"کل یگ" کے نسخوں کے درمیان فرق

1 بائٹ کا ازالہ ،  6 مہینے پہلے
م
خودکار: درستی املا ← گذر؛ تزئینی تبدیلیاں
م (خودکار: درستی املا ← گذر؛ تزئینی تبدیلیاں)
 
== موجودہ کل یگ کا زمانہ اور استخراج نظامِ کل یگ ==
* مزید دیکھیے: '''[[ابو ریحان البیرونی]]'''، '''[[دواپر یگ]]'''، '''[[آریہ بھٹ]]'''، '''[[سوریا سدھانت]]'''، '''[[وادیٔ سندھ کی تہذیب]]'''، '''[[موئن جو دڑو]]'''
[[سوریا سدھانت]] کے مطابق کل یگ کی ابتدا اُس وقت ہوئی جب [[کرشن]] اِس دنیا سے [[وشنو لوک]] کی طرف منتقل ہوئے۔[[آریہ بھٹ]] کی تحقیق کے مطابق کل یگ کا آغاز [[18 فروری]] 3102 قبل مسیح کی نصف شب بارہ بجے سے ہوا۔[[آریہ بھٹ]] نے اپنی تقویم "آریابھاٹیا" [[499ء]] میں مکمل کی۔ اُس وقت کل یگ کے 3600 سال گزرگذر چکے تھے اور [[آریہ بھٹ]]<nowiki/>کی عمر 23 سال تھی۔[[آریہ بھٹ]] [[476ء]] میں پیدا ہوا تھا اور کل یگ کا 3577 واں سال تھا۔ اِس حساب سے کل یگ کا آغاز 3101 قبل مسیح سے ہوا (قبل مسیح کے سالوں میں شمسی سالوں کی تصحیح کے لیے ایک سال جمع کیا جاتا ہے۔ اور اِس حساب سے کل یگ کی ابتدا 3102 قبل مسیح سے ہوئی)۔ منجم کے ڈی آبھینکر کے مطابق کل یگ کا آغاز اُس وقت ہوا جب ہفت سیارگان ایک خط مستقیم میں کہکشاں میں واقع ہوئے۔ ایسا موقع ہزاروں سال بعد آتا ہے کہ جب ہفت سیارگان ایک ہی خط میں آ جائیں۔ [[وادیٔ سندھ کی تہذیب]] کے شہر [[موئن جو دڑو]] سے کھدائی کے دوران چند ایسی مہریں بھی دستیاب ہوئیں جن پر ہفت سیارگان کی یہ توجیہ مکمل انداز سے رقم کی گئی ہے۔ اِن مہروں سے فلکیاتی حساب سے تاریخ [[7 فروری]] 3104 قبل مسیح معلوم ہوتی ہے۔ اِسی طرز کا دوسرا ثبوت تحریری طور پر وردھ گرگ کی تقویم میں 500 قبل مسیح قبل کا ملتا ہے۔[[وید]] کے شارحین اور مفسرین نے بھی کل یگ کی تشریح و تفسیر کی ہے۔ [[بھکتی سدھانت گوسوامی]] کے مطابق دنیا اِس وقت کل یگ کے عہد میں ہے جو 432,000 سالوں پر محیط ہے۔ دوسرے شارحین [[وید]] کے مطابق ابھی دنیا [[دواپر یگ]] کے آخری عہد سے گزرگذر رہی ہے، اِن میں [[سوامی سری یکتسوار]] اور [[پرمہانسا یوگ نندا]] شامل ہیں۔ [[آریہ بھٹ]] کی تحقیق کے مطابق اب تک یعنی سال [[2017ء]] تک کل یگ کے 5119 سال گزرگذر چکے ہیں۔ مسلم منجم و ماہر فلکیات [[ابو ریحان البیرونی]] نے بھی کل یگ پر تحقیق پیش کی ہے۔
[[فائل:Kalki1790s.jpg|تصغیر|[[کلکی]] - [[1790ء]] کی تصویر]]
 
 
== مزید دیکھیے ==
* [[ہندو نظام زماں]]
* [[ہندو مذہبی دستاویزات میں اعداد کی فہرست]]
* [[ست یگ]]
111,622

ترامیم