فرانسیسی زبان

فرانس کی زبان

فرانسیسی (فرانسیسی: français - فغان٘سے) ہند یورپی زبانوں کے خاندان کی ایک زبان ہے جس کا تعلق رومنی زبانوں سے ہے۔ یہ رومنی سلطنت کی عامیانہ لاطینی زبان سے بنی ہے جیسا کہ تمام رومنی زبانوں کے ساتھ ہوا ہے۔ فرانسیسی زبان گولو رومنی زبان سے ترقی کرتی ہوئی اپنی نئی شکل میں وجود پزیر ہوئی ہے۔ گول رومنی گول علاقہ کی لاطینی زبان ہے۔ بالخصوص شمالی گول میں یہ رائج ہے۔

فرانسیسی زبان
français
تلفظ[fʁɑ̃sɛ] یا [fʁɑ̃se]
مقامی فرانس
علاقہفرانسیسی بین الاقوامی تنظیم
تقسیمی نقشہ حسب ذیل
مقامی متکلمین
7 کروڑ 68 لاکھ عالمی (date missing)
ایک انداز کے مطابق 24 کروڑ 4 لاکھ فرانسیسی متکلمین (ل1 جمع ل2؛2014)[1][2]
ابتدائی شکل
لاطینی رسم الخط (فرانسیسی حروف)
فرانسیسی بریل
اشارتی فرانسیسی
(français signé)
رسمی حیثیت
دفتری زبان

منظم ازفرہنگستان فرانسیسی
(Académie française)
کیوبیک مجلس برائے فرانسیسی زبان
Office québécois de la langue française
زبان رموز
آیزو 639-1fr
آیزو 639-2fre (بی)
fra (ٹی)
آیزو 639-3fra
گلوٹولاگstan1290[3]
کرہ لسانی51-AAA-i
New-Map-Francophone World.svg
  خطے جہاں فرانسیسی مادری زبان ہے
  خطے جہاں فرانسیسی سرکاری زبان ہے
  خطے جہاں فرانسیسی زبان دوم ہے
  خطے جہاں فرانسیسی اقلیتی زبان ہے
اس مضمون میں بین الاقوامی اصواتی ابجدیہ کی صوتی علامات شامل ہیں۔ موزوں معاونت کے بغیر آپ کو یونیکوڈ حروف کی بجائے سوالیہ نشان، خانے یا دیگر نشانات نظر آسکتے ہیں۔ بین الاقوامی اصواتی ابجدیہ کی علامات پر ایک تعارفی ہدایت کے لیے معاونت:با ابجدیہ ملاحظہ فرمائیں۔

فرانسیسی ایک سے زیادہ براعظموں میں 29 ممالک میں ایک سرکاری زبان ہے،[4] جن میں سے اکثرفرانسیسی بین الاقوامی تنظیم (او آئی ایف) کے ارکان ہیں، 84 ممالک کی کمیونٹی جو فرانسیسی کے سرکاری استعمال یا تدریس کا حصہ ہے. فرانسیسی اقوام متحدہ میں استعمال ہونے والے چھ سرکاری زبانوں میں سے ایک ہے.[5] یہ فرانس میں، پہلی زبان (اسپیکر کی تعداد میں کمی کے تحت)، کیوبیک صوبوں، اونٹاریو اور نیو برنوک کے ساتھ ساتھ دیگر فرانکوفون کے علاقوں، بیلجیم (والونیا اور برسلز - دارالحکومت خطے)، مغربی سوئٹزرلینڈ (برن، کینبرٹ، جیووا، جرا، نیوچنٹ، وڈ، وایلس)، موناکو، جزوی طور پر لیگزیانہ، لوئیسیا، ریاست، نیویارک، نیو ہاسپھائر اور ورمونٹ میں ریاستہائے متحدہ امریکہ میں، اور آستین وادی کے علاقے میں، اور آستین وادی کے علاقے میں، اور آستین وادی میں.[6]

