ہیوگو گروشیس (انگریزی: Hugo Grotius) کو مغربی دنیا میں بین الاقوامی قانون کا باوا آدم کہا جاتا ہے۔سترہویں صدی میں "قانون بین الاقوام" پر پہلی باقاعدہ کتاب لکھی تھی. لیکن "گروشیس" سے کم و پیش ایک ہزار سال پہلے فقہاۓ اسلام نے ان قوانین کی تدوین اور ترتیب کا کام شروع کر دیا تھا، اور "ہیوگو گروشیس" کی پیدائش سے 860 سال پہلے امام محمد بن حسن شیبانی "بین الاقوامی قانون" پر تین کتابیں لکھ چکے تھے[2]۔ Shared by a brother

Hugo Grotius
Michiel Jansz van Mierevelt - Hugo Grotius.jpg
Hugo Grotius – Portrait by Michiel Jansz. van Mierevelt, 1631

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (ولندیزی میں: Hugo Grocio, Hugo Grotius o Hugo de Groot ویکی ڈیٹا پر (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 10 April 1583
Delft, ہولانت, Dutch Republic
وفات 28 August 1645 (aged 62)
Rostock, Swedish Pomerania
شہریت Flag of the Netherlands.svg نیدرلینڈز
Statenvlag.svg ڈچ جمہوریہ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی Leiden University
پیشہ شاعر،  ڈراما نگار،  مفسرِ قانون،  سیاست دان،  مصنف،  سفارت کار،  مؤرخ،  فلسفی،  الٰہیات دان،  وکیل،  استاد جامعہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان لاطینی زبان[1]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل بین الاقوامی قانون،  سیاسی فلسفہ،  مسیحی الٰہیات  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Hugo Grotius signature 1634.svg
 

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb119854851 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — مصنف: Bibliothèque nationale de France — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  2. محاضرات سیرت-ص 18