"عثمانی ترک زبان" کے نسخوں کے درمیان فرق

م
Bot: Fixing redirects
م (r2.7.2+) (روبالہ ترمیم: fr:Turc ottoman)
م (Bot: Fixing redirects)
''عثمانی ترک زبان'' یا ''لسان عثمانی''، وہ [[ترک زبان]] ہے جو [[سلطنت عثمانیہ]] میں انتظامی و ادبی سطح پر بولی و پڑھی لکھی جاتی تھی۔ عثمانی ترک زبان میں [[عربی زبان|عربی]] اور [[فارسی]] کے ہزاروں الفاظ شامل تھے۔ یہ زبان عربی رسم الخط میں ہی لکھی جاتی تھی۔
 
سماجی و عملی طور پر اس کے کم از کم تین لہجے تھے جن میں
علاوہ ازیں تاریخی طور پر عثمانی ترک زبان پر تین اہم ادوار گذرے جن میں مندرجہ ذیل شامل ہیں:
 
''اسکی عثمانلی ترکش'' (قدیم عثمانی ترک): عثمانی ترک زبان کا یہ دور 16 ویں صدی تک رہا۔ یہ [[سلجوقی سلطنت|سلجوق]] اور [[اناطولیہ]] کے ترک قبائل کی زبان سے بہت زیادہ میل کھاتی تھی۔
 
''اورتا عثمانلی ترکش'' (وسطی عثمانی ترک): 16 ویں صدی سے [[دور تنظیمات]] تک کی شاعرانہ اور انتظامی زبان رہی۔
''ینی عثمانلی ترکش'' (جدید عثمانی ترک): صحافت اور مغربی ادب کے زیر اثر [[1850ء]] کی دہائی سے 20 ویں صدی تک تخلیق پانے والی زبان۔
 
[[پہلی جنگ عظیم|جنگ عظیم اول]] میں شکست کے بعد [[1928ء]] میں [[سلطنت عثمانیہ]] کا خاتمہ ہو گیا اور جدید [[ترکی|ترک جمہوری ریاست]] ظہور پذیر ہوئی۔ جس میں [[مصطفٰی کمال اتاترک]] نے بڑے پیمانے پر ترک زبان میں اصلاحات کا بیڑہ اٹھایا اور عربی اور فارسی کے الفاظ کو زبان سے خارج کر کے [[ترک زبان|ترکی زبان]] کے مختلف لہجوں کے الفاظ شامل کیے۔علاوہ ازیں عربی رسم الخط کا بھی خاتمہ کر دیاگیا اور اس کی جگہ نیا لاطینی رسم الخط رائج کیا گیا۔
 
عثمانی ترک زبان عثمانی ترک رسم الخط (الفبا) میں تحریر کی جاتی تھی جو عربی و فارسی سے متاثر ہو کر تخلیق کیا گیا۔