"اوڈیشا" کے نسخوں کے درمیان فرق

50 بائٹ کا اضافہ ،  1 مہینہ پہلے
درستی
(ٹیگ: Reverted)
(درستی)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم ایڈوانسڈ موبائل ترمیم)
 
{{خانہ معلومات شہر/عربی|}}
اوڈیشا {{دیگر نام|انگریزی= Odisha<ref>{{https://www.collinsdictionary.com/dictionary/english/odisha }}</ref>، سابقہ نام: ​​اڑیسہ}} بھارت کی ایک [[بھارت کی ریاستیں اور یونین علاقے|ریاست]] جو [[مشرقی ہند]] میں واقع ہے۔ یہ [[رقبہ]] کے لحاظ سے [[بھارت]] کی آٹھویں اور [[آبادی]] کے لحاظ سے گیارھویں بڑی ریاست ہے۔ نیز اس ریاست میں [[بھارت کے درج فہرست قبائل]] کی تیسری بڑی آبادی ہے۔<ref>{{https://web.archive.org/web/20180901131912/http://www.stscodisha.gov.in/Aboutus.asp?GL=abt&PL=1}}</ref> اس کی سرحدیں [[شمال]] میں [[بنگال]] کے کچھ حصوں اور [[جھارکھنڈ]] سے، [[مغرب]] میں [[چھتیس گڑھ]] سے اور [[جنوب]] میں [[آندھرا پردیش]] کی ریاستوں سے ملتی ہیں۔ اوڈیشا کی [[ساحلی پٹی]] [[خلیج بنگال]] پر 485 کلومیٹر (301 میل) طویل ہے۔<ref>{{https://odishapolice.gov.in/?q=node/163}}</ref> اس علاقہ کو [[اتکلہ]] کے نام سے بھی جانا جاتا ہے اور [[بھارت]] کے [[قومی ترانہ]] "جن من گن" میں اس کا ذکر ملتا ہے۔<ref>{{https://www.researchgate.net/publication/306079514_Tagore_and_Jana_Gana_Mana}}</ref> اوڈیشا کی زبان [[اوڈیا]] ہے جو ہندوستان کی کلاسیکی زبانوں میں سے ایک ہے۔<ref>{{https://m.jagranjosh.com/current-affairs/cabinet-approved-odia-as-classical-language-1392954604-1}}</ref>
 
[[کلنگ]] کی قدیم [[سلطنت]] جس پر [[موریہ شہنشاہ]] [[اشوک]] نے حملہ کیا تھا (اور بعد میں بادشاہ [[کھاراویلا]] نے اسے دوبارہ حاصل کر لیا تھا) 261 قبل مسیح میں [[کلنگا جنگ]] کا نتیجہ تھی جو جدید دور کے اوڈیشا کی سرحدوں سے متصل ہے۔<ref name="autogenerated1">{{https://web.archive.org/web/20061112195307/http://www.orissa.gov.in/history1.htm}}</ref> [[برطانوی ہندوستانیہند|ہندوستان کی برطانوی حکومت]] نے اوڈیشا کی نئی سرحدوں کا [[حد بندی|تعین]] اس وقت کیا جب یکم اپریل 1936ء کو [[صوبہ اڑیسہ]] کا قیام عمل میں آیا، جساس میں [[اوڈیا]] بولنے والے [[صوبجات بہار و اڑیسہ]] کے اضلاع شامل تھے۔ <ref name="autogenerated1" /> یہاںاسی بنا پر یہاں یکم اپریل کا دن [[اُتکلہ دیبسہ]] کے طور پر منایا جاتا ہے۔<ref>{{https://m.timesofindia.com/city/lucknow/Utkala-Dibasa-hails-colours-flavours-of-Odisha/articleshow/33095967.cms}}</ref> کٹک کو [[اننتھ ورمن چوڈاگنگا]] نے تقریباً سنہ 1135ء میں اس خطہ کا [[دار الحکومت]] بنایا تھا۔<ref>{{https://books.google.co.in/books?id=PItbvfAvVggC&pg=PA17&redir_esc=y#v=onepage&q&f=false}}</ref> جس کے بعد 1948ء تک انگریزوں کے دور میں یہ شہر بہت سارے حکمرانوں کے دار الحکومت کے طور پر استعمال ہوتا رہا اور بعد ازاں [[بھونیشور]] اوڈیشا کا دار الحکومت بن گیا۔<ref>{{https://books.google.co.in/books?id=F2YSPiKbmHkC&pg=PA23&redir_esc=y#v=onepage&q&f=false }}</ref>
 
اوڈیشا کی [[معیشت]] [[مجموعی گھریلو پیداوار]] میں ₹5.33 لاکھ کروڑ (75 ارب امریکی ڈالر) کی ہے اور یوں [[بھارت]] کی سولھویں سب سے بڑی [[ریاستی معیشت]] ہے اور [[فی کس]] [[جی ڈی پی]] 116،614 (1،600 [[امریکی ڈالر]]) ہے۔<ref>{{https://www.prsindia.org/parliamenttrack/budgets/odisha-budget-analysis-2020-21}}</ref> بھارت کے [[انسانی ترقیاتی اشاریہ]] (2018 HDI) میں اوڈیشا تیئیسویں نمبر پر ہے۔ <ref>https://globaldatalab.org/shdi/shdi/?levels=1%2B4&interpolation=0&extrapolation=0&nearest_real=0&years=2018%2B2015%2B2010%2B2005}}</ref>