"قصور" کے نسخوں کے درمیان فرق

9 بائٹ کا ازالہ ،  3 مہینے پہلے
←‏top: درستی املا, روابط شامل کیے
(←‏top: درستی املا)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل ترمیم از موبائل ایپ اینڈرائیڈ ایپ ترمیم)
(←‏top: درستی املا, روابط شامل کیے)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل ترمیم از موبائل ایپ اینڈرائیڈ ایپ ترمیم)
قصور کی تاریخ لاہور کے مقابلے میں اتنی پرانی نہیں ہے مگر یہ صدیوں سے لاہور شہر سے منسلک شہر ہے اس لیے [[لاہور]] سے بہت مشابہت رکھتا ہے، لاہور پاکستان کا دل ہے تو قصور اس کی آنکھ ہے۔
 
قصور شہر اپنی مزیدار مٹھائیوں اور مسالے دار مچھلی کی وجہ سے مشہور ہے، کھانے پینے کے حوالے سے قصوریوں کی حسِ ذائقہ نہایت قابلِ رشک ہے، ملک بھر میں قصوری [[فالودہ]] کی ایک جداگانہ شناخت ہونے کے ساتھ ساتھ قصوری اندرسا،اندرسہ، بھلے پکوڑیاں، اوجڑی اور ناشتے میں دہی [[کلچہ]] نہایت مرغوب سمجھے جاتے ہیں۔ ملن ساری،ملنساری، زندہ دلی اور محنت یہاں کے لوگوں کے امتیازی اوصاف ہیں۔
 
[[ہندوستان]] میں [[مغل سلطنت]] کے بانی [[ظہیرالدین بابر]] نے1526ء میں ہندوستان پر قبضہ کرنے کے بعد افغانوں کی خدمات کے صلے میں قصور کا علاقہ ان کو عنایت کر دیا ،یہاں پر زیادہ تر منظم حکومت [[افغانستان]] کے پٹھانوں کی رہی ہے جنہیں دہلی یا لاہور حکومت کی طرف سے مقرر کیا جاتا تھا لیکن وہ مقامی طور پر خود مختار حیثیت رکھتے تھے، کہا جاتا ہے کہ ساتویں صدی عیسوی میں [[چین]] کا ایک مشہور سیاح ہیون تسانگ یہاں پہنچا اور یہاں کے حالات بھی تحریر کیے، اس کی تحریر سے ہمیں آثار قدیمہ کے بارے میں بہت سی معلومات ملتی ہیں، اس سے قبل قصور کا تاریخی حوالے سے تذکرہ مفقود ہے۔
 
قصور کاکی [[گنڈا سنگھ والا]] باڈرسرحد مشہور ہے یہ انڈیا اور پاکستان کے بارڈر کو ملاتاملاتی ہے، اس کا تقسیم [[تقسیم ہند]] سے قبل قصور کے مضافاتی قصبات میں شمار ہوتا تھا۔ یہاں پر[[پاکستان]] اور[[بھارت]] کی مشترکہ پرچم کشائی کی تقاریب ہوتیں ہیں، جب کہ اس بارڈر کے دوسری طرف بھارت کا شہر [[فیروزپور]]ہے اسی طرح 1965ء کی پاک [[بھارت]] جنگ میں فتح ہونے والابھارتی شہر [[کھیم کرن]] بھی ہے یہاں پر ایک بڑی ٹینکوں کی جنگ کے مقام کی وجہ سے ٹینکوں کا قبرستان بھی کہا جاتا ہے۔
 
[[قصور جنکشن ریلوے اسٹیشن]] شہر کے [[شمال]] [[مغرب]] میں واقع ہے۔ تقسیم[[ہند]] سے پہلے قصور بذریعہ [[ریل]] [[امرتسر]]،[[فیروزپور]] سے ملا ہوا تھا مگر اب یہ [[ریلوے]]لائن ختم کر دی گئی ہے اور اس کا زیادہ تعلق بذریعہ [[سڑک]] اور [[ریل]] لاہور شہر سے قائم ہے، یہاں کی زیادہ تر نقل وحمل اور [[تجارت]] [[لاہور]] ہی سے منسلک ہے، لاہور سے [[کراچی]] جانے والے ریلوے ٹریک پر [[رائے ونڈ جنکشن ریلوے اسٹیشن]] سے قصور کے لیے ایک [[ریلوے لائن|ریلوے لائن علیحدہ]] ہوتی ہے جو قصور شہر سے گزرتی ہوئی براستہ [[کھڈیاں خاص]] اور[[کنگن پور]] [[ضلع قصور]] سے نکل کر [[لودھراں]] جا پہنچتی ہے، جبکہ 1910ء میں قصور سے [[لودھراں]] تک ریلوے ٹریک مکمل ہوا۔ اس کے علاوہ 1883ء میں [[رائے ونڈ]] سے [[گنڈا سنگھ والا]]تک ریلوے لائن بچھائی گئی۔ قصور شہر کے مشرقی حصے سے [[فیروزپور]] روڈ گزرتی ہے جو [[لاہور]] سے شروع ہو کر براستہ [[گنڈا سنگھ والا]] [[فیروزپور]] تک جاتی ہے، تقسیم[[ہند]] کے بعد یہ سڑک بین الاقوامی پاک [[بھارت]] سرحد تک محدود ہو کر رہ گئی ہے، یہ شاہراہ قصور شہر سے لاہور تک تقریباً 55 [[کلومیٹر]]اور بھارتی شہر [[فیروزپور]] تک 25 کلومیٹر ہے ۔
2,262

ترامیم