2015 میں، فرانسسکون آبادی کا تقریبا 40 فیصد (ایل 2 اور جزوی اسپیکرز سمیت) یورپ میں، 35 فیصد ذیلی سہارا افریقہ میں، شمالی افریقہ میں مشرق وسطی اور مشرق وسطی میں 15 فیصد، اور ایشیا اور اوقیانوسیہ میں 1٪.[7] فرانسیسییورپی اتحاد میں دوسری سب سے بڑی بات چیت کی زبان کی زبان ہے۔[8] یورپ کے جو لوگ مقامی زبانوں سے بولتے ہیں، تقریبا ایک پانچویں فرانسیسی زبان کو دوسری زبان کے طور پر بولنے میں کامیاب ہیں.[9] یورپی اتحاد میں فرانسیسی سب سے زیادہ تعلیم دی گئی ہے. یورپی یونین کے تمام اداروں کو انگریزی اور جرمن کے ساتھ ساتھ ایک کام کی زبان کے طور پر فرانسیسی استعمال کے طور پر؛ بعض اداروں میں، فرانسیسی یورپی یونین کے عدالت کے عدالت میں واحد کام کرنے والی زبان ہے.[10] فرانسیسی دنیا میں 18th سب سے زیادہ طاقتور زبان بولی ہے، 6 ویں کل متکلمین کے اعتبار سے بولی جانے والی اور دوسری یا تیسرے سب سے زیادہ مطالعہ شدہ زبان (تقریبا 120 ملین موجودہ سیکھنے والے) کے ساتھ. [11] 16 ویں صدی کے بعد فرانسیسی اور بیلجیم کالونیوں کے نتیجے میں، فرانسیسی امریکا، افریقہ اور ایشیا میں نئے علاقوں میں متعارف کرایا گیا تھا. زیادہ تر دوسری زبان کے بولنے والے عالم فرانسیسی افریقہ میں رہتے ہیں، خاص طور پر گبون، الجزائر، مراکش،تونس، ماریشس،سینیگال اور آئیوری کوسٹ۔[12]

تاریخترميم

فرانسیسی ایک رومنی زبان ہے(مطلب یہ کہ بنیادی طور پر عامیانہ لاطینی سے اخذشدہ ہے) جس کی ارتقا مشرقی فرانس کے گالورومانی لہجات سے ہوئی ہے۔اس زبان کی ابتدائی اشکال میں قدیم فرانسیسی اور وسطیٰ فرانسیسی شامل ہیں۔

گالیا میں عامیانہ لاطینیترميم

رومی اقتدار کی وجہ سے، گالیا کے لوگوں نے رفتہ رفتہ لاطینی کو اپنا لیا، اور جیسا کہ عام لوگ اسے بولتے تھے اس لیے اس نے اپنی ایک الگ عوامی خصوصیت بنا لی، جوکہ دوسری جگہوں پر بولی جانے والی لاطینی سے صرف‌ونحوی طور پر مختلف تھی، ان میں سے کچھ گرافیتی(graffiti) پر کنندہ ملتی ہیں۔[13] یہ عوامی تنوع گالو رومنی لسانوں میں ارتقا کر گئی، جس میں فرانسیسی اور اس کے اقربا مثلاً آرپیتانی وغیرہ شامل ہیں۔

گالیا میں مقامی کیلتی گالی زبان (جوکہ مغربی رومی سلطنت کے انحطاط کے بعد، 16ویں صدی تک معدوم نہیں ہوئی تھی) کے علاوہ لاطینی کی ارتقا اس کی نصف ہزار سالہ ہم آہنگی کی وجہ سے تھی۔[14]آبادی اصل میں 90 فی‌صد سودیشی رہی، [15][16] اور رومی آبادکاروں کی بجائے، رومی سازی جماعت وہاں کی مقامی سودیشی اشرافیہ تھے، جن کے بچے سلطنت کے زوال کے وقت رومی اسکولوں میں لاطینی سیکھتے تھے۔یہ مقامی اشرافیہ آہستہ آہستہ مکمل طور پر گالی زبان کو ترک کررہے تھے، لیکن قریائی اور نچلا درجہ گالی متکلم رہا جوکہ بعض اوقات لاطینی یا یونان بھی بولتا۔[17] آخری لسانی تغیر قریائی اور نچلے درجے کا گالی سے عامیانہ لاطینی کو بعد میں ہوا جب اِن دونوں اور فرانکیسی حکمران\فوجی درجے نے شہری دانشورانہ اشرافیہ کی گالو رومنی عامیانہ لاطینی اپنایا۔[17]

