"اسماعیل دیوبندی" کے نسخوں کے درمیان فرق

1,725 بائٹ کا ازالہ ،  5 مہینے پہلے
کوئی ترمیمی خلاصہ نہیں
(غیر جانب داری متنازع)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم ایڈوانسڈ موبائل ترمیم)
 
مبلغ اعظم صرف مناظر ہی نہیں تھے بلکہ وہ ایک بلند پایہ خطیب و مبلغ بھی تھے جن کی تقریروں نے ہزارہا لوگوں کو مذہب شیعہ اختیار کرنے پر مجبور کر دیا۔<ref> مبلغ اعظم صفحہ نمبر 7 (مؤلف: مولانا الحاج ناصر حسین نجفی)</ref>
 
مولانا صاحب [[دار العلوم دیوبند|مدرسہِ دیوبند]] سے فارغ التحصیل عالم تھے مگر بعد ازاں مذہبِ حقہ کی صداقت سے متاثر ہو کر [[شیعہ|مذہبِ اہلِ بیت]] قبول کیا اور پھر تمام عمر بطور [[مبلغ]] و [[مناظر]] اسی مذہب حقہ کی ترویج میں بسر کی اور مبلغِ اعظم خطاب پایا.
مولانا شاندار بارعب شخصیت کے مالک تھے۔
 
کہا کرتے تھے کہ اندرونی طور پر مومنین اتحاد رکھیں باہر سے کسی کو میں نقصان نہیں پہنچانے دوں گا.
زندگی بھر بے شمار مناظرے کیے. آج بھی علما مناظرے کرنے کے لیے آپ ہی کے کیے ہوئے مناظروں سے کسبِ فیض حاصل کرتے ہیں۔
جہاں بھی مجالس پڑھنے جاتے ساتھ میں کتابوں کا صندوق ساتھ لے کر جاتے اور دورانِ [[مجلس]] کتب کھول کے دکھاتے.
آپ کی رحلت کے بعد بہت سے مناظرینِ [[شیعہ|مذہبِ حقہ]] نے آپ کا انداز اپنانے کی کوشش کی.
<ref>https://web.facebook.com/azadari.in.sialkot/photos/a.485963641414997/1007072565970766/?type=1&theater</ref>
 
== [[اسماعیل دیوبندی|مبلغ اعظم]] نے فرمایا ==
آل محمد کے ماننے کے تین رکن ہیں۔
 
1۔ [[اہل بیت]] کی [[امامت]] پر [[ایمان (اسلامی تصور)|ایمان]] لانا
 
2۔ [[اہل بیت]] کی [[محبت]] کو [[واجب]] سمجھنا
 
3۔ [[اہل بیت]] کے دشمنوں سے بیزار ہو جانا
 
جو [[آل محمد]] کی امامت پر ایمان نہیں لایا، جس نے آل محمد کی محبت کو واجب نہیں سمجھا اور جو اہل بیت کے دشمنوں سے بیزار نہ ہوا وہ یا تو اہل بیت کو مانتا نہیں یا پھر وہ ماننا جانتا نہیں۔<ref>مجموعہ تقاریر [[اسماعیل دیوبندی|مبلغ اعظم مولانا محمد اسماعیل]] (مؤلف: مولانا الحاج ناصر حسین نجفی)</ref>
903

ترامیم