"استرداد" کے نسخوں کے درمیان فرق

3,288 بائٹ کا اضافہ ،  2 سال پہلے
م
کوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
مکوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
'''استرداد''' ([[ہسپانوی]]:Reconquista اور [[انگریزی زبان|انگریزی]]: Reconquest) مسیحیوں کی ساڑھے سات سو سال طویل ان کوششوں کو کہا جاتا ہے جو انہوں نے [[جزیرہ نما آئبیریا]] سے مسلمانوں کو نکالنے اور ان کی حکومت کے خاتمے کے لیے کیں۔ 8 ویں صدی میں [[خلافت امویہ|بنو امیہ]] کے ہاتھوں [[ہسپانیہ|اسپین]] کی فتح کے بعد استرداد کا آغاز 722ء میں [[معرکہ کوواڈونگا]] سے جبکہ اختتام 1492ء میں [[سقوط غرناطہ]] کے ساتھ ہوا۔
 
1236ء میں [[محمد بن الاحمر]] کی زیر قیادت اسپین میں مسلمانوں کے آخری مضبوط گڑھ [[امارت غرناطہ|غرناطہ]] کو [[مملکت قشتالہ|قشتالہ]] کےکی مملکت کی [[ازابیلا اول|ملکہ]] کا خاوند [[فرڈیننڈ سوم]] کے ہاتھوں شکست ہوئی اور غرناطہ اگلے 250 سالوں تک مسیحی سلطنت کا باجگذار بنا رہا۔ [[2 جنوری]] 1492ء کو آخری مسلم حکمران [[ابو عبداللہ محمد]] نے [[فرڈیننڈ دوم ارغونی|فرڈیننڈ]] اور [[ازابیلا اول|ملکہ آئزابیلا]] کے سامنے ہتھیار ڈال دیے۔ جس کے نتیجے میں متحدہ [[رومن کیتھولک]] قوم وجود میں آئی۔
 
پرتگیزی استرداد 1249ء میں [[افونسو سوم]] کی جانب سے [[الغرب]] کی شکست کے ساتھ اختتام کو پہنچا۔
 
=== تاریخ ===
جب گیارویں صدی عیسوی کے اوائل میں [[خلافت قرطبہ|خلافتِ قرطبہ]] کا زوال ہوا تو چھوٹی چھوٹی جانشین ریاستوں کا ایک سلسلہ سامنے آیا جس کو طوائف الملوکی جانا جاتا تھا۔ شمالی [[کاتھولک کلیسیا|مسیحی]] ریاستوں نے اس صورتحال کا فائدہ اٹھایا اور [[اندلسی عربی|اندلس]] کی طرف پڑ گئے۔ انہوں نے خانہ جنگی کو فروغ دیا ، کمزور طائفہ جات کو ڈرایا ، اور انھیں تحفظ دلانے کے لئے مسلمانوں سے بڑے بڑے محصول جمع کئے ۔
[[فائل:GeraldoGeraldesSemPavor.jpg|تصغیر|’جیرالڈ بیباک والا‘ جو مہمِ استرداد کے زمانے کا [[پرتگال|پرتگالی]] مسیحی جنگجو اور مقامی ہیرو تھا جس کا جنوبی [[پرتگال]] کا شہر ایوورا میں واقع ایک مجسمہ موجود ہے جس سے وہ کسی مسلمان کا بریدہ سر اپنے ہاتھ میں اٹھا کر اپنی دلیری کی نمائش کرتے ہوئے نظر آتا ہے۔]]
 
 
بارویں صدی عیسوی میں ایک مسلم بغاوت کے بعد ، جنوبی [[جزیرہ نما آئبیریا|جزیرہ نما آبیریا]] میں مسلمانوں کے عظیم شہروں ایک کے بعد ایک تیرویں صدی میں [[معرکہ العقاب|معرکۂ عقاب]] (1212ء) کو ہارنے کے بعد ، سب مسیحیوں کے قبضے میں آئے۔ [[قرطبہ]] 1232ء میں، [[اشبیلیہ|اشبلیہ]] 1248 میں مسیحی عساکر نے تسخیر کی۔ مسلمانوں کے قبضے میں صرف جنوب میں ایک ہی کمزورمحصول گزار ریاست [[امارت غرناطہ|مملکتِ غرناطہ]] رہ گیا تھا جو ڈھائی سو سال تک آزاد رہا۔
 
۔ 1491 [[سقوط غرناطہ|سقوطِ غرناطہ]] کے بعد ، تمام [[جزیرہ نما آئبیریا|جزیرہ نما آبیریا]] میں مسیحی حکمرانوں کے زیر کنٹرول تھا۔ اس قبضے کے بعد سلسلہ وار (1499–1526) [[کاتھولک کلیسیا|کلیسا]] نے [[ہسپانیہ]] کے [[ہسپانیہ میں اسلام|مسلمانوں]] کو مذہبی تبدیلی پر مجبور کیا گیا ، جنہیں بعد میں 1609 میں شاہ فلپ سوم کے فرمانوں کے ذریعہ [[یورپ]] کا [[جزیرہ نما آئبیریا|جزیرہ نما آبیریا]] سے سب کے سب [[شمالی افریقا|شمالی افریقہ]] کی طرف بے دخل کردیے گئے۔
 
== مزید دیکھیے ==
 
* [[اندلس]]
 
* [[فتح اندلس|فتحِ اندلس]]
 
* [[اندلس کی اموی خلافت|اندلس میں اموی خلافت]]
* [[مملکت قشتالہ|قشتالہ کی مملکت]]
* [[مملکت آراگون|آراغون کی مملکت]]
* [[مملکت پرتگال|پرتگال]] کی [[مملکت پرتگال|مملکت]]
* [[سقوط غرناطہ]]
{{نامکمل}}
{{زمرہ کومنز|Reconquista}}
767

ترامیم