مفتی احتشام الحق آسیا ابادی

مفتی اعظم پاکستان حضرت مولانا محمد شفیع ؒ، حضرت مولانا مفتی رشید احمد لدھیانویؒ کے شاگرد رشید، مکران ڈویژن صوبہ بلوچستان کے مفتی اعظم، امن کمیٹی مکران ڈویژن کے رکن، وفاق المدارس العربیہ مکران ڈویژن کے مسئول و ناظم، جامعہ رشیدیہ آسیا آباد کے بانی و رئیس،

پیدائشترميم

حضرت مولانا مفتی احتشام الحق آسیا آبادیؒ ۱۳؍ ربیع الاول ۱۳۶۸ھ مطابق 12 نومبر 1948ء کو ضلع کیچ ، تربت کے دور افتادہ گائوں آسیا آباد میں ایک کسان کے گھر پیدا ہوئے۔

تعلیمترميم

ابتدائی تعلیم آسیا آباد کے پرائمری اسکول سے حاصل کی، ساتھ ساتھ محلے کے دین دار شخص ملا محمد مراد سے قرآن کریم بھی پڑھا۔ پرائمری پاس کرنے کے بعد مڈل اسکول نظر آباد میں داخلہ لیا، مڈل پاس کرنے کے بعد باقاعدہ دینی تعلیم کے لیے جامعہ مفتاح العلوم سورو پنجگور میں داخلہ لیا، دو سال کے عرصے میں تین سال کی کتب پڑھ لیں۔ پھر جامعہ دارالعلوم کراچی میں داخلہ لیا۔ 1975ء میں دارالعلوم کراچی سے فراغت کے بعد باقاعدہ دارالافتاء والارشاد میں تخصص فی الفقہ میں داخلہ لیا، وہیں مفتی رشید احمدؒ کے زیر سایہ ہزاروں مسائل اور چوبیس سے زائد مقالے تحریر کیے۔

درس و تدریسترميم

تخصص کے بعد اپنے استاد خاص مفتی رشید احمد لدھیانویؒ کے حکم و ارشاد سے علاقے میں آئے اور وہیں ۱۸؍ شعبان المعظم ۱۳۹۶ھ مطابق 16 اکتوبر 1976ء میں جامعہ رشیدیہ آسیا آباد کا سنگ بنیاد رکھا جامعہ رشیدیہ کی تاسیس کے ساتھ تدریس شروع کی اور سب سے پہلے جامعہ میں قرآن مجید کی تعلیم کی ابتدا کی۔ مولانا حافظ خداداد کو سب سے پہلا سبق پڑھایا، اس وقت سے لے کر شہادت کے دن تک جامعہ میں تدریس کرتے رہے، درمیان میں پانچ چھ مہینے جامعۃ الرشید کراچی میں بھی تدریس کی اور شہادت کے دن عصر کے بعد آخری سبق پڑھایا

تحریکی خدماتترميم

اپنے استاد و مرشد کے ارشاد پر جمعیت علماء اسلام پاکستان میں عملاً کام کیا اور ایک لمبے عرصے تک جمعیت علماء اسلام تربت ضلع کے امیر رہے۔ علاقے میں سیاست اور مذہب کے جداگانہ حیثیت کے نظریئے کے پرچار کا تدارک کیا اور ایک وسیع مذہبی سیاسی حلقے کی ترویج کی،

وفاق المدارس کے قیام کے بعد مکران ڈویژن میں مدارس کے وفاق المدارس کے ساتھ رجسٹریشن اور دوسرے اعمال کی ذمہ داریاں شروع سے تادمِ شہادت آپؒ کے کندھوں پر تھیں۔ آپؒ شروع سے لے کر شہادت تک وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے مکران ڈویژن کے مسؤل کی ذمہ داریاں نبھاتے رہے ۔ مکران میں ڈویژن سطح پر امن کمیٹی کا قیام عمل میں لایا گیا، جس کے آپؒ نہ صرف ممبر تھے بلکہ ضلعی سطح کے چیئرمین کی ذمہ داریاں بھی آپ نبھاتے رہے۔

تصانیفترميم

  • ذکری دین کی حقیقت،
  • ذکری مذہب کے عقائد و اعمال
  • ماہی الذکریۃ؟
  • تعلیم الاسلام،
  • اربعین نووی،
  • عقیدۃ الطحاوی کا بلوچی زبان میں ترجمہ
  • اصول الشاشی کی تسہیل و تلخیص
  • مدارۃ الناس اردو ترجمہ
  • کتاب الیقین کا اردو میں ترجمہ
  • بلوچی زبان میں چت و چینک، مات و پت ء حق،
  • عالمگیریں مذہب،
  • کتاب الصبر
  • اردو میں آپ کا شعری مجموعہ کلام آسی‘‘۔ *عربی و فارسی اشعار پر مشتمل مجموعہ ’’افکارِ آسی‘‘
  • ’’فتنوں کی دنیا‘‘
  • اصول افتا پر لکھی گئی تمرینی کتاب
  • ’’اصول الافتائ‘‘
  • سیرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا نظریاتی پہلو،
  • فتنۂ انکارِ حدیث پر ایک طائرانہ نظر،
  • الباقیات الصالحات،
  • الجواب الشافی،
  • فکر و نظر،
  • درسِ حدیث،
  • درس قرآن
  • التحقیق الأنیق بتوفیق الغفار فی وقوع الطلاق بلفظ مات و گوہار

وفاتترميم

ہزاروں علماء کے استاذ حضرت مولانا مفتی احتشام الحق آسیا آبادیؒ اور ان کے بیٹے حضرت مولانا شبیر احمدؒ کو ۱۹؍ شوال المکرم ۱۴۳۷ھ مطابق 24 جولائی 2016ء بروز اتوار بعد نماز عصر ظالم قاتلوں نے فائرنگ کر کے شہید کر دیا۔

حوالہ جاتترميم