واضح رومی سازی کے باوجود، گالی زبان 6ویں صدی عیسوی تک فرانس میں بچ گئی۔[14] لاطینی سے بقائے باہمی کرتے ہوئے، گالی زبان نے عامیانہ لاطینی کے لہجات کو فرانسیسی میں بدلنے کےلیے مدد کی، [17][14] جن میں فرضی الفاظ اور فرضی ترجمات (جن میں "ہاں" کے لیے، [18][19] لفظ oui شامل ہے۔)[19]، گالی اثر و رسوخ کی وجہ سے آواز کی تبدیلیاں، [20][21] اور اجتماع اور الفاظ کی ترتیب میں اثرات شامل ہیں۔[18][19][13]حالیہ محاسباتی مطالعات تجویز کرتے ہے کہ شاید ابتدائی تغیرِ صنف گالی میں اسی لفظ کی صنف سے متاثر ہوا ہے۔[22]

قدیم فرانسیسیترميم

گالیا میں فرانسیسی زبان کی ابتدا کو ملک میں جرمانی حملات کا بہت اثرورسوخ ہے۔اِن حملات کے ملک کے شمالی حصے اور وہاں کی زبان پر بھاری اثرات مرتب ہوئے تھے۔[23] ایک زبان ملک کے طول و عرض میں پیدا ہونا شروع کردیا۔مشرقی آبادی میں اَول زبان بولی جاتی جب کہ جنوبی آبادی اوک زبان بولتی تھی۔[23] اَول زبان اس میں ارتقا کرگئی جسے اب قدیم فرانسیسی کہتے ہیں۔قدیم فرانسیسی کا دورانیہ 8ویں سے 14ویں صدیوں تک ہے۔قدیم فرانسیسی کی لاطینی سے کئی خصوصیات مشترکہ ہیں۔مثلاً، قدیم فرانسیسی نے کئی مختلف مُمکنی ترتیبِ کلمات کا بالکل لاطینی کی استعمال کیا کیوں کہ اس کا ایسا نظام حالہ تھا جس نے نامزد افعال اور مستحکم غیر افعال کے درمیان میں فرق کو برقرار رکھا۔[24] یہ دور جرمانی فرانکیسی زبان کے اعلیٰ اثرات کے لیے نشان ہے، جس میں غیر جامعاً اعلیٰ طبقے میں تقریری استعمال اور وی2 ترتیبِ کلمات کا اعلیٰ استعمال، [25] ذخیرہ الفاظ کی بڑی فی‌صد(جدید فرانسیسی ذخیرہ الفاظ کا قریباً 15 فی‌صد[26]) جس میں غیر شخصی واحدی اسم ضمیر on شامل ہے(جو جرمانی man کا قرضی ترجمہ ہے اور خود زبان کا نام)

وسطیٰ‌فرانسیسیترميم

قدیم فرانسیسی کی اپنے اندر کئی لہجات نکل آئے تھے لیکن فرانسوی لہجہ نہ صرف جاری رہا بلکہ ترقی کرتا ہوا وسطیٰ فرانسیسی (14ویں-17ویں صدی) میں ارتقا کرگیا۔[23] جدید فرانسیسی اسی فرانسوی لہجے سے اخذ ہوئی ہے۔[23]صرف ونحوئی طور پی، وسطیٰ فرانسیسی کے دورانیے میں، تصریفِ اسما ضائع ہو گئے اور فرانسیسی زبان کی معیار سازی شروع ہوگئی۔رابرت استین نے پہلی لاطینی-فرانسیسی لغت شائع کی، جس میں صوتیات، اشتاقیات اور صرف و نحو کے متعلق معلومات درج تھی۔[27] سیاستاً، فرمان ویلرز-کوتریتز(1539) نے فرانسیسی کو زبان قانون بنا دیا۔

