خالد احمد

بنگلہ دیشی کرکٹ کھلاڑی

سید خالد احمد (پیدائش: 20 ستمبر 1992ء) ایک بنگلہ دیشی کرکٹ کھلاڑی ہے۔ اس نے نومبر 2018ء میں بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے لیے اپنے ٹیسٹ کرکٹ کا آغاز کیا [1]

خالد احمد
ذاتی معلومات
مکمل نامسید خالد احمد
پیدائش (1992-09-20) 20 ستمبر 1992 (عمر 31 برس)
سلہٹ، بنگلہ دیش
بلے بازیدائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیدائیں ہاتھ کا فاسٹ میڈیم گیند باز
حیثیتگیند باز
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 92)11 نومبر 2018  بمقابلہ  زمبابوے
آخری ٹیسٹ24 جون 2022  بمقابلہ  ویسٹ انڈیز
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
2015–سلہٹ ڈویژن
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ فرسٹ کلاس لسٹ اے ٹوئنٹی20
میچ 20 22 5
رنز بنائے 134 1 8
بیٹنگ اوسط 8.93 0.25
سنچریاں/ففٹیاں 0/0 0/0 0/0
ٹاپ اسکور 26 1* 8*
گیندیں کرائیں 2551 1058 72
وکٹیں 48 34 2
بولنگ اوسط 31.04 28.55 63
اننگز میں 5 وکٹ 3 0 0
میچ میں 10 وکٹ 1 0 0
بہترین بولنگ 5/44 4/42 2/34
کیچ/سٹمپ 12/– 4/– 0/–
ماخذ: ای ایس پی این کرک انفو، 24 جون 2022ء

ڈومیسٹک کیریئر

ترمیم

احمد نے 10 اکتوبر 2015ء کو 2015-16ء نیشنل کرکٹ لیگ میں سلہٹ ڈویژن کے لیے اپنا فرسٹ کلاس ڈیبیو کیا۔ [2] اس نے 5 مئی 2017ء کو 2016-17ء ڈھاکہ پریمیئر ڈویژن کرکٹ لیگ میں پرائم ڈولیشور اسپورٹنگ کلب کے لیے اپنا لسٹ اے ڈیبیو کیا [3] اس نے اپنا ٹوئنٹی 20 ڈیبیو ڈھاکہ ڈائنامائٹس کے لیے 5 نومبر 2017ء کو 2017–18ء بنگلہ دیش پریمیئر لیگ میں کیا۔ [4] اکتوبر 2018ء میں 2018-19ء نیشنل کرکٹ لیگ میں ڈھاکہ میٹروپولیس کے خلاف میچ میں اس نے فرسٹ کلاس کرکٹ میں اپنی پہلی دس وکٹیں حاصل کیں ۔ [5] اسی مہینے کے آخر میں اسے 2018-19ء بنگلہ دیش پریمیئر لیگ کے ڈرافٹ کے بعد چٹاگانگ وائکنگز ٹیم کے سکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [6]

بین الاقوامی کیریئر

ترمیم

اگست 2018ء میں احمد 2018ء ایشیا کپ سے قبل بنگلہ دیش کے لیے 31 رکنی ابتدائی سکواڈ کے لیے منتخب کیے جانے والے بارہ ڈیبیو کرنے والوں میں سے ایک تھے۔ [7] اکتوبر 2018ء میں انھیں زمبابوے کے خلاف سیریز کے لیے بنگلہ دیش کے ٹیسٹ سکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [8] انھوں نے 11 نومبر 2018ء کو زمبابوے کے خلاف بنگلہ دیش کے لیے اپنا ڈیبیو کیا [9] دسمبر 2018ء میں اسے 2018ء کے ACC ایمرجنگ ٹیمز ایشیا کپ کے لیے بنگلہ دیش کی ٹیم میں شامل کیا گیا۔ [10] فروری 2021ء میں انھیں آئرلینڈ وولوز کے خلاف ان کی ہوم سیریز میں بنگلہ دیش ایمرجنگ ٹیم کھیلنے کے لیے منتخب کیا گیا تھا۔ [11] اپریل 2021ء میں انھیں سری لنکا کے خلاف سیریز کے لیے بنگلہ دیش کے ابتدائی ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [12] [13] مارچ 2022ء میں انھیں جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز کے لیے بنگلہ دیش کے ایک روزہ بین الاقوامی سکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [14] جون 2022ء میں ویسٹ انڈیز کے خلاف دوسرے میچ میں خالد نے ٹیسٹ کرکٹ میں اپنی پہلی پانچ وکٹیں حاصل کیں ۔ [15]

حوالہ جات

ترمیم
  1. "Khaled Ahmed"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 02 جنوری 2017 
  2. "National Cricket League, Tier 2: Rajshahi Division v Sylhet Division at Bogra, Oct 10-13, 2015"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 02 جنوری 2017 
  3. "Dhaka Premier Division Cricket League, Prime Doleshwar Sporting Club v Mohammedan Sporting Club at Fatullah, May 5, 2017"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 مئی 2017 
  4. "4th match (N), Bangladesh Premier League at Sylhet, Nov 5 2017"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 نومبر 2017 
  5. "Two nail-biters and a Mominul Haque century"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 اکتوبر 2018 
  6. "Full players list of the teams following Players Draft of BPL T20 2018-19"۔ Bangladesh Cricket Board۔ 28 مارچ 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 اکتوبر 2018 
  7. "Liton Das recalled as Bangladesh reveal preliminary squad for Asia Cup 2018"۔ International Cricket Council۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 اگست 2018 
  8. "Bangladesh hand Nazmul, Mithun maiden Test call-ups"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 اکتوبر 2018 
  9. "2nd Test, Zimbabwe tour of Bangladesh at Dhaka, Nov 11-15 2018"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 نومبر 2018 
  10. "Media Release : ACC Emerging Teams Asia Cup 2018: Bangladesh emerging squad announced"۔ Bangladesh Cricket Board۔ 03 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2018 
  11. "Ireland Wolves tour of Bangladesh to start with four-day game in Chattogram"۔ ESPNcricinfo (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 اپریل 2021 
  12. "Media Release : Bangladesh Preliminary Squad for Tour of Sri Lanka 2021 announced"۔ Bangladesh Cricket Board۔ 10 مارچ 2022 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 اپریل 2021 
  13. "Bangladesh include uncapped pace trio for Sri Lanka Tests"۔ International Cricket Council۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 اپریل 2021 
  14. "Shakib Al Hasan, Tamim Iqbal back in Bangladesh Test squad"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 03 مارچ 2022 
  15. "Khaled grabs maiden fifer as Windies all out for 408"۔ The Daily Star۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جون 2022