غیر نیٹو اتحادی ایک عہدہ ہے جو امریکہ اپنے ان قریبی اتحادیوں دیتا ہے جو امریکا کے ساتھی ہوں لیکن معاہدہ شمالی اوقیانوس (نیٹو) کے رکن نہ ہوں۔ غیر نیٹو اتحادی کی صورت میں دو طرفہ دفاعی معاہدہ ضروری نہیں لیکن اس کے نتیجے میں یہ ممالک ان ممالک سے زیادہ عسکری و مالی فوائد سمیٹتے ہیں جو نیٹو کے رکن نہیں۔

امریکہ کے غیر نیٹو اتحادی ممالک

غیر نیٹو اتحادی کا عہدہ پہلی بار 1989ء میں کانگریس کی جانب سے امریکہ کے کوڈ برائے مسلح افواج ٹائٹل 10 میں شق 2350اے کی شمولیت سے طے پایا۔ ابتدائی طور پر آسٹریلیا، مصر، اسرائیل، جاپان اور جنوبی کوریا غیر نیٹو اتحادی قرار پائے۔

1996ء امریکی کوڈ برائے امور خارجہ ٹائٹل 22 میں سیکشن 2321 کے کی شمولیت سے یہ اتحادی اضافی عسکری و مالی فوائد کے مستحق قرار پائے۔

فہرستترميم

  آسٹریلیا (1989ء)

  مصر (1989ء)

  اسرائیل (1989ء)

  جاپان (1989ء)

  جنوبی کوریا (1989ء)

  اردن (1996ء)

  نیوزی لینڈ (1996ء)

  ارجنٹائن (1998ء)

  بحرین (2002ء)

  فلپائن (2003ء)

  تھائی لینڈ (2003ء)

  کویت (2004ء)

  مراکش (2004ء)

  پاکستان (2004ء)

  افغانستان (2012ء)

متعلقہ مضامینترميم

نیٹو