"امام قلی خان" کے نسخوں کے درمیان فرق

521 بائٹ کا اضافہ ،  11 مہینے پہلے
کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
اپنی زندگی کے آخری سالوں میں ، امام قلی خان کو ناقص نظر آنے لگے اور [[1642ء|1642 میں]] انہوں نے اپنے بھائی نادر محمد ( [[1642ء|1642]] - [[1645ء|1645]] ) کے حق میں تخت ترک کردیا اور [[حج]] پر چلے گئے۔ نادر دیوان بیگی امامقلی خان کے ساتھ سفر پر تشریف لے گئے۔ امام قلی خان ایران کے صفوی شاہ تشریف لائے ، جہاں مقامی مصور معین موسویویر نے ان کی تصویر کشی کی۔
 
امام قلی خان [[1644ء|1644]] میں [[مکہ]] میں فوت ہوئے اور [[مدینہ منورہ|مدینہ]] میں دفن ہوئے۔ کچھ ذرائع کے مطابق ، خان کے اعزاز میں یادگار نماز (جنازہ) میں 600 ہزار عازمین شریک ہوئے۔
امام قلی خان اور نادر محمد دو بھاہی تھے ان کے ولددین محمد ولد جانی بیگ ولداوزبیک خان ولدتوغریلچہ ولد منگو تیمور یہ تین بھاہی تھے .ان کے ولد ہلاکو خان چار بھاہی تھے اور یہ تولی خان کے بیتے تھے تولی خان چار بھاہی تھے اور یہ چنگیز خان کے بیتے تھے
*امام قلی خان کے دو بیتے تھے نور قلی اور منگو خان
 
== نوٹ ==
گمنام صارف