جدید‌فرانسیسیترميم

17ویں صدی کے دوران، فرانسیسی نے سفارت کاری اور عالمی تعلقات (زبان عامہ) کی سب سے اہم زبان کے طور پر لاطینی کی جگہ لے لی۔اس کی اہمیت 20ویں صدی کے وسط تک برقرار رہی، جب انگریزی نے اس کی جگہ لے لی کیوں کہ جنگ عظیم دوم کے بعد ریاست ہائے متحدہ غالب عالمی قوت بن گئی تھی۔[28][29] لوس آنجلیز ٹائم ک کے استانلے میسلر کہتا تھا کہ حقیقت یہ ہے کہ معاہدہ ورسائلز جوکہ انگریزی اور فرانسیسی میں لکھا گیا تھا اس کے خلاف "پہلا سفارتی دھچکا" تھا۔[30]

جغرافیائی تقسیمترميم

فرنگستانترميم

 
یورپی اتحاد اور امیدوار ممالک میں فرانسیسی زبان کی معلومات[31]

یورپی اتحاد میں فرانسیسی زبان انگریزی اور جرمن کے زبان بطور مادردی زبان تیسری بڑی زبان ہے جس کے بولنے والے کل 19.71% ہیں۔[8][32]

آئین فرانس کے تحت ، فرانسیسی 1992 سے جمہوریہ کی سرکاری زبان رہی ہے ،[33]حالاں کہ فرمان ویلرز-کوتریتز نے اسے 1539 میں قانونی دستاویزات کے لئے لازمی قرار دے دیا تھا۔ سوائے مخصوص معاملات ، اور قانونی معاہدوں ۔ اشتہارات میں غیر ملکی الفاظ کا ترجمہ ہونا ضروری ہے۔

بیلجیم میں ، ولندیزی کے ساتھ ساتھ وفاقی سطح پر فرانسیسی سرکاری زبان ہے۔ علاقائی سطح پر ، فرانسیسی والونیا کی واحد سرکاری زبان ہے (مشرقی کینٹن کے ایک حصے کو چھوڑ کر ، جو جرمن بولنے والے ہیں) اور برسلز دارلحکومتی علاقے کی دو سرکاری زبانیں - ولندیزی کے ساتھ ساتھ ، جہاں یہ ہے اکثریتی آبادی (تقریبا 80 80٪) اکثر ذفعہ اپنی مادری زبان کی حیثیت سے بولی جاتی ہے۔[34]

فرانسیسی جرمن ، اطالوی ، اور رومانش کے ساتھ سوئٹزرلینڈ کی چار سرکاری زبانوں میں سے ایک ہے ، اور یہ سوئٹزرلینڈ کے مغربی حصے میں بولی جاتی ہے ، جسے رومانڈی کہتے ہیں ، جن میں سے سب سے بڑا شہر جنیوا ہے۔ سوئٹزرلینڈ میں زبان کی تقسیم سیاسی ذیلی تقسیم کے ساتھ مماثلت نہیں رکھتی ہے ، اور کچھ توپوں کو دو لسانی حیثیت حاصل ہے: مثال کے طور پر ، شہر جیسے بائیل / بیین اور کینٹس جیسے والیس ، فریبرگ اور برن۔ فرانسیسی سوئس آبادی کے تقریبا 23 فیصد کی مادری زبان ہے ، اور اس کی آبادی کا 50٪[35] بولی جاتی ہے۔

فرانسیسی ،موناکو اور لکسمبرگ کی بھی سرکاری زبان ہے ، نیز اطالیہ کے علاقے آوستہ وادی میں بھی ، جب کہ رودبارجزیرہ پر اقلیتوں کے ذریعہ فرانسیسی بولی بولی جاتی ہے۔ یہ انڈورا میں بھی بولی جاتی ہے اور ایل پاس دی لا کاسا میں کاتالان کے بعد اس کی بنیادی زبان ہے۔ جرمن سارلینڈ کی سرزمین میں اس زبان کو بنیادی دوسری زبان کے طور پر پڑھایا جاتا ہے ، اس کے ساتھ ہی فرانسیسی کو پری اسکول سے پڑھایا جاتا ہے اور 43٪ سے زیادہ شہری فرانسیسی زبان بولنے میں اہل ہیں۔[36][37]

