علوی اعوان آف بیروٹ

علوی اعوان آف بیروٹ ضلع ایبٹ آباد پاکستان کا اہم قبیلہ ہے اور اس کے اپنے علاقہ میں مذہبی اور روحانی اثرات ہیں،علوی اعوان آف بیروٹ سرکل بکوٹ بالعموم اور یونین کونسل بیروٹ بالخصوص کا گزشتہ ڈیڑھ صدی سے دینی و دنیاوی تعلیمی خدمات اور روحانی اقدار کو سر بلند کرنے والا اہم مگر مختصر ترین قبیلہ ہے۔ اس کا تعلق قومی کوٹ، ضلع مظفر آباد آزاد کشمی رہے جس کے بزرگ میاں نیک محمد علوی اعوان بیروٹ کے کامل آل ڈھونڈ عباسی قبیلہ کی دعوت پر 1838ء بیروٹ تشریف لائے اور یہاں پ رہی ان کی اولاد پھلی پھولی،دین کی خدمات کی اس پونی دو صدیوں میں بیروٹ کے علوی اعوانوں نے اپنے مربیوں کامل آل برادری کو کسی قسم کی کوئی اخلاقی یا مفاداتی ٹھیس پہنچائی ہے نہ انہوں نے خدمت میں کوئی کسر اٹھا رکھی ہے بلکہ ان خدمات کے عوض 32 کنال اراضی بھی ہبہ کی ہے جو مالکانہ حقوق کے ساتھ اس قبیلہ کے پاس ہے۔ یونین کونسل بیروٹ میں علوی اعوان قبیلہ کی دو شاخیں ہیں جن میں اولاً نیک محمدآل اور ثانیاً نور محمدآل شامل ہیں۔ نیک محمدآل بیروٹ کے مغرب میں جبکہ نور محمدآل مشرق میں آباد ہیں، تعلیمی، روحانی، دینی اور عددی اعتبار سے نیک محمدآل فائق ہیں جبکہ نور محمدآل ٹیکنیکل ہینڈ ہیں۔ معروف سکالر محمد عبید اللہ علوی کا تعلق نیک محمدآل جبکہ ڈھونڈی زبان میں سیرت النبی کی پہلی کتاب کے خالق محبت حسین اعوان کا تعلق نور محمدآل سے ہے۔ علوی اعوان قبیلہ کا یہ اعزاز ہے کہ ان کے جد امجد میاں نیک محمد علوی نے بیروٹ میں دوسری مسجد اور قرآنی مدرسہ کی 1840ء میں بنیاد رکھی اور ان کی اولاد 1990ء تک یہاں تعلیم و تدریس کا فریضہ سر انجام دیتی رہی ہے۔ اس قبیلہ کے بزرگوں میاں نیک محمد علوی کے بعد میاں عبد العزیز علوی،میاں غلام رسول علوی، میاں شرف دین علوی اور میاں اکبردین علوی کی بڑی خدمات ہیں،اس جنریشن کے بعد میاں میر جی علوی، میاں محمد جی علوی، ان کی اولاد میں سے میاں یعقوب علوی بیروٹوی (کوہسار کے عربی، فارسی اور اردوکے پہلے شاعر اور استاد)،میاں محمداسماعیل علوی(بیروٹ کے پہلے ٹیچر اور میاں پیر فقیراللہ بکوٹی عثمانی کے خلیفہ مجاز)، میاں محمد عبد اللہ علوی، مفتی سرکل بکوٹ میاں محمد عبد الہادی علوی اور شاہد اسلام علوی نے دینی اور ملی خدمات اپنے آخری سانس تک نبھائیں۔ مولوی شعیب صاحب جنکا تعلق نور محمد ال سے ہے و ہ تبلیغی جماعت کے بانی ہیں۔ اور ان کے بھائی عبد الغفوراعوان بیروٹ کے چند ان لوگوں میں شامل ہیں جنہوں نے پیدل ایک سال تبلیغ میں لگایاہے .مولانا طاہرعقیل اعوان ان کا تعلق بھی نور محمد ال سے ہے فاضل بنوری ٹاون کراچی اور اس خاندان کے پہلے حافظ قرآن اور پہلے خطیب ہیں 2013 کے انتخابات میں متحدہ دینی محاذ۔ کے ٹکٹ پر حلقہ این اے 54سے قومی اسمبلی کا الیکشن بھی لڑ ے ہیں .پاکستان علما کونسل اسلام آباد کے سیکرٹری جنرل ہیں۔

علوی اعوانوں کی خدماتترميم

1838 میں مسجد اور مدرسہ کے قیام کے بعد میاں نیک محمد علوی کی اولاد نے یہاں ایک ایسے پاکیزہ، غیر متعصب اور روح پرور ماحول کی بنیاد رکھی جس نے سکھ اور ڈوگرہ ظلم و ستم کے ستائے ہوئے اہلیان بیروٹ کو سکون اور راحت عطا کی۔ اگرچہ بیروٹ میں اس دوسرے مسجد اورمکتب کے قیام سے ڈھونڈ عباسی برادری دو الگ الگ خاندانوں میں بٹ چکی تھی، بگلوٹیاں مسجد کے متولیوں نےلورہ سے غیرت کے نام پر قتل کرنے والے مبینہ جیون شاہ کو اپنا امام چن لیا تھا جبکہ کاملال ڈھونڈ عباسی برادری کی امامت اور دیگر مذہبی معاملات کی ذمہ داری علوی اعوان آف بیروٹ کے نیک محمد آل اور نور محمدال قبیلہ کے سپرد رہی۔[1]

حوالہ جاتترميم

  1. "بیروٹ".