"گورنمنٹ کالج اوکاڑا" کے نسخوں کے درمیان فرق

م
==تاریخی پس منظر==
اوکاڑا شہر کی تاریخ میں عیسوی سال [[1958ء]] اس لحاظ سے اہمیت کا حامل ہے کہ اس سال اوکاڑا شہر کی عوام کی طویل جدوجہد اور ضلع انتظامیہ و میونسپل کمیٹی حکام کی کاوشوں کی بدولت علاقہ کی دیرینہ خواہش رنگ لائی اور ایم بی ہائی اسکول اوکاڑا (Municipal Board High School, Okara) کو ترقی دے کر کالج کا درجہ دیا گیا۔
کالج کا قیام، ضلع منٹگمری (موجودہ ضلع ساہی وال) کے اس وقت کے ڈپٹی کمشنر (ڈی سی) جناب اسلم فخر دین فاخر ایڈووکیٹ کی کاوشوں کا ثمر ہے۔ اگرچہ کالج کا سنگِ بنیاد مغربی پاکستان کے وزیر بلدیات، جناب مخدوم زادہ سید حسن محمود (مرحوم) نے [[30 اگست]] [[1958ء]] کو نصب فرمایا تھا اور باقاعدہ پڑھائی کا آغاز [[22 دسمبر]] [[1958ء]] سے ہوا جب کالج کے پہلے پرنسپل جناب عباس اختر شیخ (مرحوم) نے اپنے عہدے کا چارج سنبھالا۔<ref>http://gpcokara.blogspot.com/p/history.html</ref>
 
== فہرست نامور طلبا ==
2,020

ترامیم