اخلاقی جذبات (انگریزی: Moral emotions) مختلف النوع سماجی جذبات کا مجموعہ ہیں جو اخلاقی طے شدگیوں اور فیصلوں کی تشکیل اور ان کی پیام رسانی سے جڑے ہیں۔ یہ خود کے اور دوسروں کے اخلاقی برتاؤ کے رد عمل کے بننے اور اس کے اظہار میں بھی معاون ہیں۔ [1][2][3]

افادیتترميم

خلاقی تعلقات ظاہر کیے جاتے ہیں اور انفرادی تعلقات پر منحصر ہیں۔ انسان دوسرے لوگوں کو اور اخلاقی جذبات کا تجربہ کرتا ہے۔ جذبات کی درجہ بندی خود ہی ہوتی ہے۔ مثال کے طور پر، محبت، ضمیر، دوستی. عملی جذبات مختلف تجربات (مزدور اور سرگرمی کے دوسرے شعبے) ہیں۔ دانشور اپنی اظہار کو تلاش کرتے ہیں جب کوئی شخص حیرت یا خوشی کا تجربہ کرتا ہے، تو کچھ نیا سیکھنا. جمالیاتی احساسات کچھ خوبصورت، حوصلہ افزائی دیکھنے کی وجہ سے ہیں۔ یہ غور کرنا چاہیے کہ جذبات اور جذبات کو ان کے اظہار کی حد نہیں ہے۔ لہذا، ایک شخص جذبات کی مسابقتی تجربے کا سامنا کرسکتا ہے (جو کسی فوری طور پر اور کسی کی تعریف کرتا ہے، لیکن اسی وقت اس شخص کو کسی اور کے لیے مذمت کرتا ہے).[4]

انسانی معاشرے کے اندر حسد، بْغض، نفرت، انتقام، کینہ پروری، ہوس پرستی، خود غرضی، مایوسی اور ریا کاری جیسے قبیح و غیر اخلاقی جذبات جنم لینے لگتے ہیں۔ یہ مزموم اور خبیث احساسات انسان کی پاکیزہ روح کو گھن کی طرح کمزور کرنے لگتے ہیں۔ انسان انسانی اقدار اور اخلاقی روایات کو پسِ پْشت ڈال کر تسکین محسوس کرنے لگتا ہے۔ دوسروں پر سبقت لے جانے میں ہر جائز و ناجائز حربہ استعمال کرنا اپنا حق سمجھنے لگتا ہے۔ خود غرضی اور ہوس پرستی کا ناگ پھن پھیلائے انسانی قدروں کو ڈس کر زہریلا بنا دیتا ہے۔ اْسے اپنی ذات اور ذاتی مفادات کے سوا کچھ دکھائی نہیں دیتا۔ دفتر ہو یا گھر، محلے داری ہو یا رشتے داری وہ اپنے ساتھیوں کو بچھاڑنے اور نیچا دکھانے کے لیے ہمہ وقت منفی اور غلیظ پرو پیگنڈوں میں مصروف رہتا ہے۔ حسد کی آگ لاوا بن کر ہر وقت اْس کے دل و دماغ میں ایک بے چینی سی پیدا کیے رکھتی ہے۔ بْخل اور بْغض اْسے خود غرضی اور اناء پرستی کی بھینٹ چڑھاکر انسانیت کے ارفع و اعلیٰ مقام سے گرا دیتے ہیں۔ اپنی جھوٹی ساکھ کو سہارا دینے کے لیے وہ دوسروں پر دشنام درازی اور الزام تراشی کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتا۔ [5]

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. Pizarro، David A. (2007). "Moral Emotions". In Baumeister، Roy F؛ Vohs، Kathleen D. Encyclopedia of Social Psychology. SAGE Publications, Inc. صفحات 588–589. ISBN 9781412956253. doi:10.4135/9781412956253.n350. 
  2. Haidt، Jonathan (2003). "The Moral Emotions" (PDF). In Davidson، Richard؛ Scherer، Klaus؛ Goldsmith، H. Handbook of Affective Sciences. Oxford University Press. صفحہ 855. ISBN 978-0-19-512601-3. 
  3. Tangney، جون Price؛ Stuewig، Jeff؛ Mashek، Debra J. (جنوری 2007). "Moral Emotions and Moral Behavior" (PDF). Annual Review of Psychology. 58 (1): 345–372. PMC 3083636 . PMID 16953797. doi:10.1146/annurev.psych.56.091103.070145. 
  4. جذبات اور جذبات کی درجہ بندی
  5. کسبِ کمال کْن