابل قدر اضافہ کیا۔ انہی کی مدت کار میں کونسل سے بچوں کا ماہنامہ ’’ بچوں کی دنیا‘‘ کا اجرا ہوا اور ’’ عالمی اردو کانفرنس ‘‘ کی بنیاد پڑی۔ انھوں نے اردو کو نئی ٹکنالوجی سے جوڑکر اردو کے فروغ کے امکانات کو وسیع کیا۔کئی اردو سوفٹ وئیر کو لانچ کیا ساتھ ہی ٹکنالوجی کو اردو سے ہم آہنگ کرنے کی سمت کئی اہم اقدامات کیے۔
 
=== ڈیجٹل ٹکنالوجی کے میدان میں خدمات ===
 
# قومی کونسل کے عہدہٴ ڈائریکٹر کے دوران میں اردو کو نئی ٹکنالوجی سے جوڑنے کی سمت میں اقدامات کرتے ہوئے منسٹری آف انفارمیشن ٹکنالوجی کے ساتھ اشتراک کر کے مندرجہ ذیل امور کی انجام دہی کی ؛
# آن لائن اردو لرننگ پروگرام 21 جون 2012 میں سی آئی ایل میسور کے اشتارک سے۔ لانچ کیا
# آئی ٹی منسٹری کے اشتراک سے اردو انڈیا کی بورڈ برائے ونڈو اور انراؤڈ لانچ کیا
# آئی ٹی منسٹری کے اشتراک سے اردو کے بارہ نسخ فونٹ اور ایک۔ نستعلیق فونٹ کا اجرا کیا
# سی ڈیک کے اشتراک سے اردو پیڈیا ( (www.urdupedia.in کا آغاز کیا
# سی ڈیک کے اشتراک سے قومی کونسل کی کتابوں کو ڈیجٹلائز کیا
# قومی کونسل کے تحت آن لائن اردو ڈیجٹل لائبریری کا اجرا کیا
# ڈریم( Diploma in Repair of Electronic Appliances and Maintenance) کا آغاز کیا۔
# کشمیر کی صنعت کو فروغ دینے کے لیے" پیپر ماشی "کورس کو آغاز کیا۔
# قومی کونسل کے سینٹر کی آن لائن مانیٹرنگ کے لیے سوفٹ وئیر لانچ کیا۔
 
اردو کے نئے امکانات کی تلاش میں و ہ مستقل سر گرم رہے ہیں اسی لیے کونسل کی مدت کار کے اختتام کے بعد بھی وہ اس سمت میں کام کرتے رہے۔دنیا بھر میں موجود اردو سیکھنے والوں کے لیے انھوں نے چندبرس قبل آن لائن ارود لرنگ) (www.onlineurdulearning.com کا پروگرام شروع کیاجسے دنیا بھر میں مقبولیت حاصل ہوئی۔