سبھاش چندر بوس کی موت

سبھاش چندر بوس کی موت (انگریزی: Death of Subhas Chandra Bose) ابھی تک ایک معما ہے۔ سبھاش چندر بوس تحریک آزادیٔ ہند کے قائدوں میں سے تھے۔کہا جاتا ہے کہ ان کی موت 1945 میں تائیوان میں ایک فضائی حادثہ میں واقع ہوئی تھی، لیکن ان کے اہل خاندان اور بہت سے مورخین یہ ماننے کو تیار نہیں۔ یہ ہی سبب ہے کہ آج تک اس پر بحث جاری ہے کہ ان کی موت کب اور کن حالات میں ہوئی۔جولوگ یہ مانتے ہیں کہ تائیوان میں سبھاش چندر بوس کی موت نہیں ہوئی تھی، ان کا خیال ہے کہ یا تو وہ روس میں قید تھے یا پھر اتحادی افواج سے بچنے کے لیے روپوش ہوگئے تھے۔

بہت سے لوگوں کا خیال ہے کہ وہ آزادی کے بعد ہندوستان واپس آگئے تھے اور انہوں نے اپنی باقی زندگی ایک سادھو بن کر گزاری۔[1]




مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم