درس نظامی ملا نظام الدین محمد سہالوی سے منسوب طریقۂ تدریس و نصاب، نصاب تعلیم و نظام تدریس جو ملا نظام الدین نے مشرق کی دینی درسگاہوں کے لیے تیار کیا تھا۔[1] علومِ اسلامیہ پر مشتمل آٹھ سالہ مرو جہ کورس جو تقریبًا تمام مکاتب فکر میں رائج ہے۔ اسے عالم کورس بھی کہا جاتا ہے ۔

بانی درس نظامیترميم

درس نظامی کے بانی ملا نظام الدین سہالوی لکھنوی تھے جن کا مرکز فرنگی محل لکھنوٴ تھا۔ درس نظامی کے نام سے جو نصاب آج تمام مدارس عربیہ میں رائج ہے وہ ان ہی کی یاد گار ہے۔ ملا نظام الدین نے دور سوم کے نصاب میں اضافہ کر کے ایک نیا نصاب مرتب کیااور اس دور میں پڑھائی جانے والی کتابوں کو حتی الامکان جمع کرنے کی کوشش کی۔ درس نظامی میں تیرہ موضوعات کی تقریباً چالیس کتابیں پڑھائی جاتی تھیں۔ فقہ اور اصول فقہ کے ساتھ، تفسیر میں جلالین و بیضاوی اور حدیث میں مشکوة المصابیح داخل تھی۔ انھوں نے ریاضی اور فلکیات کی کئی کتابیں اور ہندسہ (انجینئری) پر بھی ایک کتاب شامل نصاب کی۔ اس میں طب، تصوف اور ادب کی کوئی کتاب شامل نہیں تھی اور منطق و فلسفہ کو خاصی جگہ دی گئی۔[2]

نصاب درس نظامیترميم

ملا نظام الدین کا بنایا ہوا نصاب درس نظامی مندرجہ ذیل ہے

1۔ صرفترميم

میزان، منشعب،صرف میر، پنج گنج،زبدہ، فصول اکبری،شافیہ-

2۔ نحوترميم

نحو میر، مائۃ عامل،ہدایۃ النحو، کافیہ،شرح جامی۔

3۔ منطقترميم

صغریٰ، کبریٰ ،ایساغوجی،تہذیب، شرح تہذیب،قطبی مع میر قطبی،سلم العلوم۔

4۔ حکمتترميم

میبذی،صدرا، شمس بازغ ہ

5۔ ریاضیترميم

خلاصۃ الحساب،تحریر اقلیدس(مقالہ اول)،تشریح الافلاک،رسالہ قوشجیہ، شرح چغمینی(باب اول)

6۔ بلاغتترميم

مختصر المعانی مطول تا انا قلت

7۔ فقہترميم

شرح وقایہ، ہدایہ اولین، ہدایہ آخرین کنز الدقائق مختصر القدوری

8۔ اصول فقہترميم

نور الانوار، توضیح تلویح، اصول الشاشی حسامی

9۔ کلامترميم

شرح عقائد نسفی، شرح عقائد جالی،میر زاہد، شرح مواقف

10۔ تفسیرترميم

تفسیر جلالین، تفسیر بیضاوی

11۔ حدیثترميم

مشکوۃ المصابیح [3]

دور جدیدترميم

موجودہ دور میں اس میں چند تبدیلیوں کے ساتھ درس نظا می (عالم کورس) کا مکمل نصاب جس کے بورڈ تنظیم المدارس وفاق المدارس رابطۃ المدارس وفاق المدارس السلفیہ، وفاق المدارس الشیعیہ،کے نام پر پاکستان بورڈسے منسلک ہے، جس کی سند یو نیور سٹی گرانٹس کمیشن (University Grants Commission) نے ایم اے عربی و اسلامیات کے مساوی قراردی ہے یہ نصاب حکومت پاکستان سے منظور شدہ ہے جس میں قرآن و حدیث ،ترجمہ و تفسیر،فقہ،اصول فقہ،عربی زبان و ادب اور گرامر اور دیگر تحریکی و دینی کتب پڑھائی جاتی ہیں۔

حوالہ جاتترميم

  1. اردو لغت - Urdu Lughat - درس نظامی
  2. ہندوستان میں مسلمانوں کا نصاب تعلیم
  3. تعریفات علوم درسیہ،صفحہ 241،مفتی محمد عبد اللہ قادری،والضحیٰ پبلیکیشنز لاہور

درس نظامی آفیشل