مرکزی مینیو کھولیں


Natural Selectionترميم

مثال کہ طور پر اگر انسان زمین پر رینگنے والا کیڑا ہوتا جسے ہر وقت یہ خطرہ ہو کہ وہ کبھی بھی کسی بھی بڑے شکاری کا شکار بن سکتا ہے اور وہ اُس سے لڑ بھی نہیں سکتا۔

وہ اُسے کچھ بھی نہیں کر سکتا اور وہ باقی کیڑوں کی طرح زہریلا بھی نہیں ہے تو وہ کیا کرتا؟ یقیاً فطرت خود فیصلے لیتی ہے کہ اُسے بچنے کے لیے اپنے اندر کون سی صلاحیت کو لانا ہے اور جس سے بڑے جانوروں کو اُس سے گھِن آنا شروع ہو جائے یہ عمل دونوں طرف چلتا ہے اگر شکاری ہر وقت شکار کے بارے میں سوچتا ہے تو شکار بھی ہر وقت یہی سوچتا ہے کہ اُس سے بچنا کیسے ہے ۔۔ اور دونوں میں ہونے والی جسمانی تبدلیاں ہی نیچرل سلیکشن یا قدرتی انتخاب کہا جاتا ہے