افریقاترميم

 
  ممالک عموماً افریقی عالمِ فرانسیسی کا حصہ سمجھے جاتے ہیں۔
ان کی آبادی 2019 میں 43 کروڑ تھی،[38] اور 2050 میں یہ 84 کروڑ[39] اور 86 کروڑ کے درمیان پہنچنے کی پیش گوئی ہے۔[38]
  بعض اوقات افریقی عالم فرانسیسی کے طور پر سمجھے جانے والے ممالک
  وہ ممالک جو عالم فرانسیسی میں شامل نہیں ہیں بلکہ ع-ف-ت کے رُکن یا مشاہدہ کار ہیں۔

امریکاترميم

کینیڈا میں فرانسیسی زبان کی تقسیم
  علاقے جہاں فرانسیسی زبان مادری زبان ہے
  علاقے جہاں فرانسیسی زبان سرکاری زبان ہے
The "arrêt" signs (French for "stop") are used in Canada while the English stop, which is also a valid French word, is used in France and other French-speaking countries and regions.

ایشیاترميم

مغربی ایشیاترميم

لبنانترميم

 
لبنان کے رشمیا کے داخلے پر قصبائی اشارہ جوکہ معیاری عرَبی اور فرانسیسی زبان میں ہے

تنوعاتترميم

  • آوستائی فرانسیسی
  • افریقی فرانسیسی
    • مغربی فرانسیسی (شمال افریقی فرانسیسی)
  • بھارتی فرانسیسی
  • بیلجئیمی فرانسیسی
  • جرزی فرانسیسی
  • جنوب-مشرق ایشیائی فرانسیسی
  • فرانسی فرانسیسی
  • کیمبوڈیائی فرانسیسی
  • کینیڈائی فرانسیسی
  • لاؤ فرانسیسی
  • لوزیانائی فرانسیسی
  • مسوریائی فرانسیسی
  • ہیتیائی فرانسیسی
 
دنیا میں فرانسیسی زبان کی تنوعات

صوتیاتترميم

بولی جانے والی فرانسیسی (افریقی)
فرانسیسی میں حروف ساکنی آوازیں
شفتی حروف صحیح دندانی حروف صحیح/
لثوی حروف صحیح
حنکی حروف صحیح/
بعد لثوی حروف صحیح
طبقی حروف صحیح/
لہوی حروف صحیح
Nasal m n ɲ ŋ
Stop voiceless p t k
voiced b d ɡ
Fricative voiceless f s ʃ ʁ
voiced v z ʒ
Approximant plain l j
labial ɥ w

فرانسیسی میں حروف علتی آوازیں

Oral
  Front Central Back
unrounded rounded
Close i y u
Close-mid e ø (ə) o
Open-mid ɛ/(ɛː) œ ɔ
Open a (ɑ)
Nasal
Front Back
unrounded rounded
Open-mid ɛ̃ (œ̃) ɔ̃
Open ɑ̃

صرف و نحوترميم

اشارتیترميم

Indicatif
Présent Imparfait Passé composé Passé simple
واحد جمع واحد جمع واحد جمع واحد جمع
ضمیر متکلم j'aime nous aimons j'aimais nous aimions j'ai aimé nous avons aimé j'aimai nous aimâmes
ضمیرِحاضر tu aimes vous aimez tu aimais vous aimiez tu as aimé vous avez aimé tu aimas vous aimâtes
ضمیر غائب il/elle aime ils/elles aiment il/elle aimait ils/elles aimaient il/elle a aimé ils/elles ont aimé il/elle aima ils/elles aimèrent
Futur simple Futur antérieur Plus-que-parfait Passé antérieur
واحد جمع واحد Plural Singular Plural Singular Plural
ضمیر متکلم j'aimerai nous aimerons j'aurai aimé nous aurons aimé j'avais aimé nous avions aimé j'eus aimé nous eûmes aimé
ضمیرِحاضر tu aimeras vous aimerez tu auras aimé vous aurez aimé tu avais aimé vous aviez aimé tu eus aimé vous eûtes aimé
ضمیر غائب il/elle aimera ils/elles aimeront il/elle aura aimé ils/elles auront aimé il/elle avait aimé ils/elles avaient aimé il/elle eut aimé ils/elles eurent aimé

