"آصف شیخ (کرکٹر)" کے نسخوں کے درمیان فرق

91 بائٹ کا اضافہ ،  4 مہینے پہلے
م
کوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
آصف ایورسٹ پریمیئر لیگ میں پنچکنیا تیج کے لیے کھیلتے ہیں۔ انہوں نے 2016 ایورسٹ پریمیئر لیگ کے فائنل میں ناقابل شکست 111 رنز بنائے کیونکہ ان کی ٹیم نے پہلا ای پی ایل ٹائٹل جیتا تھا۔ وہ ٹورنامنٹ کے سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی تھے، جہاں انہوں نے چھ میچوں میں 44.00 کی اوسط سے 202 رنز بنائے۔ انہوں نے ہندوستان میں 2018 کے چوکور کرکٹ ٹورنامنٹ میں نیپالی انڈر 19 ٹیم کی قیادت کی۔ بعد میں، انہیں 2018 کے ACC انڈر 19 ایشیا کپ کے لیے نیپال کی قومی انڈر 19 کرکٹ ٹیم کا کپتان نامزد کیا گیا۔ وہ 2019 ACC انڈر 19 ایشیا کپ میں انڈر 19 ٹیم کے لیے بھی کھیلا۔ وہ 2021 کے پرائم منسٹر کپ میں دوسرے سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی تھے، جہاں انہوں نے پانچ اننگز میں 41.20 کی اوسط سے 206 رنز بنائے۔ انہیں قطر کے خلاف T20I سیریز کے لیے بند کیمپوں کے لیے 18 رکنی قومی ٹیم میں منتخب کیا گیا تھا لیکن قطر میں COVID-19 کے بڑھتے ہوئے کیسز کی وجہ سے بالآخر دورہ ملتوی کر دیا گیا۔ آصف کو بعد میں 2020-21 نیپال سہ ملکی سیریز کے لیے 15 رکنی قومی اسکواڈ میں منتخب کیا گیا اور نیدرلینڈز کے خلاف اپنا T20I ڈیبیو کیا۔ انہوں نے ناقابل شکست نصف سنچری بنائی اور ٹی ٹوئنٹی میں نیپال کے لیے پہلی وکٹ کی 116 رنز کی ریکارڈ ساز شراکت قائم کی جس نے اپنی ٹیم کو 9 وکٹوں سے فتح دلائی۔ انہوں نے ملائیشیا کے خلاف سیریز کے دوسرے میچ میں 42 رنز بنائے اور ساتھی اوپنر کشال بھرٹیل کے ساتھ ایک اور سنچری اسٹینڈ کا اشتراک کیا۔ انہوں نے سیریز میں 38.50 کی اوسط اور 138.73 کے اسٹرائیک ریٹ سے 154 رنز بنائے۔ اگست 2021 میں، آصف کو عمان میں پاپوا نیو گنی کے خلاف ان کی سیریز کے لیے نیپال کے ون ڈے انٹرنیشنل (ODI) اسکواڈ میں شامل کیا گیا تھا، اور 2019-2023 ICC کرکٹ ورلڈ کپ لیگ 2 ٹورنامنٹ کے راؤنڈ چھ کے لیے ان کا اسکواڈ بھی عمان میں تھا۔ اس نے اپنا ODI ڈیبیو 7 ستمبر 2021 کو نیپال کے لیے پاپوا نیو گنی کے خلاف کیا۔
[[زمرہ:نیپالی کرکٹ کھلاڑی]]
[[زمرہ:ویکی ڈیٹا سے مطابقت رکھنے والی مختصر تفصیل]]
264,135

ترامیم