"جون ایلیا" کے نسخوں کے درمیان فرق

کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
م (r2.7.1) (روبالہ جمع: pnb:جون ایلیا)
جون اپنے لڑکپن میں بہت حساس تھے۔ ان دنوں ان کی کل ‏توجہ کا مرکز ایک خیالی محبوب کردار صوفیہ تھی، اور ان ‏کے غصے کا نشانہ متحدہ ہندوستان کے انگریز قابض تھے۔ وہ ‏ابتدائی مسلم دور کی ڈرامائی صورت میں دکھاتے تھے جس ‏وجہ سے ان کے اسلامی تاريخ کے علم کے بہت سے مداح ‏تھے۔ جون کے مطابق ان کی ابتدائی شاعری [[سٹیج ڈرامے]] کی ‏مکالماتی فطرت کا تاثر تھی۔
 
ایلیا کے ایک قریبی رفیق، سید ممتاز سعید، بتاتے ہیں کہ ایلیا ‏امروہہ کے سید المدارس کے بھی طالب علم رہے۔ یہ مدرسہ دارامروہہ ‏العلوم،میں دیوبنداہل تشیع حضرات کا ایک معتبر مذہبی مرکز رہا ہے۔چونکہ جون ایلیا خود شیعہ تھے اسلئے وہ اپنی شاعری میں جابجا شیعی حوالوں کا خوب استعمال کرتے تھے۔حضرت علی کی ذات مبارک سے منسلکانہیں خصوصی عقیدت تھی اور انہیں اپنی سیادت پر بھی ناز تھا۔تھا۔۔ سعید کہتے ہیں، "جون کو زبانوں ‏سے خصوصی لگاؤ تھا۔ وہ انہیں بغیر کوشش کے سیکھ لیتا تھا۔ ‏عربی اور فارسی کے علاوہ، جو انہوں نے مدرسہ میں سیکھی تھیں، ‏انہوں نے انگریزی اور جزوی طور پر عبرانی میں بہت مہارت ‏حاصل کر لی تھی۔"‏
 
===پاکستان آمد===
گمنام صارف