شرطیترميم

Subjonctif
Présent Imparfait Passé composé Plus-que-parfait
Singular Plural Singular Plural Singular Plural Singular Plural
1st Person j'aime nous aimions j'aimasse nous aimassions j'aie aimé nous ayons aimé j'eusse aimé nous eussions aimé
2nd Person tu aimes vous aimiez tu aimasses vous aimassiez tu aies aimé vous ayez aimé tu eusses aimé vous eussiez aimé
3rd Person il/elle aime ils/elles aiment il/elle aimât ils/elles aimassent il/elle ait aimé ils/elles aient aimé il/elle eût aimé ils/elles eussent aimé

ذخیرۂ الفاظترميم

 

دخیل لفظ کی ریشائی زبانیں[40]

  انگریزی (25.10%)
  اطالوی (16.83%)
  دوسری ایشیائی زبانیں (2.12%)

مزید دیکھیےترميم

فہرست ممالک فرانسیسی بطور سرکاری زبان

حوالہ جاتترميم

  1. "Ethnologue: French". اخذ شدہ بتاریخ 23 ستمبر 2017. 
  2. "French language is on the up, report reveals". thelocal.fr. 6 نومبر 2014. 
  3. ہیمر اسٹورم، ہرالڈ؛ فورکل، رابرٹ؛ ہاسپلمتھ، مارٹن، ویکی نویس (2017ء). "فرانسیسی". گلوٹولاگ 3.0. یئنا، جرمنی: میکس پلانک انسٹی ٹیوٹ فار دی سائنس آف ہیومین ہسٹری. 
  4. "In which countries of the world is this language spoken...". اخذ شدہ بتاریخ 21 نومبر 2017. 
  5. "Official Languages". www.un.org (بزبان انگریزی). 2014-11-18. اخذ شدہ بتاریخ 19 اپریل 2020. 
  6. "Census in Brief: English, French and official language minorities in Canada". www12.statcan.gc.ca (بزبان انگریزی). 2017-08-02. اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2018. 
  7. "The status of French in the world". اخذ شدہ بتاریخ 23 اپریل 2015. 
  8. ^ ا ب European Commission (June 2012)، "Europeans and their Languages" (PDF)، Special Eurobarometer 386، Europa، صفحہ 5، مورخہ 2016-01-06 کو اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ، اخذ شدہ بتاریخ 07 ستمبر 2014 
  9. "Why Learn French". 19 جون 2008 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  10. Develey، Alice (25 February 2017). "Le français est la deuxième langue la plus étudiée dans l'Union européenne" – Le Figaro سے. 
  11. "How many people speak French and where is French spoken". اخذ شدہ بتاریخ 21 نومبر 2017. 
  12. La Francophonie dans le monde 2006–2007 published by the فرانسیسی بین الاقوامی تنظیم. Nathan آرکائیو شدہ 14 جنوری 2018 بذریعہ وے بیک مشین, Paris, 2007.
  13. ^ ا ب Adams, J. N. (2007). "Chapter V – Regionalisms in provincial texts: Gaul". The Regional Diversification of Latin 200 BC – AD 600. Cambridge. صفحات 279–289. ISBN 978-0-511-48297-7. doi:10.1017/CBO9780511482977. 
  14. ^ ا ب پ Laurence Hélix (2011). Histoire de la langue française. Ellipses Edition Marketing S.A. صفحہ 7. ISBN 978-2-7298-6470-5. 
  15. Lodge، R. Anthony (1993). French: From Dialect to Standard. صفحہ 46. ISBN 978-0-415-08071-2. 
  16. Craven، Thomas D. (2002). Comparative Historical Dialectology: Italo-Romance Clues to Ibero-Romance Sound Change. John Benjamins Publishing. صفحہ 51. ISBN 1-58811-313-2. 
  17. ^ ا ب پ Mufwene, Salikoko S. "Language birth and death." Annu. Rev. Anthropol. 33 (2004): 201-222.
  18. ^ ا ب Savignac, Jean-Paul (2004). Dictionnaire Français-Gaulois. Paris: La Différence. صفحہ 26. 
  19. ^ ا ب پ Matasovic، Ranko (2007). "Insular Celtic as a Language Area". Papers from the Workship within the Framework of the XIII International Congress of Celtic Studies: 106. doi:ڈی او ئي. 
