پاکستان سپر لیگ

پاکستانی کرکٹ لیگ

پاکستان سپر لیگ پاکستان کی ٹی/20 پریمئر لیگ ہے۔ یہ لیگ ٹیموں کے نام کی بجائے شہروں کے نام پر مشتمل ہے۔ اس لیگ کا مقصد بین الاقوامی کرکٹ ٹیموں کو پاکستان میں کھیلنے میں آمادہ کرنا اور پاکستان میں ٹوئنٹی/20 کرکٹ کا فروغ ہے۔ اس لیگ کا افتتاح 26 مارچ 2013ء کو ہونا تھا لیکن چند ناگزیر وجوہات کی وجہ سے اسی ملتوی کر دیا گیا۔ بعد ازاں، اس کا پہلا ایڈیشن 4 تا 23 فروری، 2016ء شارجہ اور دبئی میں کھیلی گئی 2019 میں ادھا اور2020 میں پوری لیگ پاکستان میں کھیلی گںٔی اور 2018 میں چھٹی ٹیم کی حیثیت سے ملتان سلطان کو کھلایا گیا[1]

پاکستان سپر لیگ
Pakistan Super League.png
ممالک پاکستان
منتطمپاکستان کرکٹ بورڈ
طرزٹوئنٹی/20
پہلا ٹورنامنٹ2016
آخری ٹورنامنٹ2020
طرز ٹورنامنٹدوہرا راؤنڈ روبن اور ناک آؤٹ
کل ٹیمیں5 (موجودہ)
موجودہ فاتحاسلام آباد یونائیٹڈ
کامیاب تریناسلام آباد یونائیٹڈ
زیادہ دوڑیںعمر اکملFlag of پاکستان
زیادہ وکٹیںآندرے رسلFlag of ویسٹ انڈیز کرکٹ بورڈ
ٹی ویپی ٹی وی سپورٹس اور جیو سپر
با ضابطہ ویب سائٹpsl-t20.com
2020

معلوماتترميم

پاکستان سپر لیگ کی پانچ فرنچائز کی نیلامی ملین93$ ڈالر کے عوض دس سال کے لیے کی گئی سب سے بڑی بولی کراچی کنگز کے لیے لگائی گئی۔ پاکستان سپر لیگ کے پہلے ایڈیشن میں ہر ٹیم میں 16کھلاڑی شامل کئیے گئے۔ کھلاڑیوں کو پانچ کیٹگریز میں تقسیم کیا گیا۔ * پلاٹینم 193000$

  • ڈائمنڈ 65000$
  • گولڈ 47000$
  • سلور 28000$
  • ایمرجنگ 25000$

مزید توسیعترميم

پاکستان کرکٹ بورڈ کے مطابق 2019ءمیں اس لیگ کے چوتھے سلسہ میں 8 ٹیمیں کر دی جائیں گی اور 59 میچ کھیلے جائیں گے۔[2]

سارے پاکستانی میچز دیکھیے پی ٹی ؤی سپورٹس پر

لیگ کی ساختترميم

قدرترميم

اس لیگ کی کل مالیت 93 ملین امریکی ڈالر ہے ۔

نیلامیترميم

پاکستان سپر لیگ کی پانچ فرنچائز کو 93 ملین امریکی ڈالر کے عوض دس سال کے لیے فروخت کیا گیا۔

کھلاڑیوں کی نیلامیترميم

پاکستان سپر لیگ کے لیے کھلاڑیوں کو پانچ درجوں میں تقسیم کیا گیا۔ کھلاڑی زیادہ سے زیادہ قیمت نیلامی کی قیمت 140,000 امریکی ڈالر تھی۔ پاکستان نے کھلاڑیوں کے لیے 2 ملین امریکی ڈالر کا بیمہ کروایا اور غیر ملکی کھلاڑیوں کی آمدنی کو ٹیکس سے مستثنیٰ قرار دیا گیا۔[3]

زمرہ قمیت ($)
پلاٹینم $190,000
ڈائمنڈ $65,000
گولڈ $47,000
سلور $28,000
امرجنگ $25,000

کھلاڑیترميم

پاکستان کرکٹ بورڈ نے پہلے تین سالوں کے لیے لیگ پانچ ٹیموں پر مشتمل ہو گی اور ہر ٹیم میں 6 غیر ملکی اور 10 مقامی کھلاڑی اور 2 ابھرتے ہوئے کھلاڑی شامل ہوں گے۔[4][5]

