مرکزی مینیو کھولیں

جنات اور حیوان[1]

جنات

ازل سے جنات اور حیوان کے ما بین بہت گہرا تعلق ہے جن كی جمع جنات آتی ہے اور لغوی معنی ہے ہوائی مخلوق اور جنات کی اصل آگ ہے [2] حضرت ثعلبہ سے روایت ہے کہ[3] رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جن کی تیں اقسام ہے

1- جن کے پر ہوتےہیں اور وہ پروں کے سہارے اڑتے ہیں اور حضرت عبد اللہ بن عباس رضی اللہ عنھما فرماتے ہے کہ یہ جن کی وہ اقسام ہے جنہیں ہوائی مخلوق کہا جاتا ہے [4]

2-دوسرے قسم سانپ ، بچھو اور حشرات الارض کی صورت میں شیخ الاسلام ابن تیمیہ فرماتے ہیں جن سانپ بچھو وغیرہ اور اسی طرح اونٹ ،گائے ، بكرى ،گھوڑا ،خچر اور اڑنے والے پرندے اور آدمی کی صورت کو اختیار کر سکتا ہے [5]

3-اور تیسری قسم انسانوں کی طرح مکلف ہےاور ادھر ادھر گھومنے والے ہے

حیوان

حي کی جمع حیوان آتی ہے اور لغوی معنی ہے ہر ذی روح جاندار مگر انسان کو اللہ تعالی نے اپنا خلیفہ[6] اور اس کو اشرف المخلوقات بنايا ہے

  1. سورة البقرة
  2. سورة الرحمن آیت 15
  3. المعجم الكبير للطبراني
  4. سورة الرحمن الاية 15 ويقول ابن عباس من طرف اللهب و طرف اللهب وهو الهواء الساخن الخارج من النار
  5. رواہ الطبرانی والحاکم والبیھقي فی الاسماء والصفات باسناد صحیح
  6. سورة البقرة