  20. Henri Guiter, "Sur le substrat gaulois dans la Romania"، in Munus amicitae. Studia linguistica in honorem Witoldi Manczak septuagenarii، eds.، Anna Bochnakowa & Stanislan Widlak, Krakow, 1995.
  21. Eugeen Roegiest, Vers les sources des langues romanes: Un itinéraire linguistique à travers la Romania (Leuven, Belgium: Acco, 2006)، 83.
  22. Polinsky، Maria; Van Everbroeck، Ezra (2003). "Development of Gender Classifications: Modeling the Historical Change from Latin to French". Language 79 (2): 356–390. doi:10.1353/lan.2003.0131. 
  23. ^ ا ب پ ت "HarvardKey – Login". www.pin1.harvard.edu. 
  24. Lahousse، Karen; Lamiroy، Béatrice (2012). "Word order in French, Spanish and Italian:A grammaticalization account" (en میں). Folia Linguistica 46 (2). doi:10.1515/flin.2012.014. آئی ایس ایس این 1614-7308. 
  25. Rowlett, P. 2007. The Syntax of French. Cambridge: Cambridge University Press. Page 4
  26. Pope, Mildred K. (1934)۔ From Latin to Modern French with Especial Consideration of Anglo-Norman Phonology and Morphology. Manchester: Manchester University Press.
  27. Victor، Joseph M. (1978). Charles de Bovelles, 1479–1553: An Intellectual Biography. Librairie Droz. صفحہ 28. 
  28. The World's 10 Most Influential Languages آرکائیو شدہ 12 مارچ 2008 بذریعہ وے بیک مشین Top Languages۔ Retrieved 11 اپریل 2011.
  29. Battye، Adrian؛ Hintze، Marie-Anne؛ Rowlett، Paul (2003). The French Language Today: A Linguistic Introduction (بزبان انگریزی). Taylor & Francis. ISBN 978-0-203-41796-6. 
  30. Meisler, Stanley. "Seduction Still Works : French – a Language in Decline." Los Angeles Times۔ مارچ 1, 1986. p. 2۔ Retrieved on مئی 18, 2013.
  31. EUROPA، data for EU25, published before 2007 enlargement.
  32. "یورپ میں زبانوں کا علم(انگریزی میں)". 
  33. Novoa، Cristina؛ Moghaddam، Fathali M. (2014). "Applied Perspectives: Policies for Managing Cultural Diversity". بہ Benet-Martínez، Verónica؛ Hong، Ying-Yi. The Oxford Handbook of Multicultural Identity. Oxford Library of Psychology. New York: Oxford University Press. صفحہ 468. ISBN 978-0-19-979669-4. LCCN 2014006430. OCLC 871965715. 
  34. Van Parijs, Philippe, Professor of economic and social ethics at the UCLouvain, Visiting Professor at ہارورڈ یونیورسٹی and the KULeuven. "Belgium's new linguistic challenge" (pdf 0.7 MB). KVS Express (Supplement to Newspaper de Morgen) March–April 2006: Article from original source (pdf 4.9 MB) pp. 34–36 republished by the Belgian Federal Government Service (ministry) of Economy – Directorate–general Statistics Belgium. doi:ڈی او ئي. http://www.statbel.fgov.be/studies/ac699_en.pdf۔ اخذ کردہ بتاریخ 5 May 2007.  – The linguistic situation in Belgium (and in particular various estimates of the population speaking French and Dutch in Brussels) is discussed in detail.
  35. Abalain، Hervé (2007). Le français et les langues. ISBN 978-2-87747-881-6. اخذ شدہ بتاریخ 10 ستمبر 2010. 
  36. "Allemagne : le français, bientôt la deuxième langue officielle de la Sarre". 28 April 2014. 
  37. "German region of Saarland moves towards bilingualism". BBC News. 21 January 2014 – www.bbc.co.uk سے. 
  38. ^ ا ب Population Reference Bureau. "2019 World Population Data Sheet" (PDF). اخذ شدہ بتاریخ 28 ستمبر 2019. 
  39. United Nations. "World Population Prospects: The 2019 Revision" (XLSX). اخذ شدہ بتاریخ 28 ستمبر 2019. 
  40. Walter & Walter 1998.