"ناموسی قتل" کے نسخوں کے درمیان فرق

م
خودکار: اضافہ زمرہ جات +ترتیب (14.9 core): + زمرہ:قتل بلحاظ قسم
م (خودکار: اضافہ زمرہ جات +ترتیب (14.9 core): + زمرہ:قتل بلحاظ قسم)
[[فائل:Honorkilling.jpg|تصغیر|عالمی سطح پر ناموسی قتل کے معاملوں کا جائزہ لیتی ایک کتاب]]
ہرسال دنیا کے 31 سے زائد ممالک میں ہزاروں عورتوں کو ان ہی کے عزیز و اقارب کی جانب سے خاندان کی عزت و آبرو کے تحفظ کے نام پر قتل کیا جاتا ہے۔ قاتلوں کا ایقان ہوتا ہے کہ ان کی شناخت خاندان کے نام و شہرت سے جڑی ہے۔ اس کی وجہ سے جب بھی خاندان کو بدنامی کا اندیشہ ہوتا ہے، رشتے دار قاتل بنتے ہیں۔ وہ قتل ہی کو صورت حال کا واحد حل تصور کرتے ہیں۔ یہ رسم [[بھارت]]، [[پاکستان]] اور [[عرب]] ممالک میں بہت حد تک پھیلی ہوئی ہے۔
 
* 4 جنوری [[2005ء]] صدر جنرل [[پرویز مشرف]] نے کاروکاری کے انسداد کے قانون پر دستخط کیے ۔
 
[[زمرہ:ناموسی قتل|ناموسی قتل]]
[[زمرہ:ایل جی بی ٹی افراد کے خلاف تشدد]]
[[زمرہ:خواتین کے خلاف تشدد]]
[[زمرہ:عدل و انصاف]]
[[زمرہ:قانونی تاریخ]]
[[زمرہ:قتل بلحاظ قسم]]
[[زمرہ:گھریلو تشدد]]
[[زمرہ:مبنی بر جنس تشدد]]