عرق ناپنے کا ایک پیمانہ

معنیترميم

کجھور کے پتوں کی چوٹی جسے مکتل،زبیل اور زنبیل (ٹوکرا) کہا جاتا ہے

صاع اور عرقترميم

فقہا کی اصطلاح میں 15 صاع کی گنجائش کے پیمانے کو فرق کہا جاتا ہے

استعمالترميم

فقہا عرق کو کسی شرعی حکم میں معیار قرار نہیں دیتے البتہ اس کا استعمال کبھی کبھی اس لحاظ سے کرتے ہیں کہ یہ صاع سے کئی گنا بڑا ہوتا ہے ۔[1]

حوالہ جاتترميم

  1. موسوعہ فقہیہ ،جلد38 صفحہ 321، وزارت اوقاف کویت، اسلامک فقہ اکیڈمی انڈیا