سیزنترميم

افتتاحی سیزن 4 تا 23 فروری شارجہ اور دوبئی میں کھیلا گیا سیمی فائنل تک ہر ٹیم نے دوسری ٹیم سے دو میچ کھیلے۔ فائنل میں اسلام آباد یونائٹڈ نے کوئٹہ گلیڈیٹرز کو 6وکٹ سے ہرا کرچیمپئن ہونے کا اعزاز حاصل کیا ویسٹ انڈیز کے ڈیوائن سمتھ کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ اس ٹورنامنٹ میں پاکستان کے عمر اکمل 335 رنز کے ساتھ ٹاپ اسکوررجبکہ ویسٹ انڈیز کے آندرے رسل ٹاپ وکٹ ٹیکر رہے ۔

ٹیمیںترميم

ٹیم شہر/صوبہ مالک قیام کپتان کوچ
اسلام آباد یونائیٹڈ اسلام آباد، ترلائی اسلام آباد یونائیٹڈ
(علی نقوی اور آمنہ نقوی)
2015[ا]   شاداب خان   مصباح الحق
کراچی کنگز کراچی، سندھ اے آر وائی گروپ
(سلمان اقبال، سی ای او)
2015[ا]   عماد وسیم   ڈین جونز
لاہور قلندرز لاہور، پنجاب، پاکستان قطر لوبریکینٹس کمپنی
(فواد رانا، ایم ڈی)
2015[ا]   سہیل اختر   عاقب جاوید
ملتان سلطانز ملتان، پنجاب، پاکستان علی خان ترین و عالمگیر خان ترین 2017[ب]
2018[پ]
  شان مسعود   اینڈی فلاور
پشاور زلمی پشاور، خیبر پختونخوا ہائیر پاکستان
(جاوید آفریدی، سی ای او)
2015[ا]   ڈیرن سیمی   محمد اکرم
کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کوئٹہ، بلوچستان عمر ایسوسی ایٹس
(ندیم عمر ، ڈائریکٹر)
2015[ا]   سرفراز احمد   معین خان

امپائر و دیگر آفیشلزترميم

بین الاقوامی امپائر جوئل ولسن پاکستان سے علیم ڈار ,شوذب رضا ،احمد شهاب ،راشد ریاض ،خالد محمود اور احسن رضا اس لیگ میں امپائر کے فرائض سر انجام دیے۔سری لنکا کے روشن مہانامہ اور پاکستان کے محمد انیس میچ ریفریز تهے۔[6]

ٹیلی ویژن اور بعید نماترميم

Sunset + Vine نامی کمپنی کو پاکستان سپر لیگ کے نشریاتی حقوق چار سال کے لیے دیے گئے۔ جیو سوپر اور پی ٹی وی سپورٹس کو پاکستان میں نشریاتی حقوق تین سال کے لیے دیے گے۔ پاکستان سپر لیگ کے نشریاتی حقوق 15ملین امریکی ڈالر کے عوض فروخت کئیے گئے۔ پاکستان سپر لیگ کو یوٹیوب پر بھی دکھایا گیا۔

نشریاتی حقوق

 پاکستان جیو سوپر اور پی ٹی وی سپورٹس

 انگلینڈ پرائم ٹی وی

 بنگلہ دیش غازی ٹی وی

 سری لنکا ٹین سپورٹس

 ویسٹ انڈیز Flow tv

 متحده عرب امارات OSN

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. کھیل - BBC Urdu - پاکستان سپر لیگ ملتوی کر دی گئی
  2. "Pakistan T20 League not to be underestimated - Lorgat". ESPN Cricinfo. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2013. 
  3. Pakistan offers overseas players $2m life insurance | Cricket | ESPNcricinfo
  4. http://www.nation.com.pk/pakistan-news-newspaper-daily-english-online/sports/13-Jan-2013/indian-cricketers-keen-on-pakistan-super-league
  5. Pakistan Super League: Indian players want to take part, says PCB official - The Express Tribune
  6. Koertzen, Proctor on board as PSL officials - Sport - DAWN.COM

بیرونی روابطترميم